تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور:یمن کی وزارت صحت نے اعلان کیا ہے کہ  سعودی جارحیت کے سبب ہیضے میں مبتلا افراد کی تعداد آٹھ لاکھ سے زیادہ ہو گئی ہے جس میں اب تک دو ہزار افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔

نیوزنور:اسلامی جمہوریہ ایران کی تشخیص مصلحت نظام کونسل کے سیکریٹری نے کہا ہے کہ ایران میزائلی صلاحیتوں کے بارے میں کوئی مذاکرات نہیں کرے گا۔

نیوزنور:بحرین میں انسانی حقوق اور جمہوریت کے لئے صلح نامی ایک ادارے کے سربراہ نے کہا ہے کہ گذشتہ سات برسوں میں آل خلیفہ حکومت نے پندرہ ہزار بحرینی شہریوں کو گرفتار کر کے جیل میں قید کیا ہے۔

نیوزنور:فرانس کے صدر نے کہا ہے کہ ایٹمی سمجھوتے کو بچانے کے لئے یورپ اپنی تمام تر کوششیں بروئےکار لائے گا۔

نیوزنور: مسجد اقصیٰ کے خطیب نے فلسطینی قوم کے خلاف صہیونی ریاست کے مظالم کی شدید مذمت کرتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ القدس شہر کو صہیونی دشمن کی جانب سے منظم جارحیت کاسامنا ہےاس لئے یکجہتی، اتحاد اور اتفاق فلسطینی قوم کے پاس اپنے سلب شدہ حقوق کے حصول کے لیے ایک موثر ہتھیار ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
سابق سی آئی اے اہلکار :
ایران کے حوالے سے ٹرمپ جارج بُش کی عراق میں کی جانے والی غلطی نہ دہرائیں

نیوز نور : امریکہ کی بدنام زمانہ خفیہ ایجنسی ’سی آئی اے‘ کے سابق اہلکار نے سابق امریکی  صدرجارج ڈبیلو بُش کی عراق پر فوجی جارحیت کا ذکر کرتے ہوئے ڈونالڈ ٹرمپ کو مشورہ دیا ہے کہ وہ اسلامی جمہوریہ ایران کے حوالے سے بُش جیسی غلطی کو دوبارہ دہرانے سے باز رہے۔

استکباری دنیا صارفین۲۵۶ : // تفصیل

سابق سی آئی اے اہلکار :

ایران کے حوالے سے ٹرمپ جارج بُش کی عراق میں کی جانے والی غلطی نہ دہرائیں

نیوز نور : امریکہ کی بدنام زمانہ خفیہ ایجنسی ’سی آئی اے‘ کے سابق اہلکار نے سابق امریکی  صدرجارج ڈبیلو بُش کی عراق پر فوجی جارحیت کا ذکر کرتے ہوئے ڈونالڈ ٹرمپ کو مشورہ دیا ہے کہ وہ اسلامی جمہوریہ ایران کے حوالے سے بُش جیسی غلطی کو دوبارہ دہرانے سے باز رہے۔

عالمی اردو خبر رساں ادارے ’’نیوز نور‘‘ کی رپورٹ کے مطابق امریکہ کی بدنام زمانہ خفیہ ایجنسی ’سی آئی اے‘ کے سابق اہلکار’’ایمائل نخلہ‘‘نے ایک مضمون میں کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف کسی بھی فوجی کاروائی کے تباہ کن نتائج ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ اگر امریکی حکومت سعودی عرب، ناجائز صہیونی ریاست اور امریکہ میں ہتھیار بنانے والی کمپنیوں کے دباؤ پر مثبت ردعمل دینے کی وجہ سے مشرق وسطی بالخصوص دوسرے مسلم ممالک میں جنگ کا آغاز کرے تو تباہ کن نتائج کا سامنا کرے گی۔

انہوں  نے کہا کہ ایسے غلط اقدام خلیج فارس ممالک میں سنی قبائلی حکومتوں کے خاتمے کا باعث بن سکتا ہے اس لئے ٹرمپ اور اس کی حکومت کو گذشتہ غلطیوں سے سبق سیکھانا چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ سابق امریکی صدر بُش نے عراق میں بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانے والے ہتھیار کی موجودگی کے جھوٹے دعوے کے حوالے سے اقوام متحدہ کی منظوری کے لئے بہت ہی کوششیں کی مگر اسلامی جمہوریہ ایران نے جوہری پروگراموں کی حدود کے لئے ایک معاہدے پر دستخط کیا اور ایٹمی معاہدے کی نگران کمیٹی اس ملک کی دیانتداری کی تصدیق کررہی ہے۔

موصوف سابق سی آئی اے اہلکار نے ایران اور امریکہ کے درمیان فوجی تنازعے کے کچھ نتائج کی طرف  اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ایسے جنگ تیل کی عالمی منڈیاں، آبنائے ہرمز، باب المندب اور نہر سوئز کے بحری ٹریفک میں خلل ڈالنے کے علاوہ ایران کی جانب سے سعودی عرب پر حملہ اور اس ملک کی تیل اور پانی تنصیبات پر شدید نقصان پہنچے کا سبب بنے گا۔

ایمائل نخلہ نے مزید زور یتے ہوئے کہا کہ ٹرمپ حکومت کو گزشتہ سے سبق سیکھ کر ایران مخالف کاروائیوں کے نتائج کا جائزہ لینا چاہئے۔  


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر