تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور 23 اپریل/ بحرین کے ایک ممتاز شیعہ عالم دین نے اس بات کےساتھ کہ آل خلیفہ  رژیم کےسامنے فلسطینی کاز کی کوئی اہمیت نہیں ہے کہا ہے کہ بحرینی عوام  اپنے تمام جائز مطالبات پورے ہونے تک اپنی تحریک جاری رکھیں گے۔

نیوزنور23اپریل/روسی وزارت خارجہ کی ترجمان نے کہا ہے کہ مغربی ممالک شام کے شہر دوما میں کیمیائی حملے سے متعلق حقائق میں تحریف کر رہے ہیں۔

نیوزنور23اپریل/ٹوئٹر پرسعودی عرب کے  سرگرم  اور شاہی خاندان کے قریبی کارکن نےسعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں شاہی محل میں کل رات ہونے والی فائرنگ کی اصل حقیقت سامنے لاتے ہوئے کہا ہے کہ فائرنگ کے واقعہ میں آل سعود کے بعض اعلٰی شہزادے ملوث ہیں ڈرون کو گرانے کا واقعہ سعودی حکومت کا ڈرامہ ہے فائرنگ کے واقعہ کے بعد سعودی بادشاہ اور ولیعہد شاہی محل سے فرار ہوگئے تھے۔

نیوزنور23اپریل/اسلامی مقاومتی محورحزب اللہ لبنان کے سربراہ نے کہا ہےکہ اسرائيل کو لبنانیوں کے خلاف جارحیت سے روکنا ہمارا سب سے بڑا ہدف ہے ۔

نیوزنور23اپریل/مجلس وحدت مسلمین پاکستان سندھ کے سیکرٹری جنرل نے کہا  ہے کہ امام حسینؑ نے ۱۴ سو سال قبل ان دہشتگردوں کو شکست دی جو دین اسلام کا لبادہ اوڑھ کر دین کو اپنی پسند نا پسند میں ڈھال رہے تھے۔

  فهرست  
   
     
 
    
لاطینی امریکی امور کےروسی ماہر:
واشنگٹن لاطینی امریکی حکومتوں کو کمزور کرنے میں مصروف ہے

نیوز نور:لاطینی امریکی امور کے ایک روسی ماہر نے کہاہےکہ پنامہ اوردیگر لاطینی امریکی ریاستیں بیجنگ کےساتھ تعلقات مستحکم کرنے کے خواہاں ہیں کیونکہ چین خطے میں بنیادی ڈھانچے پر بھاری سرمایہ کاری کررہاہے جبکہ دوسری اور امریکہ علاقائی حکومتوں کو کمزو رکرنے میں مصروف ہیں۔

استکباری دنیا صارفین۳۸۷ : // تفصیل

لاطینی امریکی امور کےروسی  ماہر:

واشنگٹن لاطینی امریکی حکومتوں کو کمزور کرنے میں مصروف ہے

نیوز نور:لاطینی امریکی امور کے ایک روسی ماہر نے کہاہےکہ پنامہ اوردیگر لاطینی امریکی ریاستیں بیجنگ کےساتھ تعلقات مستحکم کرنے کے خواہاں ہیں کیونکہ چین خطے میں بنیادی ڈھانچے پر بھاری سرمایہ کاری کررہاہے جبکہ دوسری اور امریکہ علاقائی حکومتوں کو کمزو رکرنے میں مصروف ہیں۔

عالمی اردوخبررساں ادارے’’نیوز نور‘‘کی رپورٹ کے مطابق مقاومی میڈیا کےساتھ انٹرویو میں ’’الگزنڈر خارلامینکو‘‘نےکہاکہ پنامہ اوردیگر لاطینی امریکی ریاستیں بیجنگ کےساتھ تعلقات مستحکم کرنے کے خواہاں ہیں کیونکہ چین خطے میں بنیادی ڈھانچے پر بھاری سرمایہ کاری کررہاہے جبکہ دوسری اور امریکہ علاقائی حکومتوں کو کمزو رکرنے میں مصروف ہیں۔

پنامہ حکومت نے کل اپنے ایک جاری کردہ بیان میں کہاکہ اس نے تائیوان کےساتھ  اپنے تمام سفارتی تعلقات توڑنے کا فیصلہ کیا ہے بیان میں کہاگیا کہ پنامہ نے تائیوان کےساتھ تعلقات توڑ دئے ہیں اورچین کےساتھ باقاعدہ سفارتی تعلقات قائم کردئے ہیں۔

پنامہ کے اس فیصلے پر شدید ردعمل ظاہر کرتے ہوئے تائیوان حکومت نے کہاکہ  پنامہ کے چین کےساتھ رسمی تعلقات قائم کیا جانا افسوسناک ہے اورپنامہ کا چین کےساتھ باقاعدہ تعلقات قائم کرنے کا یہ کھیل کبھی پورا نہیں ہوگا۔

روسی تجزیہ نگار نے اس پیشرفت کے حوالے سے کہاکہ  پنامہ کا اسطرح کا فیصلہ ایک تاریخی فیصلہ ہے  کیونکہ تائیوان امریکہ کا ایک دیرنہ اتحادی تصور کیاجاتا ہے اوراس طرح کے اقدام سے پنامہ حکومت چین کےساتھ تعلقات قائم کرکے ملک میں واشنگٹن کے اثرورسوخ میں توازن پیدا کرنے کی کوشش کررہی ہے۔

انہوں نے کہاکہ پنامہ اورامریکہ کے درمیان تعلقات ماضی کے مقابلے  میں موجودہ دور میں کشیدہ بنے ہوئے ہیں امریکہ کا  پنامہ میں بدامنی پھیلانے کا اہم کردار رہاہے ۔

انہوں نے کہاکہ لاطینی امریکہ کے اسٹریٹجک خطے میں اپنا اثرورسوخ بڑھانے میں چین اورامریکہ ایک دوسرے کے مدمقابل ہیں  کیونکہ پنامہ کنال کی سیکورٹی کا امریکہ کے ہاتھوں میں رہنا چین کیلئے ایک مسئلہ رہاہے۔

انہوں نے کہاکہ ان ہی وجوہات کی بنا پر  چین نے پنامہ کےساتھ اسے پہلے سفارتی تعلقات قائم نہیں کئے۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر