تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور:1932 ء میں سعودی عرب کے قیام کے بعد سے آل سعود نے بادشاہت کے متضاد سیاسی ،سماجی اورمذہبی ڈھانچے کے چلینجز سے نمٹنے کیلئے وہابیت کا استعمال کیا ہے اوروہابیت کے نظرئے نے مذہبی طورپر آل سعود خاندان کی طاقت تاج اورحکومت کو جائز ٹھہرایا ہے۔

نیوز نور : بولویا کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ امریکہ کو وینزوئلا میں مداخلت کا خیال ترک کرنا چاہئے کیونکہ دنیا بھر میں امریکی سامراجیت دم توڑ چکی ہے۔

نیوز نور:ایران کے ایک سینئر قانون ساز نے کہاہےکہ امریکہ کی طرف سے روس اورایران پر  بیک وقت پابندیوں کو عائد کئے جانے کا مقصد دوعلاقائی اتحادیوں کے درمیان تعلقات میں شگاف پیدا کرنا تھا۔

نیوز نور:لبنان کی اسلامی تحریک مقاومت حزب اللہ کی سیکورٹی کونسل کےچیئرمین نے کہاہے کہ شام میں سرگرم تکفیری دہشتگرد گروہ داعش کے خلاف جنگ آخری مرحلے میں داخل ہوچکی ہے۔

نیوز نور : لبنان کے پارلیمانی نمائندے نے کہا ہے کہ  شام فلسطین اور بیت المقدس کی حمایت کا علمبردار ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
بوسٹن یونیورسٹی کے سینئر پروفیسر:
امریکی مداخلت نے مشرق وسطیٰ کا امن درہم برہم کرکے انتہاپسندی کو فروغ دیا ہے

نیوز نور:بوسٹن یونیورسٹی کے ایک سینئر پروفیسر نے مشرق وسطیٰ کے صورتحال کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاہےکہ امریکی مداخلت نے  اس علاقے  کے امن کو درہم برہم کرکے انتہاپسندی کو فرو غ دیا ہے۔

استکباری دنیا صارفین۱۶۴ : // تفصیل

بوسٹن یونیورسٹی کے سینئر پروفیسر:

امریکی مداخلت نے مشرق وسطیٰ کا امن درہم برہم کرکے انتہاپسندی کو فروغ دیا ہے

نیوز نور:بوسٹن یونیورسٹی کے ایک سینئر پروفیسر نے مشرق وسطیٰ کے صورتحال کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاہےکہ امریکی مداخلت نے  اس علاقے  کے امن کو درہم برہم کرکے انتہاپسندی کو فرو غ دیا ہے۔

عالمی اردوخبررساں ادارے ’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق مقامی میڈیا کےساتھ انٹرویو میں ’’اینرو بیسک ‘‘نے مشرق وسطیٰ کے صورتحال کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاہےکہ امریکی مداخلت نے  اس علاقے  کے امن کو درہم برہم کرکے انتہاپسندی کو فرو غ دیا ہے۔

انہوں نے کہاکہ امریکہ کی خارجہ پالیسی مشرق وسطیٰ علاقے کے تیل وگیس جیسے ذخائر پر قبضہ کرنے دوسری عالمی طاقتوں کو اس علاقے پر اپنے پیر جمانے سے روکنے اور غاصب صیہونی حکومت کو ہر صورت میں محٖفوظ رکھنے پر استوار  ہے ۔

انہوں نے کہاکہ امریکہ خاص کر ۹/۱۱ کے بعد سے اپنے مقاصد کی حصولی کیلئے فوجی طاقت کا استعمال کرتا رہاہے تاہم  امریکہ کو اس کا بڑے پیمانے پر خمیازہ اُٹھانا پڑا ہے۔

انہوں نے کہاکہ صدرڈونالڈ ٹرمپ کو اگرچہ مشرق وسطیٰ میں جاری تنازعات وراثت میں ملے ہیں تاہم وہ ان تنازعات کو حل کرنے یا  انہیں سمجھنے کے اہل دکھائی نہیں دے رہے ۔

ایران اورجوہری معاہدے کے تئیں ٹرمپ کی پالیسیوں کی بارے میں پوچھے گئے سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ ابھی یہ پوری طرح واضح نہیں ہےکہ ٹرمپ انتظامیہ آگے جوہری معاہدے سےمتعلق کس طرح کے اقدامات اُٹھانے جارہےہیں ۔

انہوں نے کہاکہ اگر امریکی صدر جامع مشترکہ ایکش پلان سے دستبردار ہونے کی پہل کرتے ہیں تو یہ ان کی طرف سے ایک اہم اسٹریٹجک غلطی ثابت ہوگی۔

انہوں نے کہاکہ ٹرمپ نے اپنی صدارتی مہم کےدوران  دیگر ممالک کے تنازعات میں امریکہ کو دور رکھنے کا وعدہ کیاتھا تاہم صدارتی منصب سنبھالنے کےبعد دیگر ممالک کے داخلی معاملات میں امریکی مداخلتوں میں اضافہ ہوا ہے۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر