تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور :17 نومبر/ میانمار فوج کے سربراہ نے کہاہے کہ بدھ مت کے پیروکاروں کے راضی ہونے تک بنگلادیش ہجرت کر جانے والے روہنگیا مسلمان واپس نہیں آسکتے، روہنگیائی افراد کی اپنے گھروں کی واپسی میانمار کے حقیقی باشندوں کی رضامندی سے ہوگی اور اس مقصدکے لیے سب سے پہلے بدھ پرستوں کو راضی کرنا پڑے گا ۔

نیوز نور :17 نومبر/ عراقی فوج اور سیکورٹی فورس نے مغربی صوبے الانبار کے شہر راوہ کو بھی تکفیری دہشت گرد گروہ داعش کے قبضے سے آزاد کرا لیاہے۔

نیوز نور :17 نومبر/ ترکی کے صدر نے مغربی ممالک پر شامی کردوں کی حمایت پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ جن ممالک نے داعش کو تشکیل دیا تھا وہی آج شام کے کردوں کو مسلح کررہے ہیں۔

نیوز نور :17 نومبر/ تہران کےخطیب جمعہ نے خطے کے حساس شرائط کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاہےکہ  مسلمانوں کو باہمی اتحاد اور یکجہتی کے ساتھ دشمنوں کے منصوبوں کو ناکام بنانا چاہیے۔

نیوز نور :17 نومبر/ جرمن وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ یورپی ممالک سعودی اقدامات اور مہم جوئی پر کسی بھی صورت میں خاموش نہیں رہیں گے۔

  فهرست  
   
     
 
    
لاطینی امریکی امور کےروسی ماہر:
واشنگٹن لاطینی امریکی حکومتوں کو کمزور کرنے میں مصروف ہے

نیوز نور:لاطینی امریکی امور کے ایک روسی ماہر نے کہاہےکہ پنامہ اوردیگر لاطینی امریکی ریاستیں بیجنگ کےساتھ تعلقات مستحکم کرنے کے خواہاں ہیں کیونکہ چین خطے میں بنیادی ڈھانچے پر بھاری سرمایہ کاری کررہاہے جبکہ دوسری اور امریکہ علاقائی حکومتوں کو کمزو رکرنے میں مصروف ہیں۔

استکباری دنیا صارفین۳۳۵ : // تفصیل

لاطینی امریکی امور کےروسی  ماہر:

واشنگٹن لاطینی امریکی حکومتوں کو کمزور کرنے میں مصروف ہے

نیوز نور:لاطینی امریکی امور کے ایک روسی ماہر نے کہاہےکہ پنامہ اوردیگر لاطینی امریکی ریاستیں بیجنگ کےساتھ تعلقات مستحکم کرنے کے خواہاں ہیں کیونکہ چین خطے میں بنیادی ڈھانچے پر بھاری سرمایہ کاری کررہاہے جبکہ دوسری اور امریکہ علاقائی حکومتوں کو کمزو رکرنے میں مصروف ہیں۔

عالمی اردوخبررساں ادارے’’نیوز نور‘‘کی رپورٹ کے مطابق مقاومی میڈیا کےساتھ انٹرویو میں ’’الگزنڈر خارلامینکو‘‘نےکہاکہ پنامہ اوردیگر لاطینی امریکی ریاستیں بیجنگ کےساتھ تعلقات مستحکم کرنے کے خواہاں ہیں کیونکہ چین خطے میں بنیادی ڈھانچے پر بھاری سرمایہ کاری کررہاہے جبکہ دوسری اور امریکہ علاقائی حکومتوں کو کمزو رکرنے میں مصروف ہیں۔

پنامہ حکومت نے کل اپنے ایک جاری کردہ بیان میں کہاکہ اس نے تائیوان کےساتھ  اپنے تمام سفارتی تعلقات توڑنے کا فیصلہ کیا ہے بیان میں کہاگیا کہ پنامہ نے تائیوان کےساتھ تعلقات توڑ دئے ہیں اورچین کےساتھ باقاعدہ سفارتی تعلقات قائم کردئے ہیں۔

پنامہ کے اس فیصلے پر شدید ردعمل ظاہر کرتے ہوئے تائیوان حکومت نے کہاکہ  پنامہ کے چین کےساتھ رسمی تعلقات قائم کیا جانا افسوسناک ہے اورپنامہ کا چین کےساتھ باقاعدہ تعلقات قائم کرنے کا یہ کھیل کبھی پورا نہیں ہوگا۔

روسی تجزیہ نگار نے اس پیشرفت کے حوالے سے کہاکہ  پنامہ کا اسطرح کا فیصلہ ایک تاریخی فیصلہ ہے  کیونکہ تائیوان امریکہ کا ایک دیرنہ اتحادی تصور کیاجاتا ہے اوراس طرح کے اقدام سے پنامہ حکومت چین کےساتھ تعلقات قائم کرکے ملک میں واشنگٹن کے اثرورسوخ میں توازن پیدا کرنے کی کوشش کررہی ہے۔

انہوں نے کہاکہ پنامہ اورامریکہ کے درمیان تعلقات ماضی کے مقابلے  میں موجودہ دور میں کشیدہ بنے ہوئے ہیں امریکہ کا  پنامہ میں بدامنی پھیلانے کا اہم کردار رہاہے ۔

انہوں نے کہاکہ لاطینی امریکہ کے اسٹریٹجک خطے میں اپنا اثرورسوخ بڑھانے میں چین اورامریکہ ایک دوسرے کے مدمقابل ہیں  کیونکہ پنامہ کنال کی سیکورٹی کا امریکہ کے ہاتھوں میں رہنا چین کیلئے ایک مسئلہ رہاہے۔

انہوں نے کہاکہ ان ہی وجوہات کی بنا پر  چین نے پنامہ کےساتھ اسے پہلے سفارتی تعلقات قائم نہیں کئے۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر