تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور : 11 دسمبر/ مقبوضہ فلسطین میں مظاہرین نے مسئلہ فلسطین کے بارے ميں سعودی عرب کے بادشاہ اور ولیعہد کی غداری اور خیانت کی بھر پور مذمت کرتے ہوئے سعودی عرب کے بادشاہ شاہ سلمان اور ولیعہد محمد بن سلمان کی تصویروں کو آگ لگا کر پاؤں تلے رگڑ دیا ہے۔

نیوز نور : 11 دسمبر/ اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے کہا ہے کہ امریکہ کی جانب سے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کا اعلان بعض عرب ممالک  کی ہم آہنگی سے انجام پایا ہے جس کا مقصد عرب - اسرائیل کے تعلقات کو معمول پر لانا اور مسئلہ فلسطین کو سرد خانے میں ڈالنا ہے۔

نیوز نور 11 دسمبر/ فلسطینی وزیرخارجہ نےکہا ہے کہ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی جانب سے بیت المقدس کو اسرائیلی ریاست کا دارالحکومت تسلیم کئے جانے کے بعد اسرائیل دوسرے ممالک  پر القدس کو صہیونی ریاست کا دارالحکومت تسلیم کرانے کے لیے دباؤ ڈال رہا ہے۔

نیوز نور : 11 دسمبر/ سعودی عرب کے قریب سمجھے جانے والے پاکستانی اہلسنت عالم دین اور جمعیت علماء اسلام (س) کے سربراہ  نے کہا ہے کہ اسلامی اتحادی افواج کا ڈھونگ رچانے والا شاہ سلمان اب بیت المقدس کو بچائیں۔

نیوز نور : 11 دسمبر/ امریکی یونیورسٹیوں کے ایک سو بیس یہودی اساتذہ نے ایک شکایت نامے پر دستخط کرکے بیت المقدس کے بارے میں امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے فیصلے کی مذمت کی ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
امریکی ماہر:
مشرقی ایشیائی خطے میں تازہ ترین پیشرفت سے جزیرہ نما کوریا میں موجودہ بحران کا حل ممکن ہے

نیوز نور : واشنگٹن میں مقیم ایک سینئر سیاسی تجزیہ نگار نے کہا ہے کہ جزیرہ نما کوریا میں موجودہ بحران کا حل ممکن ہے۔

استکباری دنیا صارفین۳۸۲ : // تفصیل

امریکی ماہر:

مشرقی ایشیائی خطے میں تازہ ترین پیشرفت سے جزیرہ نما کوریا میں موجودہ بحران کا حل ممکن ہے

نیوز نور : واشنگٹن میں مقیم ایک سینئر سیاسی تجزیہ نگار نے کہا ہے کہ جزیرہ نما کوریا میں موجودہ بحران کا حل ممکن ہے۔

عالمی اردو خبر رساں ادارے ’’نیوز نور‘‘ کی رپورٹ کے مطابق  واشنگٹن میں مقیم سینئر سیاسی تجزیہ کار ’’مائیکل بلنگٹن‘‘ نے ایرانی ذرائع ابلاغ کے ساتھ انٹرویو میں مشرقی ایشیائی خطے میں تازہ ترین پیشرفت پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس پیشرفت سے جزیرہ نما کوریا میں پھیلی کشیدگی کا خاتمہ ممکن ہے۔

انہوں نے کہا کہ جنوبی کوریا میں مون جے ان کے انتخابات و ٹرمپ کے شمالی کوریا کے ساتھ اوباما کی محاذ آرائی کو ختم کرنے کے فیصلے اور بیجنگ  میں چین و روس کے کامیاب بیلٹ روڈ فورم کی تشکیل سے جزیرہ نما کوریا میں بحران کا حل ممکن ہے۔

انہوں نے کہا کہ چین اور جنوبی کوریا کے درمیان تھاڈ میزائل نظام کی تعیناتی پر کشیدگی کے باوجود چینی زیر اہتمام بی آر آئی کیلئے وفد بھیجنے کا فیصلہ انتہائی اہم ہے کیونکہ اسے دونوں ممالک کے درمیان تعلقات دوبارہ مثبت انداز میں آگے بڑھ رہے ہیں۔

انہوں نے اس سوال کہ جنوبی کوریا کے اہم اتحادی برطانیہ نے پیانگ یانگ پر دباؤ میں اضافہ کرنے کیلئے شمالی کوریا پر فوجی یلغار کی دھمکی دی ہے اس بات کو مدنظر رکھتے ہوئے جنوبی کوریا اور واشنگٹن کے درمیان مستقبل میں تعلقات کیسے رہینگے کے جواب میں کہا کہ ٹرمپ کو برطانیہ کی جعلی خبروں پر کان نہیں دھرنے چاہئے اور نہ ہی انہیں برطانیہ یا وال اسٹریٹ اشرافیہ کا شکار ہونا چاہئے۔

مائیکل بلنگٹن نے مزید کہا کہ شمالی کوریا کے ساتھ کشیدگی کم کرنے کیلئے ٹرمپ کو روس، چین ، جاپان اور جنوبی کوریا کےساتھ مل کر کام کر کے برطانوی اور اوباما کی دائمی جنگ کی پالیسی کو مسترد کرینگے۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر