تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور : 11 دسمبر/ مقبوضہ فلسطین میں مظاہرین نے مسئلہ فلسطین کے بارے ميں سعودی عرب کے بادشاہ اور ولیعہد کی غداری اور خیانت کی بھر پور مذمت کرتے ہوئے سعودی عرب کے بادشاہ شاہ سلمان اور ولیعہد محمد بن سلمان کی تصویروں کو آگ لگا کر پاؤں تلے رگڑ دیا ہے۔

نیوز نور : 11 دسمبر/ اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے کہا ہے کہ امریکہ کی جانب سے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کا اعلان بعض عرب ممالک  کی ہم آہنگی سے انجام پایا ہے جس کا مقصد عرب - اسرائیل کے تعلقات کو معمول پر لانا اور مسئلہ فلسطین کو سرد خانے میں ڈالنا ہے۔

نیوز نور 11 دسمبر/ فلسطینی وزیرخارجہ نےکہا ہے کہ امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی جانب سے بیت المقدس کو اسرائیلی ریاست کا دارالحکومت تسلیم کئے جانے کے بعد اسرائیل دوسرے ممالک  پر القدس کو صہیونی ریاست کا دارالحکومت تسلیم کرانے کے لیے دباؤ ڈال رہا ہے۔

نیوز نور : 11 دسمبر/ سعودی عرب کے قریب سمجھے جانے والے پاکستانی اہلسنت عالم دین اور جمعیت علماء اسلام (س) کے سربراہ  نے کہا ہے کہ اسلامی اتحادی افواج کا ڈھونگ رچانے والا شاہ سلمان اب بیت المقدس کو بچائیں۔

نیوز نور : 11 دسمبر/ امریکی یونیورسٹیوں کے ایک سو بیس یہودی اساتذہ نے ایک شکایت نامے پر دستخط کرکے بیت المقدس کے بارے میں امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے فیصلے کی مذمت کی ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
برطانوی مصنف:
ناکام ریاستوں کی تشکیل سے مغرب سیکورٹی فرموں کیلئے نئے مارکیٹ تیار کررہا ہے

نیوز نور : برطانیہ کے ایک مصنف نے کہا ہے کہ ناکام ریاستوں کی تشکیل سے مغرب سیکورٹی فرموں کیلئے نئے مارکیٹ تیار کررہا ہے۔

استکباری دنیا صارفین۲۳۷ : // تفصیل

برطانوی مصنف:

ناکام ریاستوں کی تشکیل سے مغرب سیکورٹی فرموں کیلئے نئے مارکیٹ تیار کررہا ہے

نیوز نور : برطانیہ کے ایک مصنف نے کہا ہے کہ ناکام ریاستوں کی تشکیل سے مغرب سیکورٹی فرموں کیلئے نئے مارکیٹ تیار کررہا ہے۔

عالمی اردو خبر رساں ادارے ’’نیوز نور‘‘ کی رپورٹ کے مطابق برطانوی مصنف ’’ڈین گلاز بروک‘‘ نے روسیا الیوم کے ساتھ انٹرویو میں کہا کہ نجی سیکورٹی ایک بہت بڑی ترقیاتی صنعت ہے جو ناکام ریاستوں کی تخلیق کرنے کی مغربی حکمت عملی کے ساتھ چلتی ہے۔

انہوں نے امریکی عدالت کے اس فیصلے کہ اگرچہ مقدمے کی سماعت ہوگی لیکن الزام عائد نہیں کیا جاسکتا ہے کو مغرب کی طرف سے وسیع پیمانے اقدامات کا حصہ قرا ر دیتے ہوئے کہا کہ اس فیصلے یہ بات عیاں ہوئی ہے کہ امریکی اور برطانوی فوجیوں کو دنیا کے باقی ممالک میں ظلم ڈھانے کی چھوٹ ہے۔

انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی جرائم کی عدالت نے ایک فیصلے کے تحت طے کیا ہے کہ یورپ یا شمالی امریکہ کے کسی بھی فرد کو اُن کے جرائم پر سزا نہیں دی جاسکتی ہے جس کا مشاہدہ برطانوی فوج کے اہلکاروں کے خلاف مقدمے کی سماعت کے خاتمے سے کیا جاسکتا ہے اور یہی حال امریکہ کا بھی ہے اور ان اقدامات کا مقصد تمام دنیا کو یہ باور کرانا ہے کہ امریکی و برطانوی فوجی جنگی جرائم کے ارتکاب پر بھی سزا سے مستثنیٰ ہیں۔

انہوں نے کہا کہ 2011ء میں عراق کے اُس وقت کے وزیر اعظم نوری المالکی نے امریکی فوجیوں کو سزا سے مستثنیٰ رکھنے کے معاہدے پر دستخط کرنے سے انکار کیا جو کہ امریکہ اور عراق کے درمیان تنازعے کا سب سے بڑا سبب تھا اور افغانستان میں بھی نجی شکنجوں کے قاتلوں کو چلانے میں نجی ٹھیکیداروں کا اسکنڈل سامنے آیا ہے۔

موصوف مصنف نے کہا کہ زیادہ تر پیداوار دنیا بھر میں اپنے ٹھکانوں کو جاری رکھنے کیلئے مغرب ایک کے بعد دوسری ناکام ریاست تشکیل دے رہا ہے جو کہ اُن کی نجی سیکورٹی کیلئے ایک نیا مارکیٹ بن رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ عام رعایا کو تحفظ دینے کی آڑ میں مغرب دنیا بھر میں ریاستوں کو تباہ کررہا ہے اور یہ اُن کے مطابق واقعی ایک ترقی کی صنعت ہے جو برطانیہ ، امریکہ اور اسرائیل کی قیادت میں رواں دواں ہے۔

گلاز بروک نے مزید کہا کہ نجی سیکورٹی کمپنیوں کی سرگرمیوں  پر عوامی احتساب اور جانچ کی کمی ہے۔   


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر