تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور :معروف پاکستانی اہلسنت عالم دین اورچیئرمین تحریک لبیک یارسول اللہ (ص)نےلاہور میں سالانہ فکر امام حسینؑ کانفرنس سے خطاب کے دوران حضرت امام حسینؑ کی قربانی کو قیامت تک اہل اسلام کیلئے مشعل راہ قرار دہتے ہوئے کہا ہے کہ آپؑ کے سیرت و کردار سے اُمت مسلمہ کے قلوب قیامت تک منور ہوتے رہیں گے۔

نیوز نور : امریکہ میں قائم عالمی اسلامی مرکز کے سربراہ نے کہا ہے کہ جوہری معاہدے پر ٹرمپ کے حالیہ بیانات پر تنقید کرتے ہوئے اس سمجھوتے کو عالمی امن کی مزید مضبوطی کا باعث قرار دیتے ہوئے کہا کہ میں ایک امریکی شہری کی حیثیت سے اپنے صدر سے بالکل مایوس ہوچکا ہوں

نیوز نور : اسلامی جمہوریہ ایران کے ایک ممتاز شیعہ عالم دین اور حوزہ علمیہ کےاستاد نے نمازکو بحرانوں کی مینجمنٹ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ عاشورا کا ایک اہم پیغام اورعاشورائی طرززندگی کی ایک اہم صفت نمازکو اول وقت پڑھنا ہے۔

نیوز نور : لبنان کے صدر نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کی جانب سے لبنان کے اندرونی معاملات میں کوئی مداخلت نہیں اور اس مسئلے کا دعوی کرنے والے اپنے دعوے کے حوالے سے ثبوت بھی پیش نہیں کرسکتے۔

نیوز نور : پاکستان کے نامور اہلسنت عالم دین اور سنی تحریک کے سربراہ نے کہا ہے کہ امام عالمی مقام حضرت امام حسین علیہ السلام نے ظالم و جابر کے سامنے ڈٹ جانے اور مظلوموں کیلئے آواز بلند کرنے کا درس دیا۔

  فهرست  
   
     
 
    
معروف عراقی تجزیہ کار:
قطر میں کودتا بعید نہیں لیکن اسے عملی جامہ پہنان آل سعود کیلئے دشوار ہے

نیوز نور:عراق کے ایک معروف سیاسی  ومیڈیا تجزیہ کار نے  کہاہےکہ  علاقے کی موجودہ صورتحال اورگذشتہ کئی سالوں سےجاری خطے کی کشیدگی کو دیکھتے ہوئے قطر میں  سعودی عرب کی حمایت کے ذریعے بغاوت اگرچہ ممکن ہے تاہم ریاض کیلئے اس منصوبے کو  عملی جامہ پہنانا انتہائی مشکل ہے۔

استکباری دنیا صارفین۲۹۶ : // تفصیل

معروف عراقی تجزیہ کار:

قطر میں کودتا بعید نہیں لیکن اسے عملی جامہ پہنان آل سعود کیلئے دشوار ہے

نیوز نور:عراق کے ایک معروف سیاسی  ومیڈیا تجزیہ کار نے  کہاہےکہ  علاقے کی موجودہ صورتحال اورگذشتہ کئی سالوں سےجاری خطے کی کشیدگی کو دیکھتے ہوئے قطر میں  سعودی عرب کی حمایت کے ذریعے بغاوت اگرچہ ممکن ہے تاہم ریاض کیلئے اس منصوبے کو  عملی جامہ پہنانا انتہائی مشکل ہے۔

عالمی اردوخبررساں ادارے’’نیوز نور‘‘کی رپورٹ کے مطابق ایرانی ذرائع ابلاغ کےساتھ انٹرویو میں ’’عبدالرزاق الاسدی ‘‘نے سعودی عرب سمیت بعض عرب ممالک کی طرف سے قطر کےساتھ سفارتی تعلقات منقطع کئے جانے کی اقدامات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاکہ سعودی عرب اورقطر کے درمیان تنازعات دونوں ممالک کے درمیان ماضی کی پالیسیوں کا شاخسانہ ہے اوریہ کوئی نیا مسئلہ نہیں ہے۔

انہوں نے کہاکہ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے ریاض کا دورہ ایسے وقت پر کیا ہے  جب سعودی شاہی خاندان کی بھاگ دوڑ ایسے نوجوان حکمرانوں کے ہاتھوں  میں ہےکہ جن کا سیاست اور سفارتکاری میں کوئی تجربہ نہیں ہے اوروہ صرف انتہاپسندانہ پالیسیاں اپنا رہے ہیں۔

انہوں نے کہاکہ آل سعود حکومت  قطری حزب اختلاف اورحکومت کے ناقدین کےساتھ  تعلقات استوار کرنے کی کوشش کرےگی  تاکہ امیر قطر کا ایک بار پھر تختہ الٹایا جاسکے۔

انہوں نے کہاکہ قطری شہزادوں کے درمیان اقتدار کی جنگ کو موجودہ امیر قطر تمیم بن حمد آلثانی کہ جو  اپنے باپ کے خلاف بغاوت کے ذریعے اقتدار میں آئے ہیں کو استعمال کیا جائےگا۔

انہوں نے کہا کہ خطے کی موجودہ صورتحال اورتنازعات کو دیکھتے ہوئے قطر کے خلاف چھٹا کودتا  کےامکانات اگرچہ موجود ہیں تاہم اسے عملی جامہ پہنانا حکومت آل سعود کیلئے انتہائی دشوار ہے۔

انہوں نے  سعودی عرب اورقطر کے درمیان کشیدگی مزید بڑھنے کی پیشنگوئی  کرتے ہوئے کہاکہ  یہ کشیدگی ایک خطرناک فوجی تصادم میں تبدیل ہوسکتی ہے۔

انہوں نے کہاکہ خلیجی ممالک  کے درمیان کشیدگی کے نتائج خطے پر اثرانداز ہونگے اور آل سعود حکومت نے  قطری حکومت کو ضعیف کرنے کیلئے اس ملک میں حزب اختلاف کو مضبوط کرنے میں اپنی پوری طاقت جھونک دی ہے۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر