تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور : 11 دسمبر/ مقبوضہ فلسطین میں مظاہرین نے مسئلہ فلسطین کے بارے ميں سعودی عرب کے بادشاہ اور ولیعہد کی غداری اور خیانت کی بھر پور مذمت کرتے ہوئے سعودی عرب کے بادشاہ شاہ سلمان اور ولیعہد محمد بن سلمان کی تصویروں کو آگ لگا کر پاؤں تلے رگڑ دیا ہے۔

نیوز نور : 11 دسمبر/ اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے کہا ہے کہ امریکہ کی جانب سے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کا اعلان بعض عرب ممالک  کی ہم آہنگی سے انجام پایا ہے جس کا مقصد عرب - اسرائیل کے تعلقات کو معمول پر لانا اور مسئلہ فلسطین کو سرد خانے میں ڈالنا ہے۔

نیوز نور 11 دسمبر/ فلسطینی وزیرخارجہ نےکہا ہے کہ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی جانب سے بیت المقدس کو اسرائیلی ریاست کا دارالحکومت تسلیم کئے جانے کے بعد اسرائیل دوسرے ممالک  پر القدس کو صہیونی ریاست کا دارالحکومت تسلیم کرانے کے لیے دباؤ ڈال رہا ہے۔

نیوز نور : 11 دسمبر/ سعودی عرب کے قریب سمجھے جانے والے پاکستانی اہلسنت عالم دین اور جمعیت علماء اسلام (س) کے سربراہ  نے کہا ہے کہ اسلامی اتحادی افواج کا ڈھونگ رچانے والا شاہ سلمان اب بیت المقدس کو بچائیں۔

نیوز نور : 11 دسمبر/ امریکی یونیورسٹیوں کے ایک سو بیس یہودی اساتذہ نے ایک شکایت نامے پر دستخط کرکے بیت المقدس کے بارے میں امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے فیصلے کی مذمت کی ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
اقوام متحدہ کے رکن :
الحدیدہ بندرگاہ پر حملہ تمام یمن کو قحط کی دہلیز پر کھڑا کرسکتا ہے

نیوز نور : اقوام متحدہ کے ایک رکن نے کہا ہے کہ یمن کے الحدیدہ بندرگاہ پر حملہ اس ملک کو قحط کی دہلیز پر کھڑا کرسکتا ہے۔

استکباری دنیا صارفین۳۲۴ : // تفصیل

اقوام متحدہ کے رکن :

الحدیدہ بندرگاہ پر حملہ تمام یمن کو قحط کی دہلیز پر کھڑا کرسکتا ہے

نیوز نور : اقوام متحدہ کے ایک رکن نے کہا ہے کہ یمن کے الحدیدہ بندرگاہ پر حملہ اس ملک کو قحط کی دہلیز پر کھڑا کرسکتا ہے۔

عالمی اردو خبر رساں ادارے ’’نیوز نور‘‘ کی رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ کے رکن ’’ڈینس براؤن‘‘ نے کہا کہ یمن کی الحدیدہ بندرگاہ پر حملے کی صورت میں امدادی اداروں کو خوراک اور طبی امداد پہنچانے کا کوئی دوسرا راستہ نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ آل سعود اتحاد کلزم بندرگاہ جو کہ یمن کی تقریباً اسی فیصد غذائی درآمدات کیلئے اندراج کا نقطہ ہے پر حملے کا منصوبہ کررہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کے ورلڈ فورم پروگرام کو ہنگامی حالات میں ملک کی تمام امدادی ضروریات کا احاطہ کرنے کیلئے کوئی متبادل راستہ نہیں ملا ہے۔

موصوف رکن نے کہا کہ میں یہ بات واضح کرنا چاہتا ہوں کہ الحدیدہ بندرگاہ کا کوئی متبادل نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ عدن سمیت یمن کی دوسری بندرگاہیں امدادی ساز و سامان پہنچانے کے مقاصد کے قابل نہیں ہیں کیونکہ ان بندرگاہوں پر زیادہ بڑے بحری جہازوں کو خالی کرنے کیلئے کوئی جگہ نہیں ہے اور ہوائی جہاز سے ترسیل پر سمندر کی ترسیل سے دس گنا زیادہ لاگت آتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ الحدیدہ بندرگاہ کی بندش تین لاکھ سے زائد افراد کو خوراک تک رسائی سے روک سکتی ہے اور ان میں سے کچھ افراد کو کھانے کیلئے کچھ بھی میسر نہیں رہے گا اور ہماری مدد کے بغیر یہ لوگ قحط کی بھینٹ چڑھ سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یمن کی 28 ملین آبادی میں سے تقریباً 19 ملین کو امداد کی اشد ضرورت ہے کیونکہ قحط اور صحت کے نظام کی تباہی سے ملک میں ہیضے کی وبا پھوٹ پڑی ہے جسے تین ہفتوں میں تقریباً دو سو سے زائد افراد جانبحق ہوئے ہیں۔

ڈینس براؤن نے مزید اقوام عالم کو طنز کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ کب تک دنیا یمن جیسے مفلوک الحال ملک کی تباہی کا تماشا دیکھے گی۔


نظرات داده شده
Noor Syed
یمن کے عوام کی مدد کے لئے اب روس کے پاس اخری موقع ہے۔ کہ وہ اگے ائے اور اقوام متحدہ کے ذریعے اس جنگ کو روکے اور ستم رسیدہ عوام کی مدد کرے۔ ورنہ انسانیت اقوام متحدہ کےہوتے ہوئے اور اقوام متحدہ کے ذریعے ہی تباہی کا شکار ہوجائے گی۔ کیونکہ دشمن ہی نے اقوام متحدہ کو اب تک یمنی قوم کے خلاف استعمال کیا ہے!
آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر