تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور23فروری/ایک صیہونی روز نامے نےا پنی ایک رپورٹ میں نجباء مقاومتی تنظیم کے سیکریٹری جنرل شیخ اکرم الکعبی کےدورہ لبنان اورحزب‌الله رہنماوں سے ملاقات پرتبصرہ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ اسرائیل کے خلاف جنگ میں وہ حزب اللہ کے ہمراہ ہوگی۔

نیوزنور23فروری/بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی کے ڈائریکٹر نےجوہری معاہدے کے حوالےسےایک بار پھر ایران کی شفاف کارکردگی کی تصدیق کی ہے۔

نیوزنور23فروری/ایمنسٹی انٹرنیشنل نے خبردار کیا ہے کہ سعودی عرب کے ولیعہد اپنے ملک کے شہریوں پر دباؤ بڑھانے اور مخالفین کو کچلنے کے لئے اصلاحات کا پرچم بلند کئے ہوئے ہیں۔

نیوزنور22فروری/اسلامی تحریک مقاومت حماس کے ترجمان نےکہا ہے کہ سلامتی کونسل کے اجلاس میں نیکی ہیلی کے خطاب سے فلسطینی قوم کے تئیں ان کی دشمنی جھلک رہی تھی۔

نیوزنور22فروری/ایک صیہونی عہدے دار نے کہا ہے کہ امریکہ میں ڈونالڈ ٹرمپ کے صدر بننے کے بعد فلسطین میں اسرائیلی ریاست کے مظالم اور توسیع پسندانہ اقدامات کے ساتھ ساتھ بیرون ملک سے یہودیوں کی آمد میں بھی اضافہ ہوگیا ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
امریکی تجزیہ نگار :
واشنگٹن کی شطرنجی بساط کا مہرہ ٹرمپ اپنے آپ کو اس بساط کا شاہ تصور کرتا ہے

نیوز نور : امریکہ کے ایک سیاسی تجزیہ نگا رنے کہا ہے کہ واشنگٹن نے جو شطرنجی کھیل شروع کیا ہے  جوے بازی میں اُس کی چمک روز بروز کم ہوتی جارہی ہے۔ 

استکباری دنیا صارفین۳۲۸ : // تفصیل

امریکی تجزیہ نگار :      

واشنگٹن کی شطرنجی بساط کا مہرہ ٹرمپ اپنے آپ کو اس بساط کا شاہ تصور کرتا ہے

نیوز نور : امریکہ کے ایک سیاسی تجزیہ نگا رنے کہا ہے کہ واشنگٹن نے جو شطرنجی کھیل شروع کیا ہے  جوے بازی میں اُس کی چمک روز بروز کم ہوتی جارہی ہے۔  

عالمی اردو خبرر ساں ادارے ’’نیوز نور‘‘ کی رپورٹ کے مطابق امریکی تجزیہ نگار ’’مائلز ہوئنگ‘‘ نے پریس ٹی وی کے ساتھ انٹرویو میں کہا کہ واشنگٹن جو شطرنجی کھیل کھیل رہا ہے اُس میں امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ اپنے آپ کو اس شطرنجی بساط کا مالک ہونے کی غلطی کررہے ہیں۔

انہوں نے واشنگٹن پوسٹ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ان دنوں ٹرمپ اپنے ساتھیوں خاص کر وائٹ ہاؤس کے چیف جان کیلی پر غصے کی چمک دکھا رہے ہیں لیکن اُسے یہ بھی پتہ نہیں ہے کہ وہ واشنگٹن ڈی سی سے الگ تھلگ پڑ رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ٹرمپ کے متعدد آفیسران اُن کی بڑھتی ہوئی غیر منحصر پوزیشن کے خفا ہوکر یہ محسوس کررہے ہیں کہ وہ اپنے اتحادیوں کو تباہ کردینگے۔

انہوں نے کہاکہ وائٹ ہاؤس میں وال اسٹریٹ جنرل اور دوسری ایجنسیوں کی مدد سے بغیر ووٹنگ کے کچھ اداکاروں نے جگہ بنا لی جبکہ دوسرے افراد بھی اُن سے کم قابل نہ تھے اور وہ کیسے اپنی ذہنیت کو تبدیل کرسکتے ہیں۔

انہوں  نے کہا کہ شاہی مزاج اور ٹھاٹ بھاٹ کے باوجود ٹرمپ اپنے اتحاد سے بالکل الگ تھلگ ہیں کیونکہ واشنگٹن ڈی سی شطرنج کی وہ بساط ہے جس کے ساتھ بڑے بڑے عیار امریکی سیاستدان وابستہ ہیں جن میں سے ہر ایک کا اپنا ایک الگ ایجنڈا ہے اور جب وہ ٹرمپ کے خلاف بازی کھیلیں گے تو ٹرمپ اس بازی کو کبھی جیت نہیں سکتے۔

موصوف تجزیہ نگار نے کہا کہ ٹرمپ انتظامیہ کے سیانے سیاستدان انتخابی مہم کے دوران کئے گئے وعدوں سے ٹرمپ کو منحرف کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔

مائلز ہوئنگ نے مزید کہا کہ اپنی انتظامیہ میں اعلیٰ درجے کے اراکین کو نکال کر ٹرمپ کم ظرف سیاستمداروں کے دھوکے میں آکر اُن کو اعلیٰ عہدوں پر فائز کر کے اپنی نااہلی کا ثبوت فراہم کررہے ہیں جبکہ وائٹ ہاؤس میں کام کرنا اتنا آسان نہیں ہے جتنا وہ سمجھ رہے ہیں۔

آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر