تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور22جنوری/ ایک صہیونی تجزیہ نگار نےاسرائیلی انٹیلی جنس ادارہ موساد کو تین ہزار بے گناہ فلسطینیوں کا قاتل قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ  ان افراد کو موساد کا نشانہ نہیں بننا چاہیے تھا کیونکہ ان میں سے اکثر بے گناہ تھے۔


نیوزنور22جنوری/ گذشتہ روز اسرائیلی فوج کی بھاری نفری نے قبلہ اول میں گھس کر وہاں پر موجود فلسطینی محکمہ اوقاف کے مقرر کردہ ایک محافظ کو حراست میں لے لیاجس کےنتیجے میں قبلہ اول میں سخت کشیدگی اور فلسطینیوں میں غم وغصہ پایا جا رہا ہے۔

نیوز نور22جنوری/بحرین کے ممتاز شیعہ عالم دین آیت اللہ شیخ عیسیٰ قاسم  کے نمائندے نے آل خلیفہ رژیم  کے وفد کے اسرائیل کے سرکاری دورے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس دورے کا مقصد فلسطینیوں کی قاتل  حکومت کےساتھ تعلقات کو معمول پرلانا ہے ۔

نیوزنور22جنوری/اسرائیلی ذرائع ابلاغ نے اپنی ایک رپورٹ میں کہا ہے کہ فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے علاقوں میں آباد کیے گئے یہودیوں کی تعداد 2017ء کے آخر میں 4 لاکھ 36 ہزار ہوگئی ہے۔

نیوزنور22جنوری/شام کے صدر نے کہا  ہےکہ ترکی اپنے مخالفین کو کچلنے اور شامی حکومت کے مخالفین کی مدد اور حمایت کرنے میں مصروف ہے۔
  فهرست  
   
     
 
    
علاقائی امور کے ایرانی ماہر:
مسلمانوں سے عرب حکومتوں کی غداری اورصیہونی حکومت کےساتھ ان کا گٹھ جوڑ فلسطین کی آزادی میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے

نیوز نور:علاقائی امو رکے ایک ایرانی ماہر نے کہاہےکہ مسلمانوں سے عرب حکومتوں کی غداری اورصیہونی حکومت کےساتھ ان کا گٹھ جوڑ فلسطین کی آزادی میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے۔

استکباری دنیا صارفین۲۶۷ : // تفصیل

علاقائی امور کے ایرانی ماہر:

مسلمانوں سے عرب حکومتوں کی غداری اورصیہونی حکومت کےساتھ ان کا گٹھ جوڑ فلسطین کی آزادی میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے

نیوز نور:علاقائی امو رکے ایک ایرانی ماہر نے کہاہےکہ مسلمانوں سے عرب حکومتوں کی غداری اورصیہونی حکومت کےساتھ ان کا گٹھ جوڑ فلسطین کی آزادی میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے۔

عالمی اردوخبررساں ادارے’’نیوز نور‘‘کی رپورٹ کے مطابق مقامی میڈیا کےساتھ انٹرویو میں ’’مہدی عزیز ‘‘نےمتحدہ عرب امارات کے ایران مخالف اقدامات اورایران میں اماراتی سفیر کے صوتی  ایمیلز کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاکہ بحرین اورمتحدہ عرب امارات جیسی رجعتی حکومتیں آل سعود اورآل یہود کو جوڑنے میں ایک پل کاکردار اداکررہی ہے۔

انہوں نے متحدہ عرب امارات اورغاصب صیہونی رژیم کے درمیان تعلقات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاکہ اسرائیلی کمپنیاں متحدہ عرب امارات میں بھاری سرمایہ لگا چکی ہیں اوروہ متحدہ عرب امارات کو سیکورٹی سازوسامان  فراہم کرتی ہیں۔

انہوں نے کہاکہ متحدہ عرب امارات جیسی رجعتی حکومت کی خطے میں کوئی مقبولیت نہیں ہے اس لئےاس کا انحصار  بیرونی ممالک پر ہے۔

انہوں نے کہا کہ خلیج فارس کی رجعتی حکومتیں کو  اپنی بقاء کیلئے امریکہ اوراسرائیل پر انحصار کرنا پڑھ رہاہے۔

ایرانی تجزیہ نگار نے کہاکہ  علاقائی رجعتی حکومتوں کا اسرائیل اورامریکہ پر انحصار فلسطین کی آزادی میں سب سے بڑی رکاوٹ کے طورپر ابھری ہیں۔

قطر اورسعودی عرب کے درمیان  تنازعے سے متعلق پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں ایرانی ماہر نے کہاکہ عرب ریاستوں کا قطر کےساتھ تعلقات منقطع کرنے سے اس بات کی نشاندہی ہوتی ہےکہ یہ ممالک سعودی عرب پر منحصر ہیں ۔

عزیز نے کہاکہ قطر اورخلیجی ریاستوں کے درمیان جاری کشیدگی کو سنجیدگی سے لینے کی ضرورت نہیں ہے کیونکہ یہ ریاستیں ممکنہ طورپر دوبارہ ایک دوسرے کےساتھ کھڑی ہونگی جو ماضی میں بھی دیکھنے میں آیا ہے۔

انہوں نے کہاکہ متحدہ عرب امارات سعودی عرب اوراسرائیل کو جوڑنے کیلئے ایک پل کی مانند کام کررہاہے اوریہ تینوں ممالک قطر کو ایران سے دور کرنے کیلئے دوحہ پر دباؤ ڈال رہے ہیں۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر