تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور:1932 ء میں سعودی عرب کے قیام کے بعد سے آل سعود نے بادشاہت کے متضاد سیاسی ،سماجی اورمذہبی ڈھانچے کے چلینجز سے نمٹنے کیلئے وہابیت کا استعمال کیا ہے اوروہابیت کے نظرئے نے مذہبی طورپر آل سعود خاندان کی طاقت تاج اورحکومت کو جائز ٹھہرایا ہے۔

نیوز نور : بولویا کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ امریکہ کو وینزوئلا میں مداخلت کا خیال ترک کرنا چاہئے کیونکہ دنیا بھر میں امریکی سامراجیت دم توڑ چکی ہے۔

نیوز نور:ایران کے ایک سینئر قانون ساز نے کہاہےکہ امریکہ کی طرف سے روس اورایران پر  بیک وقت پابندیوں کو عائد کئے جانے کا مقصد دوعلاقائی اتحادیوں کے درمیان تعلقات میں شگاف پیدا کرنا تھا۔

نیوز نور:لبنان کی اسلامی تحریک مقاومت حزب اللہ کی سیکورٹی کونسل کےچیئرمین نے کہاہے کہ شام میں سرگرم تکفیری دہشتگرد گروہ داعش کے خلاف جنگ آخری مرحلے میں داخل ہوچکی ہے۔

نیوز نور : لبنان کے پارلیمانی نمائندے نے کہا ہے کہ  شام فلسطین اور بیت المقدس کی حمایت کا علمبردار ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
عرب امور کےامریکی ماہر:
سعودی عرب انتہاپسندانہ نظریات کو پھیلانے والا دنیا کا سب سے بڑا ملک ہے

نیوز نور: عرب امور کے ایک امریکی ماہر کے مطابق سعودی عرب نےگذشتہ  کئی دہائیوں سے دنیا بھر میں انتہا پسندانہ وہابی نظریات کو پھیلانے میں بنیادی کردار ادا کیا ہے۔

استکباری دنیا صارفین۴۸۸ : // تفصیل

عرب امور کےامریکی ماہر:

سعودی عرب انتہاپسندانہ نظریات کو پھیلانے والا دنیا کا سب سے بڑا ملک ہے

نیوز نور: عرب امور کے ایک امریکی ماہر کے مطابق سعودی عرب نےگذشتہ  کئی دہائیوں سے دنیا بھر میں انتہا پسندانہ وہابی نظریات کو پھیلانے میں بنیادی کردار ادا کیا ہے۔

عالمی اردوخبررساں ادارے ’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق ’’مائیکل ہارٹر‘‘نے کہاکہ سعودی عرب مشرق وسطیٰ علاقے اوردنیائے اسلام میں اپنے اثرورسوخ کو پھیلانے کیلئے وہابی نظریات کو فروغ دےرہی ہے۔

انہوں نے کہاکہ دنیا بھر کے مسلم ممالک  میں وہابی تکفیری نظریات کو پھیلانے میں سعودی عرب کو امریکہ کی بھرپور حمایت حاصل ہے۔

انہوں نے کہاکہ صومالیہ ،مصر اور افریقہ یورپی وایشیا کے کئی ممالک میں قطر کے حمایت یافتہ علماء اوردانشور سعودی وہابیت کو فروغ دیتے آرہے ہیں۔

انہوں نے کہاکہ سعودی عرب کے موجودہ مفتی عبدالعزیز ابن عبداللہ الشیخ متنازعہ فتوے جاری کرنے کیلئے مشہور ہیں ۔

انہوں نے کہاکہ سعودی عرب کا یہ ہابی مفتی اعظم جزیرہ نما عرب میں  تمام گرجا گھروں کو منہدم کرنے اوراسلامی جمہوریہ ایران کی پوری آبادی کو کافر قراردینے جیسے متنازعہ فتوے جاری کرچکا  ہیں۔

انہوں نےمزید کہاکہ سعودی عرب  مشرق وسطیٰ علاقے میں ایران کے بڑھتے اثرورسوخ سے خوفزدہ اوراندرونی مسائل میں ایسا الجھا ہوا ہے جس کی صاف جھلک اس کی خارجہ پالیسی میں دکھائی دے رہی ہیں۔

قابل ذکر ہےکہ مغر بی ممالک خاص کر امریکہ ریاض کےساتھ تعاون کے سبب اوراپنی منافقانہ پالیسیوں اوراپنے جارحانہ اہداف کے حصول کے دائرے میں تکفیری وہابی نظریات کو فروغ دینے میں سعودیوں کی ملوث ہونے کی پردہ پوشی کررہاہے یہ بات سب پر واضح ہےکہ تکفیری دہشتگرد گروہوں کی جڑیں  وہابیت کے انحرافی  اورانتہا پسندانہ رجحانات میں پیوست ہے یہ انحرافی عقائد دہشتگرد گروہوں کو وجود میں لائے جانے اورعلاقے اوردنیا میں آل سعود کی فنتہ انگیزی کا سبب بنے ہیں عالم اسلام میں فرقہ واریت اورمذہبی تصادم کی ترویج کرنا اور خوف ودہشتگردی پھیلانانیزا سلامی ممالک کے درمیان اختلافات پیدا کرنا سعودی عرب کی خارجہ پالیسی کا اصل مقصد ہے۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر