تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور :معروف پاکستانی اہلسنت عالم دین اورچیئرمین تحریک لبیک یارسول اللہ (ص)نےلاہور میں سالانہ فکر امام حسینؑ کانفرنس سے خطاب کے دوران حضرت امام حسینؑ کی قربانی کو قیامت تک اہل اسلام کیلئے مشعل راہ قرار دہتے ہوئے کہا ہے کہ آپؑ کے سیرت و کردار سے اُمت مسلمہ کے قلوب قیامت تک منور ہوتے رہیں گے۔

نیوز نور : امریکہ میں قائم عالمی اسلامی مرکز کے سربراہ نے کہا ہے کہ جوہری معاہدے پر ٹرمپ کے حالیہ بیانات پر تنقید کرتے ہوئے اس سمجھوتے کو عالمی امن کی مزید مضبوطی کا باعث قرار دیتے ہوئے کہا کہ میں ایک امریکی شہری کی حیثیت سے اپنے صدر سے بالکل مایوس ہوچکا ہوں

نیوز نور : اسلامی جمہوریہ ایران کے ایک ممتاز شیعہ عالم دین اور حوزہ علمیہ کےاستاد نے نمازکو بحرانوں کی مینجمنٹ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ عاشورا کا ایک اہم پیغام اورعاشورائی طرززندگی کی ایک اہم صفت نمازکو اول وقت پڑھنا ہے۔

نیوز نور : لبنان کے صدر نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کی جانب سے لبنان کے اندرونی معاملات میں کوئی مداخلت نہیں اور اس مسئلے کا دعوی کرنے والے اپنے دعوے کے حوالے سے ثبوت بھی پیش نہیں کرسکتے۔

نیوز نور : پاکستان کے نامور اہلسنت عالم دین اور سنی تحریک کے سربراہ نے کہا ہے کہ امام عالمی مقام حضرت امام حسین علیہ السلام نے ظالم و جابر کے سامنے ڈٹ جانے اور مظلوموں کیلئے آواز بلند کرنے کا درس دیا۔

  فهرست  
   
     
 
    
لاطینی امریکی امور کےروسی ماہر:
واشنگٹن لاطینی امریکی حکومتوں کو کمزور کرنے میں مصروف ہے

نیوز نور:لاطینی امریکی امور کے ایک روسی ماہر نے کہاہےکہ پنامہ اوردیگر لاطینی امریکی ریاستیں بیجنگ کےساتھ تعلقات مستحکم کرنے کے خواہاں ہیں کیونکہ چین خطے میں بنیادی ڈھانچے پر بھاری سرمایہ کاری کررہاہے جبکہ دوسری اور امریکہ علاقائی حکومتوں کو کمزو رکرنے میں مصروف ہیں۔

استکباری دنیا صارفین۳۱۴ : // تفصیل

لاطینی امریکی امور کےروسی  ماہر:

واشنگٹن لاطینی امریکی حکومتوں کو کمزور کرنے میں مصروف ہے

نیوز نور:لاطینی امریکی امور کے ایک روسی ماہر نے کہاہےکہ پنامہ اوردیگر لاطینی امریکی ریاستیں بیجنگ کےساتھ تعلقات مستحکم کرنے کے خواہاں ہیں کیونکہ چین خطے میں بنیادی ڈھانچے پر بھاری سرمایہ کاری کررہاہے جبکہ دوسری اور امریکہ علاقائی حکومتوں کو کمزو رکرنے میں مصروف ہیں۔

عالمی اردوخبررساں ادارے’’نیوز نور‘‘کی رپورٹ کے مطابق مقاومی میڈیا کےساتھ انٹرویو میں ’’الگزنڈر خارلامینکو‘‘نےکہاکہ پنامہ اوردیگر لاطینی امریکی ریاستیں بیجنگ کےساتھ تعلقات مستحکم کرنے کے خواہاں ہیں کیونکہ چین خطے میں بنیادی ڈھانچے پر بھاری سرمایہ کاری کررہاہے جبکہ دوسری اور امریکہ علاقائی حکومتوں کو کمزو رکرنے میں مصروف ہیں۔

پنامہ حکومت نے کل اپنے ایک جاری کردہ بیان میں کہاکہ اس نے تائیوان کےساتھ  اپنے تمام سفارتی تعلقات توڑنے کا فیصلہ کیا ہے بیان میں کہاگیا کہ پنامہ نے تائیوان کےساتھ تعلقات توڑ دئے ہیں اورچین کےساتھ باقاعدہ سفارتی تعلقات قائم کردئے ہیں۔

پنامہ کے اس فیصلے پر شدید ردعمل ظاہر کرتے ہوئے تائیوان حکومت نے کہاکہ  پنامہ کے چین کےساتھ رسمی تعلقات قائم کیا جانا افسوسناک ہے اورپنامہ کا چین کےساتھ باقاعدہ تعلقات قائم کرنے کا یہ کھیل کبھی پورا نہیں ہوگا۔

روسی تجزیہ نگار نے اس پیشرفت کے حوالے سے کہاکہ  پنامہ کا اسطرح کا فیصلہ ایک تاریخی فیصلہ ہے  کیونکہ تائیوان امریکہ کا ایک دیرنہ اتحادی تصور کیاجاتا ہے اوراس طرح کے اقدام سے پنامہ حکومت چین کےساتھ تعلقات قائم کرکے ملک میں واشنگٹن کے اثرورسوخ میں توازن پیدا کرنے کی کوشش کررہی ہے۔

انہوں نے کہاکہ پنامہ اورامریکہ کے درمیان تعلقات ماضی کے مقابلے  میں موجودہ دور میں کشیدہ بنے ہوئے ہیں امریکہ کا  پنامہ میں بدامنی پھیلانے کا اہم کردار رہاہے ۔

انہوں نے کہاکہ لاطینی امریکہ کے اسٹریٹجک خطے میں اپنا اثرورسوخ بڑھانے میں چین اورامریکہ ایک دوسرے کے مدمقابل ہیں  کیونکہ پنامہ کنال کی سیکورٹی کا امریکہ کے ہاتھوں میں رہنا چین کیلئے ایک مسئلہ رہاہے۔

انہوں نے کہاکہ ان ہی وجوہات کی بنا پر  چین نے پنامہ کےساتھ اسے پہلے سفارتی تعلقات قائم نہیں کئے۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر