تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور:1932 ء میں سعودی عرب کے قیام کے بعد سے آل سعود نے بادشاہت کے متضاد سیاسی ،سماجی اورمذہبی ڈھانچے کے چلینجز سے نمٹنے کیلئے وہابیت کا استعمال کیا ہے اوروہابیت کے نظرئے نے مذہبی طورپر آل سعود خاندان کی طاقت تاج اورحکومت کو جائز ٹھہرایا ہے۔

نیوز نور : بولویا کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ امریکہ کو وینزوئلا میں مداخلت کا خیال ترک کرنا چاہئے کیونکہ دنیا بھر میں امریکی سامراجیت دم توڑ چکی ہے۔

نیوز نور:ایران کے ایک سینئر قانون ساز نے کہاہےکہ امریکہ کی طرف سے روس اورایران پر  بیک وقت پابندیوں کو عائد کئے جانے کا مقصد دوعلاقائی اتحادیوں کے درمیان تعلقات میں شگاف پیدا کرنا تھا۔

نیوز نور:لبنان کی اسلامی تحریک مقاومت حزب اللہ کی سیکورٹی کونسل کےچیئرمین نے کہاہے کہ شام میں سرگرم تکفیری دہشتگرد گروہ داعش کے خلاف جنگ آخری مرحلے میں داخل ہوچکی ہے۔

نیوز نور : لبنان کے پارلیمانی نمائندے نے کہا ہے کہ  شام فلسطین اور بیت المقدس کی حمایت کا علمبردار ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
ٹونی گوسلنگ:
کردوں کاقتل عام اورشامی علاقوں پر قبضہ انقرہ کا حتمی ہدف ومقصد ہے

نیوز نور:امریکہ کے ایک ممتاز سیاسی تجزیہ نگار اوربین الاقوامی امور کے ماہر نے ترکی کی جانب سےشامی سرحد پر مزید فوجیں تعینات کئے جانے کے اقدام کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاہےکہ حکومت انقرہ کردوں کا قتل عام اورشام کی سرزمین  پر قبضہ جمانے کے بہانے تلاش رہی ہے۔

استکباری دنیا صارفین۶۰۹ : // تفصیل

ٹونی گوسلنگ:

کردوں کاقتل عام اورشامی علاقوں پر قبضہ انقرہ کا حتمی ہدف ومقصد ہے

نیوز نور:امریکہ کے ایک ممتاز سیاسی تجزیہ نگار اوربین الاقوامی امور کے ماہر نے ترکی کی جانب سےشامی سرحد پر مزید فوجیں تعینات کئے جانے کے اقدام کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاہےکہ حکومت انقرہ کردوں کا قتل عام اورشام کی سرزمین  پر قبضہ جمانے کے بہانے تلاش رہی ہے۔

عالمی اردوخبررساں ادارے ’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق ایرانی ذرائع ابلاغ کےساتھ انٹرویو میں ’’ٹونی گوسلنگ‘‘نے ترکی کی جانب سےشامی سرحد پر مزید فوجیں تعینات کئے جانے کے اقدام کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاہےکہ حکومت انقرہ کردوں کا قتل عام اورشام کی سرزمین  پر قبضہ جمانے کے بہانے تلاش رہی ہے۔

انہوں نے وضاحت کی کہ ترکی دہشتگرد گروہوں کہ جو شام میں افراتفری مچارہے ہیں کے خلاف  جنگ میں مخلص نہیں ہےکیونکہ شمالی شام میں کرد فورسز پر انقرہ کے حملے  تکفیری دہشتگرد گروہ داعش کی حملے کرنے کے مترادف ہیں۔

انہوں نے ترک فورسز کو یہ مشورہ دیا کہ وہ اس خیال میں نہ رہے کہ وہ شامی بحران کو بہانہ بناکر  کردوں کا قتل عام اورشمالی شام پر قبضہ جماسکتی ہے۔

انہوں نے  شام پرترکی کے قبضے سے متعلق واشنگٹن اورانقرہ کے درمیان پائے جانی والی اختلاف رائے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاکہ اگرچہ امریکہ  شام میں اپنی رژیم چینج پالیسی پر ابھی بھی قائم ہے تاہم شامی علاقوں پر ترک حکومت کا قبضہ امریکی ایجنڈے میں شامل نہیں ہے۔

انہوں نے کہاکہ شام کی ارضی سالمیت اورخودمختاری کو تحفظ فراہم کرنے میں بین الاقوامی برادری کا کردار شرمناک ہے۔

دریں اثنا ایک اورتجزیہ کار نبیل میکائل نے کہاکہ ترکی  قوم پرست ایجنڈے کی وجہ سے شام کے اندر کرد جنگجوں  کا تعاقب کررہی ہے۔

انہوں نے کہاکہ کردجنگجوں کے حملوں سے اپنی عوام کا دفاع انقرہ کا حق ہے تاہم اسےسرحد عبور کرکے شام کی خودمختاری کی خلاف ورزی نہیں کرنی چاہئے۔

انہوں نے کہاکہ روس اورامریکہ کو چاہئے کہ وہ ترکی کو شامی سرحد تجاوز کرنے سے باز رکھیں ۔

انہوں نے مزیدکہاکہ ماسکو اورواشنگٹن شام میں ترکی کے فوجی آپریشن سے خوش نہیں ہے کیونکہ دونوں حکومتوں کی نظر میں کرد جنگجو داعش کے خلاف ایک اہم فورس ہے۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر