تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور23فروری/ایک صیہونی روز نامے نےا پنی ایک رپورٹ میں نجباء مقاومتی تنظیم کے سیکریٹری جنرل شیخ اکرم الکعبی کےدورہ لبنان اورحزب‌الله رہنماوں سے ملاقات پرتبصرہ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ اسرائیل کے خلاف جنگ میں وہ حزب اللہ کے ہمراہ ہوگی۔

نیوزنور23فروری/بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی کے ڈائریکٹر نےجوہری معاہدے کے حوالےسےایک بار پھر ایران کی شفاف کارکردگی کی تصدیق کی ہے۔

نیوزنور23فروری/ایمنسٹی انٹرنیشنل نے خبردار کیا ہے کہ سعودی عرب کے ولیعہد اپنے ملک کے شہریوں پر دباؤ بڑھانے اور مخالفین کو کچلنے کے لئے اصلاحات کا پرچم بلند کئے ہوئے ہیں۔

نیوزنور22فروری/اسلامی تحریک مقاومت حماس کے ترجمان نےکہا ہے کہ سلامتی کونسل کے اجلاس میں نیکی ہیلی کے خطاب سے فلسطینی قوم کے تئیں ان کی دشمنی جھلک رہی تھی۔

نیوزنور22فروری/ایک صیہونی عہدے دار نے کہا ہے کہ امریکہ میں ڈونالڈ ٹرمپ کے صدر بننے کے بعد فلسطین میں اسرائیلی ریاست کے مظالم اور توسیع پسندانہ اقدامات کے ساتھ ساتھ بیرون ملک سے یہودیوں کی آمد میں بھی اضافہ ہوگیا ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
برطانوی محقق :
جوہری معاہدے سے امریکہ کے نکلنے کے باوجود یہ معاہدہ ایک قابل عمل معاہدے کے طور پر برقرار رہے گا

نیوز نور : اسٹاک ہوم انٹرنیشنل پیس ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کے ڈائریکٹر نے کہا ہے کہ ایران اور عالمی طاقتوں کے درمیان 2015ء میں طے پانے والے جوہری معاہدے سے امریکہ کے نکلنے کے باوجود یہ معاہدہ ایک قابل عمل معاہدے کے طور پر باقی رہے گا۔

استکباری دنیا صارفین۵۱۶ : // تفصیل

برطانوی محقق :   

جوہری معاہدے سے امریکہ کے نکلنے کے باوجود یہ معاہدہ ایک قابل عمل معاہدے کے طور پر برقرار رہے گا

نیوز نور : اسٹاک ہوم انٹرنیشنل پیس ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کے ڈائریکٹر نے کہا ہے کہ ایران اور عالمی طاقتوں کے درمیان 2015ء میں طے پانے والے جوہری معاہدے سے امریکہ کے نکلنے کے باوجود یہ معاہدہ ایک قابل عمل معاہدے کے طور پر باقی رہے گا۔

عالمی اردو خبرر ساں ادارے ’’نیوز نور‘‘ کی رپورٹ کے مطابق ایرانی ذرائع ابلاغ کے ساتھ انٹرویو میں ’’ڈین سمتھ‘‘ نے کہا کہ میرا یہ عقیدہ ہے کہ جوہری معاہدے سے امریکہ کے نکلنے کے باوجود دیگر فریقین اس تاریخی معاہدے کی سختی سے پابندی کرینگے اسلئے واضح طور پر یہ کہا جاسکتا ہے کہ امریکی مخالفت کے باوجود یہ معاہدہ ایک قابل عمل معاہدے کے طور پر برقرار رہنے والا ہے۔

اس سوال کے جواب میں کہ کیا ٹرمپ آئندہ دنوں میں ایران جوہری معاہدے کی توثیق یا اسے نکلنے کا اعلان کرینگے گے انہوں نے کہا کہ مقامی میڈیا رپورٹوں کے مطابق امریکی انتظامیہ میں اعلیٰ سطح پر اس معاملے پر بحث جاری ہے تاہم اس کا کیا نتیجہ نکلتا ہے اس کی پیشنگوئی کرنا انتہائی مشکل ہے۔

اس سوال کے جواب میں کہ ایران جوہری معاہدے سے امریکہ کی دستبرداری کے باوجود جے سی پی او برقرار رہے گا اور کیا دیگر فریقین معاہدے کے تحت اپنی ذمہ داریوں کو نبھائیں گے انہوں نے کہا کہ یقینی طور پر امریکہ کے سوا جامع مشترکہ ایکشن پلان کے دیگر دستخطی ممالک اس تاریخی معاہدے کو برقرار رکھنے کی حمایت میں کھڑے ہیں اسلئے امریکہ کے نکل جانے سے اس معاہدے کو مکمل طور پر منسوخ ہونے کا کوئی خطرہ نہیں ہے۔

اس سوال کے جواب میں کہ جوہری معاہدے سے امریکی انخلاء سے عالمی خاص کر مشرق وسطیٰ کی صورتحال پر کس طرح کے اثرات مرتب ہونگے انہوں نے کہا کہ جامع مشترکہ ایکشن پلان تشدد زدہ علاقے کے مختلف سنگین مسائل کو حل کرنے کا اہم عنصر شمار ہوتا ہے اسلئے عالمی برادری اس معاہدے کے خلاف ٹرمپ کے کسی بھی اقدام کے خلاف کھڑی ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ عالمی برادری کا ٹرمپ سے یہ سوال ہوگا کہ کیوں وہ ایک ایسے معاہدے کو منسوخ کررہے ہیں کہ جس کی ایران آئی اے ای اے کے رپورٹوں کے مطابق مکمل پاسداری کررہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ علاقائی کشیدگی کے علاوہ ایک اور مسئلہ شمالی کوریا ہے میں اُن لوگوں سے اتفاق رکھتا ہوں جو ٹرمپ کو متنبہ کررہے ہیں کہ جامع مشترکہ ایکشن پلان کی منسوخی سے مستقبل قریب میں شمالی کوریا کے جوہری و میزائل پروگرام کو سفارتکاری کے ذریعے حل کرنا ناممکن ہوگا۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر