تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور22جنوری/ ایک صہیونی تجزیہ نگار نےاسرائیلی انٹیلی جنس ادارہ موساد کو تین ہزار بے گناہ فلسطینیوں کا قاتل قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ  ان افراد کو موساد کا نشانہ نہیں بننا چاہیے تھا کیونکہ ان میں سے اکثر بے گناہ تھے۔


نیوزنور22جنوری/ گذشتہ روز اسرائیلی فوج کی بھاری نفری نے قبلہ اول میں گھس کر وہاں پر موجود فلسطینی محکمہ اوقاف کے مقرر کردہ ایک محافظ کو حراست میں لے لیاجس کےنتیجے میں قبلہ اول میں سخت کشیدگی اور فلسطینیوں میں غم وغصہ پایا جا رہا ہے۔

نیوز نور22جنوری/بحرین کے ممتاز شیعہ عالم دین آیت اللہ شیخ عیسیٰ قاسم  کے نمائندے نے آل خلیفہ رژیم  کے وفد کے اسرائیل کے سرکاری دورے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس دورے کا مقصد فلسطینیوں کی قاتل  حکومت کےساتھ تعلقات کو معمول پرلانا ہے ۔

نیوزنور22جنوری/اسرائیلی ذرائع ابلاغ نے اپنی ایک رپورٹ میں کہا ہے کہ فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے علاقوں میں آباد کیے گئے یہودیوں کی تعداد 2017ء کے آخر میں 4 لاکھ 36 ہزار ہوگئی ہے۔

نیوزنور22جنوری/شام کے صدر نے کہا  ہےکہ ترکی اپنے مخالفین کو کچلنے اور شامی حکومت کے مخالفین کی مدد اور حمایت کرنے میں مصروف ہے۔
  فهرست  
   
     
 
    
روسی سیاسی مبصر :
واشنگٹن حکومت بشارالاسد اوراسکی حامی فورسز کو چوٹ پہنچانے کا کوئی موقعہ ہاتھ سے گنوانا نہیں چاہتی

نیوز نور:روس کے ایک سیاسی مبصر اورمشرق وسطیٰ امور کے ماہر نے جنوبی شام کے  علاقہ الطنف میں بشارالاسد کی حامی فورسز پر  امریکی جنگی اتحاد کے حالیہ فضائی حملوں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہاہےکہ امریکہ مذکورہ علاقے کو اپنے مکمل کنٹرول میں لاکر اس پر قبضہ جمانے کی کوشش کررہاہے۔

استکباری دنیا صارفین۴۳۵ : // تفصیل

روسی سیاسی مبصر :

واشنگٹن حکومت بشارالاسد اوراسکی حامی فورسز کو چوٹ پہنچانے کا کوئی موقعہ ہاتھ سے گنوانا نہیں چاہتی

نیوز نور:روس کے ایک سیاسی مبصر اورمشرق وسطیٰ امور کے ماہر نے جنوبی شام کے  علاقہ الطنف میں بشارالاسد کی حامی فورسز پر  امریکی جنگی اتحاد کے حالیہ فضائی حملوں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہاہےکہ امریکہ مذکورہ علاقے کو اپنے مکمل کنٹرول میں لاکر اس پر قبضہ جمانے کی کوشش کررہاہے۔

عالمی اردوخبررساں ادارے’’نیوز نور‘‘کی رپورٹ کے مطابق مقامی میڈیا کےساتھ انٹرویو میں ’’اناڈولی المرید‘‘نے جنوبی شام کے علاقہ الطنف میں بشارالاسد کی حامی فورسز پر  امریکی جنگی اتحاد کے حالیہ فضائی حملوں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہاکہ امریکہ مذکورہ علاقے کو اپنے مکمل کنٹرول میں لاکر اس پر قبضہ جمانے کی کوشش کررہاہے ۔

انہوں  نے کہاکہ امریکہ گذشتہ دوسالوں سے مذکورہ علاقے میں اسد مخالف دہشتگردوں کی تربیت کرتا آرہاہے   یہ دہشتگرد جنوب میں شام کے وسیع سرحدی علاقوں کو کنٹرول کرتے ہیں اوراب شامی تنازعے میں ملوث تمام پارٹیاں زیادہ سے زیاد علاقوں کو اپنے کنٹرول میں لینے کی کوشش کررہی ہیں۔

موصوف تجزیہ نگار نے کہاکہ شامی فوج پر  حملے جیسی امریکہ کی کاروائیاں اشتعال انگیز ہیں اوراسے مسئلہ شام کا حل  مزیدپیچیدہ بن جائےگا ۔

انہوں نے کہاکہ جنوبی علاقوں کی صورتحال  انتہائی کشیدہ ہے علاقے میں امریکہ اورروس آمنے سامنے آچکے ہیں اوردونوں ممالک کے فوجیوں کے درمیان  جنگ کسی بھی وقت چھیڑ سکتی ہے۔

انہوں نے کہاکہ دونوں عالمی طاقتوں کے درمیان کشیدگی انتہائی تشویشناک ہےاوراسطرح کی کشیدگی غیر منضبط ہوسکتی ہے۔

قابل ذکر ہےکہ 8 جون کو امریکی زیر قیادت اتحاد نے اسٹریٹجک الطنف علاقے میں بشارالاسد کی حامی فوج پر تیسری مرتبہ حملے کئے ان حملوں کی مذمت کرتے ہوئے شام کی اتحادی فوج نے دھمکی دی کہ  وہ شامی امریکی پوزیشنوں کو بھی نشانہ بناسکتی ہے  اس اتحاد نے متنبہ کیا کہ واشنگٹن حکومت نے حد پار کی تو امریکی  حملوں پر اس اتحاد کے ضبط کا بندھن  ٹوٹ جائےگا۔

واضح رہےکہ شام کو سن 2011 سے امریکہ، سعودی عرب ، ترکی اور قطر کے حمایت یافتہ دہشتگرد گروہوں کی سرگرمیوں کا سامنا ہے جس کے نتیجے میں چار لاکھ ستر ہزار سے زائد شامی شہری مارے جاچکے ہیں اور دہشتگردی کے نتیجے میں کئی لاکھ افراد اپنے ملک میں بے گھر اور لاکھوں دیگر ممالک میں پناہ لینے پر مجبور ہوگئے ہیں۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر