تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور21فروری/شامی ذرایع ابلاغ نے اپنی ایک رپورٹ میں کہاہے کہ شامی فوج کے خلاف مغربی حمایت یافتہ دہشتگرد عناصر نے نئی سازش کا آغاز کیا ہے جس کے تحت کلورین گیس سے بھرے تین ٹرکوں کو ترکی سے شامی علاقے ادلیب میں پہنچا دیا گیا ہے۔

نیوزنور21 فروری/اسرائیلی پارلیمنٹ کینیسٹ کے ایک رکن نے  کہا ہے کہ  اسرائیلی دائیں بازو کےساتھ سعودیہ کا اتحاد شرمناک ہے اورصیہونی وزیر اعظم  کو حزب اللہ اورمقاومت سے خوف ہے۔

نیوزنور21فروری/فلسطینی اتھارٹی کے سربراہ نے کہا ہے کہ آج فلسطین میں قبضے اور اس کے عوام پر جو حالات گزر رہے ہیں اس کا ذمے دار برطانیہ ہے۔

نیوزنور21فروری/اقوام متحدہ میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے مندوب نے جوہری معاہدے کو کامیاب مذاکرات کرنے کے لئے مثالی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ دوسروں پر پابندیاں لگانے کے نشے میں دھت ہے۔

نیوزنور21فروری/اقوام متحدہ کے کوآرڈینیٹر برائے امور مشرق وسطٰی نےناجائز صہیونی ریاست کے غاصب حکمرانوں پر زور دیا ہے کہ وہ فلسطین میں معصوم عوام کے گھروں اور اسکولوں کو تباہ کرنے کا سلسلہ بند کریں۔

  فهرست  
   
     
 
    
امریکی کالم نگار:
امریکہ یمن کی تباہی میں برابر کا شریک ہے

نیوز نور:ایک امریکی کالم نگار نے لکھاہےکہ مشرق وسطیٰ جیسے اسٹریٹجک خطے میں تنازعات ایجاد کرنا  امریکہ کی تاریخ رہی ہے اوریمن کہ جس کو تباہ کرنے میں امریکہ اورسعودی عرب نے کوئی کثر نہیں چھوڑی ہے میں رونما ہونے والا انسانی المیہ نہ صرف خطے بلکہ پوری دنیا کےامن واستحکام کیلئے خطرہ ہے۔

استکباری دنیا صارفین۱۴۶ : // تفصیل

امریکی کالم نگار:

امریکہ یمن کی تباہی میں برابر کا شریک ہے

نیوز نور:ایک امریکی کالم نگار نے لکھاہےکہ مشرق وسطیٰ جیسے اسٹریٹجک خطے میں تنازعات ایجاد کرنا  امریکہ کی تاریخ رہی ہے اوریمن کہ جس کو تباہ کرنے میں امریکہ اورسعودی عرب نے کوئی کثر نہیں چھوڑی ہے میں رونما ہونے والا انسانی المیہ نہ صرف خطے بلکہ پوری دنیا کےامن واستحکام کیلئے خطرہ ہے۔

عالمی اردوخبررساں ادارے ’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق ’’جان شپ‘‘نےاپنے ایک مختصر مضمون میں لکھاکہ مشرق وسطیٰ جیسے اسٹریٹجک خطے میں تنازعات ایجاد کرنا  امریکہ کی تاریخ رہی ہے اوریمن کہ جس کو تباہ کرنے میں امریکہ اورسعودی عرب نے کوئی کثر نہیں چھوڑی ہے میں رونما ہونے والا انسانی المیہ نہ صرف خطے بلکہ پوری دنیاکے امن واستحکام کیلئے خطرہ ہے۔

انہوں نےلکھاکہ سعودی عرب کی  یمن مخالف جنگ میں اب تک دس ہزار سے زائد افراد ہلاک جبکہ دسیوں لاکھ بےگھر ہوئے ہیں۔

انہوں نے لکھاکہ امریکی حکومت یمن کی صورتحال کو مزید بد سے بدتر بنانے کیلئے تمام وسائل بروئے کار لانے کی کوشش کررہی ہے۔

انہوں نے لکھاکہ آج یمن کو جس قحط کا سامنا ہے وہ  خشک سالی یا فصل کی  ناکامی کا نتیجہ نہیں  بلکہ سعودی عرب کی مسلط کردہ جنگ کا نتیجہ ہے۔

انہوں نے لکھاکہ  امریکہ اوراسکے اتحادیوں نے دوسال کے عرصے سے یمن کے خلاف جو منظم محاصرہ کررکھا ہے  اس وجہ سے لاکھوں یمنیوں کی جانوں کو خطرہ لاحق ہوچکا ہے۔

انہوں نے لکھاکہ سعودی عرب دانستہ طورپر شہری آبادی والے علاقوں ،اسپتالوں اوربازاروں کو نشانہ بنارہی ہے جو اس فقیر ملک میں ہیضے کی وبا پھوٹنے کا موجب بنی ہے۔

انہوں نے کہاکہ یمن جنگ بعض امریکی شخصیات اوراسلحہ ساز کمپنیوں کیلئے ایک منافع بخش جنگ ثابت ہورہی ہے۔

جان شپ نے کہاکہ اگر یمنی بحران کو حل کرنے کے اقدامات نہ کئے گئے اور سعودی عرب اس ملک کی بنیادی تنصیبات کو اسی طرح تباہ کرتا رہا تو دہائیوں تک اس کی تعمیر نو ناممکن ہوگی۔

واضح رہےکہ یمن پر سعودی عرب کے وحشیانہ جرائم کی عالمی سطح پر مذمت کی جا رہی ہے لیکن حکومت  آل سعود  عالمی برادری کے احتجاج کی پرواہ کئے بغیر اپنے حملے جاری رکھے ہوئے ہے۔ سعودی عرب اور اس کے اتحادیوں نے یمن کے عوام کی انقلابی تحریک کو کچلنے اور معزول صدر منصور ہادی کو دوبارہ اقتدار میں لانے کے بہانے یمن پر جارحانہ حملے شروع کئے تھے۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر