تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور:ایرانی صدر کے معاون نے کہا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی عالمی سطح پر غیر مہذبانہ رفتار امریکہ کے لئے شرم آور ہے جو دنیا میں سپر پاور ہونے کا مدعی ہے سعودی عرب ام الفساد اور دہشت گردی کے فروغ کا اصلی مرکز ہے جسے امریکی سرپرستی حاصل ہے۔

نیوزنور:روس کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ امریکی سربراہی والا اتحاد دہشت گرد گروہ جبھۃ النصرہ کو بچانے کی کوشش کر رہا ہے۔

نیوزنور:بحرین کی تنظیم برائے انسانی حقوق کے صدر نے کہا ہے کہ آل خلیفہ کے ظلم وستم اور اوچھے ہتھکنڈوں کے باوجود بحرین میں انسانی حقوق کا کام بند نہیں کریں گے۔

نیوزنور:ایک امریکی روزنامے نے لکھا ہے کہ وائٹ ہاوس ایران پر حملہ کرنے کا بہانہ تلاش رہا ہے حالانکہ ٹرمپ کو ایرانی تاریخ سے عبرت حاصل کرنا چاہئے۔

نیوزنور:فلپائن کے صدرنے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے امریکا کے دورے کی دعوت مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ کبھی بھی امریکا نہیں جائیں گے۔

  فهرست  
   
     
 
    
لاطینی امریکی امور کےروسی ماہر:
واشنگٹن لاطینی امریکی حکومتوں کو کمزور کرنے میں مصروف ہے

نیوز نور:لاطینی امریکی امور کے ایک روسی ماہر نے کہاہےکہ پنامہ اوردیگر لاطینی امریکی ریاستیں بیجنگ کےساتھ تعلقات مستحکم کرنے کے خواہاں ہیں کیونکہ چین خطے میں بنیادی ڈھانچے پر بھاری سرمایہ کاری کررہاہے جبکہ دوسری اور امریکہ علاقائی حکومتوں کو کمزو رکرنے میں مصروف ہیں۔

استکباری دنیا صارفین۲۹۴ : // تفصیل

لاطینی امریکی امور کےروسی  ماہر:

واشنگٹن لاطینی امریکی حکومتوں کو کمزور کرنے میں مصروف ہے

نیوز نور:لاطینی امریکی امور کے ایک روسی ماہر نے کہاہےکہ پنامہ اوردیگر لاطینی امریکی ریاستیں بیجنگ کےساتھ تعلقات مستحکم کرنے کے خواہاں ہیں کیونکہ چین خطے میں بنیادی ڈھانچے پر بھاری سرمایہ کاری کررہاہے جبکہ دوسری اور امریکہ علاقائی حکومتوں کو کمزو رکرنے میں مصروف ہیں۔

عالمی اردوخبررساں ادارے’’نیوز نور‘‘کی رپورٹ کے مطابق مقاومی میڈیا کےساتھ انٹرویو میں ’’الگزنڈر خارلامینکو‘‘نےکہاکہ پنامہ اوردیگر لاطینی امریکی ریاستیں بیجنگ کےساتھ تعلقات مستحکم کرنے کے خواہاں ہیں کیونکہ چین خطے میں بنیادی ڈھانچے پر بھاری سرمایہ کاری کررہاہے جبکہ دوسری اور امریکہ علاقائی حکومتوں کو کمزو رکرنے میں مصروف ہیں۔

پنامہ حکومت نے کل اپنے ایک جاری کردہ بیان میں کہاکہ اس نے تائیوان کےساتھ  اپنے تمام سفارتی تعلقات توڑنے کا فیصلہ کیا ہے بیان میں کہاگیا کہ پنامہ نے تائیوان کےساتھ تعلقات توڑ دئے ہیں اورچین کےساتھ باقاعدہ سفارتی تعلقات قائم کردئے ہیں۔

پنامہ کے اس فیصلے پر شدید ردعمل ظاہر کرتے ہوئے تائیوان حکومت نے کہاکہ  پنامہ کے چین کےساتھ رسمی تعلقات قائم کیا جانا افسوسناک ہے اورپنامہ کا چین کےساتھ باقاعدہ تعلقات قائم کرنے کا یہ کھیل کبھی پورا نہیں ہوگا۔

روسی تجزیہ نگار نے اس پیشرفت کے حوالے سے کہاکہ  پنامہ کا اسطرح کا فیصلہ ایک تاریخی فیصلہ ہے  کیونکہ تائیوان امریکہ کا ایک دیرنہ اتحادی تصور کیاجاتا ہے اوراس طرح کے اقدام سے پنامہ حکومت چین کےساتھ تعلقات قائم کرکے ملک میں واشنگٹن کے اثرورسوخ میں توازن پیدا کرنے کی کوشش کررہی ہے۔

انہوں نے کہاکہ پنامہ اورامریکہ کے درمیان تعلقات ماضی کے مقابلے  میں موجودہ دور میں کشیدہ بنے ہوئے ہیں امریکہ کا  پنامہ میں بدامنی پھیلانے کا اہم کردار رہاہے ۔

انہوں نے کہاکہ لاطینی امریکہ کے اسٹریٹجک خطے میں اپنا اثرورسوخ بڑھانے میں چین اورامریکہ ایک دوسرے کے مدمقابل ہیں  کیونکہ پنامہ کنال کی سیکورٹی کا امریکہ کے ہاتھوں میں رہنا چین کیلئے ایک مسئلہ رہاہے۔

انہوں نے کہاکہ ان ہی وجوہات کی بنا پر  چین نے پنامہ کےساتھ اسے پہلے سفارتی تعلقات قائم نہیں کئے۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر