تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور21اپریل/لبنانی پارلیمنٹ کے اسپیکر اور مشہور تجزیہ کار نے اس بات پر زور دیا ہے کہ عربی ممالک کی اپنے پڑوسیوں کے ساتھ بات چیت بالخصوص اسلامی جمہوریہ ایران اور سعودی عرب کے درمیان مذاکرات وقت کی اہم ضرورت ہیں۔

نیوزنور21اپریل/شیخ الازهر مصر نے تاریخ اسلام کا جائزہ لیتے ہوئے کہا ہےکہ قدس اسلامی ـ عربی سرزمین ہے اور ہمیشہ اسلامی سرزمین  کے طور پرباقی رہے گی۔

نیوزنور21اپریل/سرزمین عراق کےایک معروف عالم دین نے کہا ہےکہ عرب لیگ میں فلسطین کے دفاع اور وہاں کے موجودہ حالات کو بدلنے کی توانائی موجود نہیں ہے ۔

نیوزنور21اپریل/حزب الله لبنان کی ایگزیٹو کونسل کے نائب صدر نے عرب ممالک کی فوج کو شام میں داخل ہونے کے حوالہ سے کئے جانے والے ہرقسم کے فیصلہ کے سلسلے میں منتبہ کرتے ہوئے اسے ایک قسم کا تجاوز قرار دیا ہے ۔

نیوزنور21اپریل/بحرین کی سکیورٹی فورسز نے اپنے تازہ ترین اقدام میں بحرین کے روحانی رہنماء کے گھر کے اطراف میں خاردار تاروں کی باڑ لگا دی ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
امریکی پروفیسر:
کانگریس ایران جوہری معاہدے کو تبدیل نہیں کرسکتی

نیوزنور13جنوری/سنئیر امریکی تجزیہ کار اور سیکورٹی امور کے ماہر نے کہا  ہے کہ جوہری معاہدے کے خلاف ٹرمپ کے سخت رویے کا کوئی نتیجہ نہیں نکلا بلکہ امریکی صدر کی جانب سے اس معاہدے کی ایک بار پھر توثیق ہونے سے ٹرمپ کی باتوں اور عمل کرنے میں زمین آسمان کا فرق ظاہر ہوتا ہے۔

استکباری دنیا صارفین۱۹۱ : // تفصیل

امریکی پروفیسر:

 کانگریس ایران جوہری معاہدے کو تبدیل نہیں کرسکتی

نیوزنور13جنوری/سنئیر امریکی تجزیہ کار اور سیکورٹی امور کے ماہر نے کہا  ہے کہ جوہری معاہدے کے خلاف ٹرمپ کے سخت رویے کا کوئی نتیجہ نہیں نکلا بلکہ امریکی صدر کی جانب سے اس معاہدے کی ایک بار پھر توثیق ہونے سے ٹرمپ کی باتوں اور عمل کرنے میں زمین آسمان کا فرق ظاہر ہوتا ہے۔

عالمی اردو خبررساں ادارے’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق میسا چوسٹس یونیورسٹی کی سیکورٹی اسٹڈیز انسٹی ٹیوٹ کے سنئیر ریسرچ فیلو ’’جیمز والش‘‘نے ایرانی ذرائع ابلاغ کے ساتھ انٹریومیں کہا کہ کہ جوہری معاہدے کے خلاف ٹرمپ کے سخت رویے کا کوئی نتیجہ نہیں نکلا بلکہ امریکی صدر کی جانب سے اس معاہدے کی ایک بار پھر توثیق ہونے سے ٹرمپ کی باتوں اور عمل کرنے میں زمین آسمان کا فرق ظاہر ہوتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایران جوہری معاہدے پر نئے سرے سے مذاکرات کی کوئی گنجائش نہیں اور نہ ہی امریکی کانگریس کو اسے تبدیل کرنے کا حق حاصل ہے۔

انہوں نے کہا کہ ڈونالڈ ٹرمپ نے ایران سے متعلق جوہری پابندیوں کی معطلی کی پھر توثیق سے یہ بات ظاہر ہوتی ہے کہ اس کے بیانات اور عمل میں تضاد ہے۔

امریکی پروفیسر نے اس بات پر زور دیا کہ ایران جوہری معاہدہ ایک عالمی حمایت یافتہ سمجھوتہ ہے اور اسے تبدیل کرنا امریکی کانگریس یا حکومت کے دائرہ اختیارات میں نہیں ہے۔

انہوں نے یہ انکشاف کیا  کہ ڈونالڈ ٹرمپ کی سیکورٹی ٹیم بشمول وزرائے دفاع، خارجہ اور قومی سلامتی مشیر نے اس سے مطالبہ کیا تھا کہ ایسا کوئی قدم نہ اُٹھائے جس سے جوہری معاہدے کا خاتمہ ہو کیونکہ دوسری صورت میں ایران کے پاس کچھ آپشنز موجود ہیں جس سے وہ ان خلاف ورزیوں کا بھرپور جواب دے سکتا ہے۔

جیمز والش نے مزید کہا کہ امریکی کانگریس جوہری معاہدے کو تبدیل نہیں کرسکتی معاہدے کے خلاف ٹرمپ کے دعوے اور دھمکی آمیز رویے صرف باتوں کی حد تک رہ گئےاورایران کے خلاف حالیہ پابندیوں کا مقصد صرف امریکہ کی اندرونی صورتحال پر قابو پاناہے۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر