تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور:یمن کی وزارت صحت نے اعلان کیا ہے کہ  سعودی جارحیت کے سبب ہیضے میں مبتلا افراد کی تعداد آٹھ لاکھ سے زیادہ ہو گئی ہے جس میں اب تک دو ہزار افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔

نیوزنور:اسلامی جمہوریہ ایران کی تشخیص مصلحت نظام کونسل کے سیکریٹری نے کہا ہے کہ ایران میزائلی صلاحیتوں کے بارے میں کوئی مذاکرات نہیں کرے گا۔

نیوزنور:بحرین میں انسانی حقوق اور جمہوریت کے لئے صلح نامی ایک ادارے کے سربراہ نے کہا ہے کہ گذشتہ سات برسوں میں آل خلیفہ حکومت نے پندرہ ہزار بحرینی شہریوں کو گرفتار کر کے جیل میں قید کیا ہے۔

نیوزنور:فرانس کے صدر نے کہا ہے کہ ایٹمی سمجھوتے کو بچانے کے لئے یورپ اپنی تمام تر کوششیں بروئےکار لائے گا۔

نیوزنور: مسجد اقصیٰ کے خطیب نے فلسطینی قوم کے خلاف صہیونی ریاست کے مظالم کی شدید مذمت کرتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ القدس شہر کو صہیونی دشمن کی جانب سے منظم جارحیت کاسامنا ہےاس لئے یکجہتی، اتحاد اور اتفاق فلسطینی قوم کے پاس اپنے سلب شدہ حقوق کے حصول کے لیے ایک موثر ہتھیار ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
امریکی تجزیہ نگار :
واشنگٹن کی شطرنجی بساط کا مہرہ ٹرمپ اپنے آپ کو اس بساط کا شاہ تصور کرتا ہے

نیوز نور : امریکہ کے ایک سیاسی تجزیہ نگا رنے کہا ہے کہ واشنگٹن نے جو شطرنجی کھیل شروع کیا ہے  جوے بازی میں اُس کی چمک روز بروز کم ہوتی جارہی ہے۔ 

استکباری دنیا صارفین۲۹۳ : // تفصیل

امریکی تجزیہ نگار :      

واشنگٹن کی شطرنجی بساط کا مہرہ ٹرمپ اپنے آپ کو اس بساط کا شاہ تصور کرتا ہے

نیوز نور : امریکہ کے ایک سیاسی تجزیہ نگا رنے کہا ہے کہ واشنگٹن نے جو شطرنجی کھیل شروع کیا ہے  جوے بازی میں اُس کی چمک روز بروز کم ہوتی جارہی ہے۔  

عالمی اردو خبرر ساں ادارے ’’نیوز نور‘‘ کی رپورٹ کے مطابق امریکی تجزیہ نگار ’’مائلز ہوئنگ‘‘ نے پریس ٹی وی کے ساتھ انٹرویو میں کہا کہ واشنگٹن جو شطرنجی کھیل کھیل رہا ہے اُس میں امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ اپنے آپ کو اس شطرنجی بساط کا مالک ہونے کی غلطی کررہے ہیں۔

انہوں نے واشنگٹن پوسٹ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ان دنوں ٹرمپ اپنے ساتھیوں خاص کر وائٹ ہاؤس کے چیف جان کیلی پر غصے کی چمک دکھا رہے ہیں لیکن اُسے یہ بھی پتہ نہیں ہے کہ وہ واشنگٹن ڈی سی سے الگ تھلگ پڑ رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ٹرمپ کے متعدد آفیسران اُن کی بڑھتی ہوئی غیر منحصر پوزیشن کے خفا ہوکر یہ محسوس کررہے ہیں کہ وہ اپنے اتحادیوں کو تباہ کردینگے۔

انہوں نے کہاکہ وائٹ ہاؤس میں وال اسٹریٹ جنرل اور دوسری ایجنسیوں کی مدد سے بغیر ووٹنگ کے کچھ اداکاروں نے جگہ بنا لی جبکہ دوسرے افراد بھی اُن سے کم قابل نہ تھے اور وہ کیسے اپنی ذہنیت کو تبدیل کرسکتے ہیں۔

انہوں  نے کہا کہ شاہی مزاج اور ٹھاٹ بھاٹ کے باوجود ٹرمپ اپنے اتحاد سے بالکل الگ تھلگ ہیں کیونکہ واشنگٹن ڈی سی شطرنج کی وہ بساط ہے جس کے ساتھ بڑے بڑے عیار امریکی سیاستدان وابستہ ہیں جن میں سے ہر ایک کا اپنا ایک الگ ایجنڈا ہے اور جب وہ ٹرمپ کے خلاف بازی کھیلیں گے تو ٹرمپ اس بازی کو کبھی جیت نہیں سکتے۔

موصوف تجزیہ نگار نے کہا کہ ٹرمپ انتظامیہ کے سیانے سیاستدان انتخابی مہم کے دوران کئے گئے وعدوں سے ٹرمپ کو منحرف کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔

مائلز ہوئنگ نے مزید کہا کہ اپنی انتظامیہ میں اعلیٰ درجے کے اراکین کو نکال کر ٹرمپ کم ظرف سیاستمداروں کے دھوکے میں آکر اُن کو اعلیٰ عہدوں پر فائز کر کے اپنی نااہلی کا ثبوت فراہم کررہے ہیں جبکہ وائٹ ہاؤس میں کام کرنا اتنا آسان نہیں ہے جتنا وہ سمجھ رہے ہیں۔

آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر