تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور:1932 ء میں سعودی عرب کے قیام کے بعد سے آل سعود نے بادشاہت کے متضاد سیاسی ،سماجی اورمذہبی ڈھانچے کے چلینجز سے نمٹنے کیلئے وہابیت کا استعمال کیا ہے اوروہابیت کے نظرئے نے مذہبی طورپر آل سعود خاندان کی طاقت تاج اورحکومت کو جائز ٹھہرایا ہے۔

نیوز نور : بولویا کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ امریکہ کو وینزوئلا میں مداخلت کا خیال ترک کرنا چاہئے کیونکہ دنیا بھر میں امریکی سامراجیت دم توڑ چکی ہے۔

نیوز نور:ایران کے ایک سینئر قانون ساز نے کہاہےکہ امریکہ کی طرف سے روس اورایران پر  بیک وقت پابندیوں کو عائد کئے جانے کا مقصد دوعلاقائی اتحادیوں کے درمیان تعلقات میں شگاف پیدا کرنا تھا۔

نیوز نور:لبنان کی اسلامی تحریک مقاومت حزب اللہ کی سیکورٹی کونسل کےچیئرمین نے کہاہے کہ شام میں سرگرم تکفیری دہشتگرد گروہ داعش کے خلاف جنگ آخری مرحلے میں داخل ہوچکی ہے۔

نیوز نور : لبنان کے پارلیمانی نمائندے نے کہا ہے کہ  شام فلسطین اور بیت المقدس کی حمایت کا علمبردار ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
امریکی صحافی:
شمالی کوریا کے جوہری ہتھیار امریکہ سے اس کی حفاظت کے ضامن

نیوز نور: امریکہ کے ایک سینئر صحافی نے ڈونالڈ ٹرمپ کے اس بیان  کہ امریکہ کے خلاف دھمکی آمیز بیانات جاری رہنے کی صورت میں شمالی کوریا کو ایسی آگ میں جھونک دیں گے جس کا دنیا نے اب تک مشاہدہ نہیں کیا ہوگا  کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاہےکہ ٹرمپ کا بیان غیر ضروری ہے اورپونگ یانگ اس بات سے آگاہ ہےکہ اس کی جوہری صلاحیت ہی امریکہ کو اس پر حملے کرنے سےباز  رکھے ہوئی ہے۔

استکباری دنیا صارفین۳۴۴ : // تفصیل

امریکی صحافی:

شمالی کوریا کے جوہری ہتھیار امریکہ سے اس کی حفاظت کے ضامن

نیوز نور: امریکہ کے ایک سینئر صحافی نے ڈونالڈ ٹرمپ کے اس بیان  کہ امریکہ کے خلاف دھمکی آمیز بیانات جاری رہنے کی صورت میں شمالی کوریا کو ایسی آگ میں جھونک دیں گے جس کا دنیا نے اب تک مشاہدہ نہیں کیا ہوگا  کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاہےکہ ٹرمپ کا بیان غیر ضروری ہے اورپونگ یانگ اس بات سے آگاہ ہےکہ اس کی جوہری صلاحیت ہی امریکہ کو اس پر حملے کرنے سےباز  رکھے ہوئی ہے۔

عالمی اردوخبررساں ادارے ’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق ایرانی ذرائع ابلاغ کےساتھ مختصر انٹرویو میں ’’پال سٹریٹ‘‘نے ڈونالڈ ٹرمپ کے اس بیان  کہ امریکہ کے خلاف دھمکی آمیز بیانات جاری رہنے کی صورت میں شمالی کوریا کو ایسی آگ میں جھونک دیں گے جس کا دنیا نے اب تک مشاہدہ نہیں کیا ہوگا کی طرف اشارہ کرتے ہوئے  کہاکہ ٹرمپ کا بیان غیر ضروری ہے اورپونگ یانگ اس بات سے آگاہ ہےکہ اس کی جوہری صلاحیت ہی امریکہ کو اس پر حملے کرنے سے بازرکھی ہوئی ہے۔

انہوں نے کہاکہ پونگ یانگ کے خلاف فوجی کاروائی کی پہل دہائیوں سے امریکہ کااسٹریٹجک منصوبہ رہا ہے  اس لئے شمالی کوریا کا اپنے جوہری ہتھیاروں کو ترقی دینا  کوئی حیرت کی بات نہیں ہے۔

انہوں نے کہاکہ دنیا میں امریکہ کا رویہ ایسے رہا ہے کہ جیسے وہ امن ،انصاف اورجمہوریت کا محافظ ہو۔

انہوں نے کہاکہ دیگر ممالک میں مداخلت کرکے وہاں امن استحکام کو درہم برہم کرنا اورحکومتوں کو تبدیل کرنے کا امریکی ریکارڈ حیران کن ہے۔

انہوں نے کہاکہ شمالی کوریا اس حقیقت سے واقف ہےکہ لیبیا ،عراق اورچلی جیسے ممالک کا حشر ہونے سے بچنے کیلئے ان کے پاس جوہری صلاحیت کا ہونا ضروری ہے۔

انہوں نے پیشنگوئی کی کہ جزیرہ نما کوریا میں کسی طرح کی جنگ چھیڑنے والی نہیں ہے تاہم  ریاستوں کے سربراہان کے اس طرح کے بیانات سے اتفاقی طورپر جنگ کا آغاز ہوسکتا ہے۔

قابل ذکر ہےکہ امریکی صدرڈونالڈ ٹرمپ نے اگست 9 کو پونگ یانگ کے خلاف انتہائی سخت لہجہ اختیار کرتے ہوئے کہاکہ  امریکہ کے خلاف دھمکی آمیز بیانات جاری رکھنے کی صورت میں شمالی کوریا کو ایسی آگ میں جھونک دیں گے   جس کا دنیا نے اب تک مشاہدہ نہیں کیاہوگا۔

ماہرین کا ماننا ہےکہ ٹرمپ کی دھمکیاں عملی نہیں ہیں وہ صرف پونگ یانگ اوربیجنگ کو مرعوب کرنے کیلئے اسطرح کی دھمکیاں دے رہے ہیں۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر