تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور:1932 ء میں سعودی عرب کے قیام کے بعد سے آل سعود نے بادشاہت کے متضاد سیاسی ،سماجی اورمذہبی ڈھانچے کے چلینجز سے نمٹنے کیلئے وہابیت کا استعمال کیا ہے اوروہابیت کے نظرئے نے مذہبی طورپر آل سعود خاندان کی طاقت تاج اورحکومت کو جائز ٹھہرایا ہے۔

نیوز نور : بولویا کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ امریکہ کو وینزوئلا میں مداخلت کا خیال ترک کرنا چاہئے کیونکہ دنیا بھر میں امریکی سامراجیت دم توڑ چکی ہے۔

نیوز نور:ایران کے ایک سینئر قانون ساز نے کہاہےکہ امریکہ کی طرف سے روس اورایران پر  بیک وقت پابندیوں کو عائد کئے جانے کا مقصد دوعلاقائی اتحادیوں کے درمیان تعلقات میں شگاف پیدا کرنا تھا۔

نیوز نور:لبنان کی اسلامی تحریک مقاومت حزب اللہ کی سیکورٹی کونسل کےچیئرمین نے کہاہے کہ شام میں سرگرم تکفیری دہشتگرد گروہ داعش کے خلاف جنگ آخری مرحلے میں داخل ہوچکی ہے۔

نیوز نور : لبنان کے پارلیمانی نمائندے نے کہا ہے کہ  شام فلسطین اور بیت المقدس کی حمایت کا علمبردار ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
برطانوی مصنف:
ناکام ریاستوں کی تشکیل سے مغرب سیکورٹی فرموں کیلئے نئے مارکیٹ تیار کررہا ہے

نیوز نور : برطانیہ کے ایک مصنف نے کہا ہے کہ ناکام ریاستوں کی تشکیل سے مغرب سیکورٹی فرموں کیلئے نئے مارکیٹ تیار کررہا ہے۔

استکباری دنیا صارفین۱۶۲ : // تفصیل

برطانوی مصنف:

ناکام ریاستوں کی تشکیل سے مغرب سیکورٹی فرموں کیلئے نئے مارکیٹ تیار کررہا ہے

نیوز نور : برطانیہ کے ایک مصنف نے کہا ہے کہ ناکام ریاستوں کی تشکیل سے مغرب سیکورٹی فرموں کیلئے نئے مارکیٹ تیار کررہا ہے۔

عالمی اردو خبر رساں ادارے ’’نیوز نور‘‘ کی رپورٹ کے مطابق برطانوی مصنف ’’ڈین گلاز بروک‘‘ نے روسیا الیوم کے ساتھ انٹرویو میں کہا کہ نجی سیکورٹی ایک بہت بڑی ترقیاتی صنعت ہے جو ناکام ریاستوں کی تخلیق کرنے کی مغربی حکمت عملی کے ساتھ چلتی ہے۔

انہوں نے امریکی عدالت کے اس فیصلے کہ اگرچہ مقدمے کی سماعت ہوگی لیکن الزام عائد نہیں کیا جاسکتا ہے کو مغرب کی طرف سے وسیع پیمانے اقدامات کا حصہ قرا ر دیتے ہوئے کہا کہ اس فیصلے یہ بات عیاں ہوئی ہے کہ امریکی اور برطانوی فوجیوں کو دنیا کے باقی ممالک میں ظلم ڈھانے کی چھوٹ ہے۔

انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی جرائم کی عدالت نے ایک فیصلے کے تحت طے کیا ہے کہ یورپ یا شمالی امریکہ کے کسی بھی فرد کو اُن کے جرائم پر سزا نہیں دی جاسکتی ہے جس کا مشاہدہ برطانوی فوج کے اہلکاروں کے خلاف مقدمے کی سماعت کے خاتمے سے کیا جاسکتا ہے اور یہی حال امریکہ کا بھی ہے اور ان اقدامات کا مقصد تمام دنیا کو یہ باور کرانا ہے کہ امریکی و برطانوی فوجی جنگی جرائم کے ارتکاب پر بھی سزا سے مستثنیٰ ہیں۔

انہوں نے کہا کہ 2011ء میں عراق کے اُس وقت کے وزیر اعظم نوری المالکی نے امریکی فوجیوں کو سزا سے مستثنیٰ رکھنے کے معاہدے پر دستخط کرنے سے انکار کیا جو کہ امریکہ اور عراق کے درمیان تنازعے کا سب سے بڑا سبب تھا اور افغانستان میں بھی نجی شکنجوں کے قاتلوں کو چلانے میں نجی ٹھیکیداروں کا اسکنڈل سامنے آیا ہے۔

موصوف مصنف نے کہا کہ زیادہ تر پیداوار دنیا بھر میں اپنے ٹھکانوں کو جاری رکھنے کیلئے مغرب ایک کے بعد دوسری ناکام ریاست تشکیل دے رہا ہے جو کہ اُن کی نجی سیکورٹی کیلئے ایک نیا مارکیٹ بن رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ عام رعایا کو تحفظ دینے کی آڑ میں مغرب دنیا بھر میں ریاستوں کو تباہ کررہا ہے اور یہ اُن کے مطابق واقعی ایک ترقی کی صنعت ہے جو برطانیہ ، امریکہ اور اسرائیل کی قیادت میں رواں دواں ہے۔

گلاز بروک نے مزید کہا کہ نجی سیکورٹی کمپنیوں کی سرگرمیوں  پر عوامی احتساب اور جانچ کی کمی ہے۔   


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر