تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور:1932 ء میں سعودی عرب کے قیام کے بعد سے آل سعود نے بادشاہت کے متضاد سیاسی ،سماجی اورمذہبی ڈھانچے کے چلینجز سے نمٹنے کیلئے وہابیت کا استعمال کیا ہے اوروہابیت کے نظرئے نے مذہبی طورپر آل سعود خاندان کی طاقت تاج اورحکومت کو جائز ٹھہرایا ہے۔

نیوز نور : بولویا کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ امریکہ کو وینزوئلا میں مداخلت کا خیال ترک کرنا چاہئے کیونکہ دنیا بھر میں امریکی سامراجیت دم توڑ چکی ہے۔

نیوز نور:ایران کے ایک سینئر قانون ساز نے کہاہےکہ امریکہ کی طرف سے روس اورایران پر  بیک وقت پابندیوں کو عائد کئے جانے کا مقصد دوعلاقائی اتحادیوں کے درمیان تعلقات میں شگاف پیدا کرنا تھا۔

نیوز نور:لبنان کی اسلامی تحریک مقاومت حزب اللہ کی سیکورٹی کونسل کےچیئرمین نے کہاہے کہ شام میں سرگرم تکفیری دہشتگرد گروہ داعش کے خلاف جنگ آخری مرحلے میں داخل ہوچکی ہے۔

نیوز نور : لبنان کے پارلیمانی نمائندے نے کہا ہے کہ  شام فلسطین اور بیت المقدس کی حمایت کا علمبردار ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
امریکی تجزیہ کار:
اقوام عالم پر امریکی سامراجیت کو برقراررکھنے کا ٹرمپ کا خواب کبھی شرمندہ تعبیر نہ ہوگا

نیوز نور: امریکہ کے ایک سیاسی تجزیہ نگار نے کہاہےکہ ٹرمپ تمام دنیا پر  امریکی سامراجیت ،اجارہ داری اورتسلط کو برقراررکھنے کی خواہش رکھتے ہیں۔

استکباری دنیا صارفین۲۲۳ : // تفصیل

امریکی تجزیہ کار:

اقوام عالم پر امریکی سامراجیت کو برقراررکھنے کا ٹرمپ کا خواب کبھی شرمندہ تعبیر نہ ہوگا 

نیوز نور: امریکہ کے ایک سیاسی تجزیہ نگار نے کہاہےکہ ٹرمپ تمام دنیا پر  امریکی سامراجیت ،اجارہ داری اورتسلط کو برقراررکھنے کی خواہش رکھتے ہیں۔

عالمی اردوخبررساں ادارے ’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق امریکی تجزیہ کار وصحافی’’ڈینس ایٹلر‘‘نے پریس ٹی وی کےساتھ انٹرویو میں ڈونالڈ ٹرمپ کی طرف سے فوجی جنرلوں کی تقرری کی مذمت کرتے ہوئے کہاکہ ٹرمپ اوراسکے  فوجی جنرل  اس نظریہ کا اشتراک کرتے ہیں کہ امریکہ کو کسی بھی قیمت پر تمام دنیا میں اپنی سامراجیت تسلط اوراجارہ داری کو برقرارکھنی چاہئے ۔

انہوں نے کہاکہ  امریکی دفاعی سیکرٹری جیمز میٹس ،قومی سلامتی کے مشیر ایچ آر میک مکسٹر اوروائٹ ہاوس کے چیف آف سٹاف جان کیلی ایسے تین سبکدوش شدہ جنرل ہیں کہ جنہیں ٹرمپ نے اپنی کابینہ کا حصہ بنایا ہےامریکی سامراجیت کو تمام دنیا پر  مسلط کرنے کے خواہاں ہیں ۔

انہوں نے کہاکہ امریکہ اورشمالی کوریا کے درمیان پونگ یانگ کے ایٹمی میزائل تجربات کےدوران  بڑھتی کشیدگی  اس بات کی اوراشارہ ہےکہ امریکہ جزیرہ نمار کوریا میں شمالی کوریا جیسے  ایٹمی حریف کو برداشت نہیں کرسکتا ہے۔

 موصوف تجزیہ نگار نے کہاکہ دونوں طرف کے اشتعال انگیز بیانات اگرچہ بیان بازی کےعلاوہ کچھ نہیں ہیں تاہم کشیدگی کا ماحول بہت سے خوفناک نتائج کا باعث  بن سکتے ہیں۔

ڈینس ایٹلر نے مزیدکہاکہ  امریکی فوجی صنعتی کمپلکس اورقومی سلامتی کے ارکان نشے میں چور ہوکر اس نقطہ نظر کا اشتراک کرتے ہیں کہ امریکہ کو دنیابھر میں اپنی سامراجیت مسلط کرنی چاہئے ۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر