تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور 23 اپریل/ بحرین کے ایک ممتاز شیعہ عالم دین نے اس بات کےساتھ کہ آل خلیفہ  رژیم کےسامنے فلسطینی کاز کی کوئی اہمیت نہیں ہے کہا ہے کہ بحرینی عوام  اپنے تمام جائز مطالبات پورے ہونے تک اپنی تحریک جاری رکھیں گے۔

نیوزنور23اپریل/روسی وزارت خارجہ کی ترجمان نے کہا ہے کہ مغربی ممالک شام کے شہر دوما میں کیمیائی حملے سے متعلق حقائق میں تحریف کر رہے ہیں۔

نیوزنور23اپریل/ٹوئٹر پرسعودی عرب کے  سرگرم  اور شاہی خاندان کے قریبی کارکن نےسعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں شاہی محل میں کل رات ہونے والی فائرنگ کی اصل حقیقت سامنے لاتے ہوئے کہا ہے کہ فائرنگ کے واقعہ میں آل سعود کے بعض اعلٰی شہزادے ملوث ہیں ڈرون کو گرانے کا واقعہ سعودی حکومت کا ڈرامہ ہے فائرنگ کے واقعہ کے بعد سعودی بادشاہ اور ولیعہد شاہی محل سے فرار ہوگئے تھے۔

نیوزنور23اپریل/اسلامی مقاومتی محورحزب اللہ لبنان کے سربراہ نے کہا ہےکہ اسرائيل کو لبنانیوں کے خلاف جارحیت سے روکنا ہمارا سب سے بڑا ہدف ہے ۔

نیوزنور23اپریل/مجلس وحدت مسلمین پاکستان سندھ کے سیکرٹری جنرل نے کہا  ہے کہ امام حسینؑ نے ۱۴ سو سال قبل ان دہشتگردوں کو شکست دی جو دین اسلام کا لبادہ اوڑھ کر دین کو اپنی پسند نا پسند میں ڈھال رہے تھے۔

  فهرست  
   
     
 
    
اصغریہ آرگنائزیشن پاکستان :
عالمی دہشتگرد امریکہ اور اسرائیل کے خلاف یوم القدس کو سرکاری سطح پرمنایا جائے

نیوز نور : اصغریہ آرگنائزیشن پاکستان کے مرکزی صدر نے یوم القدس کو سرکاری سطح پر نہ منائے جانے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ عالمی دہشتگرد امریکہ اور اسرائیل  کے خلاف یوم القدس کو سرکاری سطح پرمنایا جائے۔

اسلامی بیداری صارفین۳۹۶ : // تفصیل

اصغریہ آرگنائزیشن پاکستان :

عالمی دہشتگرد امریکہ اور اسرائیل  کے خلاف یوم القدس کو سرکاری سطح پرمنایا جائے

نیوز نور : اصغریہ آرگنائزیشن پاکستان کے مرکزی صدر نے یوم القدس کو سرکاری سطح پر نہ منائے جانے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ عالمی دہشتگرد امریکہ اور اسرائیل  کے خلاف یوم القدس کو سرکاری سطح پرمنایا جائے۔

عالمی اردو خبر رساں ادارے ’’نیوز نور‘‘ کی رپورٹ کے مطابق اصغریہ آرگنائزیشن پاکستان کے مرکزی صدر ’’فضل حسین اصغری‘‘ نے  پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ افسوس کی بات ہے کہ یوم القدس کو سرکاری سطح پر نہیں منایا جاتا جبکہ عالمی دہشتگرد امریکہ اور اسرائیل کے خلاف یوم القدس کو سرکاری سطح پر منانے کی اشد ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ امت مسلمہ کی کمزوری نے اسلام دشمن قوتوں کو تقویت دے رکھی ہے جبکہ حزب اللہ نے محدود وسائل کے باوجود اسرائیل کو ہر میدان میں شکست سے دوچار کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سعودی عرب سمیت دیگر عرب ریاستوں کو امت مسلمہ کے بجائے اپنے مفادات مقدم ہیں جس کے لیے وہ ہر طرح کا دباو استعمال کر لیتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ فلسطین کے مسلمانوں پر اپنی زمین تنگ کر دی گئی اوردنیا کے کسی ملک میں ایسانہیں کہ مقامی آبادی کو مہاجر قرار دے دیا جائے اور باہر سے آکر بسنے والے قابض ہو کر مالک بن بیٹھیں۔

فضل حسین اصغری نے مزید کہا کہ دنیا بھر کے مسلمانوں کو القدس کی آزادی کے لیے آواز بلند کرنی ہو گی اورہمیں حزب اللہ کو سپورٹ کرنا چاہیے جو اسرائیلی بربریت کا انتہائی جرأت سے مقابلہ کر رہے ہیں۔

پریس کانفرنس سے اصغریہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کے مرکزی صدر ’حبدار علی حیدری‘ نے کہا کہ بیت المقدس ہاتھ سے نکلنے پر یہ ثابت ہوا ہے کہ امت مسلمہ کی قوت صفر ہو چکی ہے۔

انہوں نے کہا کہ عالم اسلام کو بدنام کر نے کے لیے داعش، النصرہ اور طالبان طرز کی دہشتگرد جماعتوں کی تشکیل کی گئی تا کہ دین اسلام کے روشن چہرے کو بدنما  بناکر پیش کیا جا سکے۔

انہوں نے کہا کہ قبلہ اوّل کی آزادی مسلمانوں کی ناموس اور اسلام کی سربلندی کا مسئلہ ہے جس کیلئے ہمیں اپنی صفوں میں اتحاد پیدا کرنا ہوگا۔

حبدار علی حیدری نے مزید کہا کہ بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناحؒ نے اسرائیل کو ناجائز ریاست قرار دیا تھا کہ فلسطین انبیاء علیہم السلام کی سرزمین ہے اس پر اسرائیل کا ناجائز قبضہ کوئی آزادی پسند قوم تسلیم نہیں کر سکتی اور آج اسرائیلی درندے فلسطینی ماں بہنوں اور بیٹیوں کی بے حرمتی اور نوجوانوں و بچوں پر ظلم کرکے سیاہ تاریخ رقم کر رہے ہیں۔

قابل ذکر ہے کہ اصغریہ اسٹوڈنٹس اور اصغریہ آرگنائزیشن پاکستان کے مرکزی دفتر المہدی سینٹر میں دونوں تنظیموں کے مرکزی صدور  نےمشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ بیت المقدس پر اسرائیل کے غاصبانہ قبضے اور فلسطینی مسلمانوں پر صیہونی مظالم کے خلاف  27 رمضان المبارک کو پاکستان بھر میں اصغریہ پاکستان کی جانب سے آزادی یوم القدس منایا جائے گاجس میں ملک بھر میں احتجاجی مظاہرے کیے جائیں گےجس میں اصغریہ پاکستان  کے مرکزی شخصیات سمیت مختلف مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والی مذہبی ،سیاسی و سماجی شخصیات نے شرکت کرے گی۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر