تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور:1932 ء میں سعودی عرب کے قیام کے بعد سے آل سعود نے بادشاہت کے متضاد سیاسی ،سماجی اورمذہبی ڈھانچے کے چلینجز سے نمٹنے کیلئے وہابیت کا استعمال کیا ہے اوروہابیت کے نظرئے نے مذہبی طورپر آل سعود خاندان کی طاقت تاج اورحکومت کو جائز ٹھہرایا ہے۔

نیوز نور : بولویا کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ امریکہ کو وینزوئلا میں مداخلت کا خیال ترک کرنا چاہئے کیونکہ دنیا بھر میں امریکی سامراجیت دم توڑ چکی ہے۔

نیوز نور:ایران کے ایک سینئر قانون ساز نے کہاہےکہ امریکہ کی طرف سے روس اورایران پر  بیک وقت پابندیوں کو عائد کئے جانے کا مقصد دوعلاقائی اتحادیوں کے درمیان تعلقات میں شگاف پیدا کرنا تھا۔

نیوز نور:لبنان کی اسلامی تحریک مقاومت حزب اللہ کی سیکورٹی کونسل کےچیئرمین نے کہاہے کہ شام میں سرگرم تکفیری دہشتگرد گروہ داعش کے خلاف جنگ آخری مرحلے میں داخل ہوچکی ہے۔

نیوز نور : لبنان کے پارلیمانی نمائندے نے کہا ہے کہ  شام فلسطین اور بیت المقدس کی حمایت کا علمبردار ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
بین الاقوامی امور کے روسی ماہر:
شمالی کوریا کے خلاف امریکی اقدامات ایک تباہ کن جنگ کا موجب بن سکتے ہیں

نیوز نور: بین الاقوامی امور کے ایک روسی ماہر نے جزیرہ نما کوریا میں بڑھتی کشیدگی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاہےکہ امریکی صدر شمالی کوریا کے تباہ کن جنگی دلدل میں پھنسنے جارہے ہیں جو جنوبی کوریا کی تباہی کا باعث بنےگا۔

استکباری دنیا صارفین۳۳۰ : // تفصیل

بین الاقوامی امور کے روسی ماہر:

شمالی کوریا کے خلاف امریکی اقدامات ایک تباہ کن جنگ کا موجب بن سکتے ہیں

نیوز نور: بین الاقوامی امور کے ایک روسی ماہر نے جزیرہ نما کوریا میں بڑھتی کشیدگی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاہےکہ امریکی صدر شمالی کوریا کے تباہ کن جنگی دلدل میں پھنسنے جارہے ہیں جو جنوبی کوریا کی تباہی کا باعث بنےگا۔

عالمی اردوخبررساں ادارے ’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق مقامی میڈیا کےساتھ انٹرویو میں ’’الیگزنڈر ورون سوف‘‘نے جزیرہ نما کوریا میں بڑھتی کشیدگی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاکہ امریکی صدر شمالی کوریا کے تباہ کن جنگی دلدل میں پھنسنے جارہے ہیں جو جنوبی کوریا کی تباہی کا باعث بنےگا۔

انہوں نے کہاکہ جزیرہ نما کوریا میں ایسی صورتحال پیدا ہوگئی جہاں شمالی کوریا کو امریکہ کی طرف سے کسی بھی وقت حملے کے امکانات دکھائی دے رہے ہیں اس لئے وہ امریکی حملے کا انتظار نہیں کرنا چاہتے کیونکہ امریکی حملے کے بعد ان کے پاس کچھ بھی باقی نہیں رہےگا۔

انہوں نے کہاکہ امریکہ کی شمالی کوریا کے خلاف بیان بازیاں ایک مہلک اورتباہ کن جنگ کا دعوت دےسکتی ہے۔

انہوں نے اقوام متحدہ میں  پونگ یانگ مخالف پابندیوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئےکہاکہ پونگ یانگ نے اقوام متحدہ کی جانب سے نئے پابندیوں کے بعد امریکہ کو بھی متنبہ کیاتھا کہ وہ اس کی جوابی کاروائی کرےگا اوراس کی قیمت امریکہ کو چکانی پڑےگی۔

قابل ذکر ہےکہ 7 اگست کو اقوام متحدہ کی جانب سے نئی پابندیاں عائد کئے جانے کے بعد شمالی کوریا نے کہاکہ پابندیوں کے ڈرافٹ کےکردار کی تیاری ادا کرنے پر امریکہ کو اس جرم کی قیمت کی ہزار بار چکانی پڑےگی۔

شمالی کوریا نے کہاکہ جزیرہ نماکوریا میں بگڑتی صورتحال اورجوہری مسئلہ امریکی دشمنیوں سے پیدا ہوا ہے۔

شمالی کوریا نے واضح کردیاکہ ہم اپنے جوہری اوربیلسٹک پروگرام کے حوالے سے مذاکرات کے میزا پر نہیں آئیں گے اورجوہری پروگرام کے حوالے سے ایک انچ بھی پیچھے نہیں ہٹیں گے۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر