تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور:یمن کی وزارت صحت نے اعلان کیا ہے کہ  سعودی جارحیت کے سبب ہیضے میں مبتلا افراد کی تعداد آٹھ لاکھ سے زیادہ ہو گئی ہے جس میں اب تک دو ہزار افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔

نیوزنور:اسلامی جمہوریہ ایران کی تشخیص مصلحت نظام کونسل کے سیکریٹری نے کہا ہے کہ ایران میزائلی صلاحیتوں کے بارے میں کوئی مذاکرات نہیں کرے گا۔

نیوزنور:بحرین میں انسانی حقوق اور جمہوریت کے لئے صلح نامی ایک ادارے کے سربراہ نے کہا ہے کہ گذشتہ سات برسوں میں آل خلیفہ حکومت نے پندرہ ہزار بحرینی شہریوں کو گرفتار کر کے جیل میں قید کیا ہے۔

نیوزنور:فرانس کے صدر نے کہا ہے کہ ایٹمی سمجھوتے کو بچانے کے لئے یورپ اپنی تمام تر کوششیں بروئےکار لائے گا۔

نیوزنور: مسجد اقصیٰ کے خطیب نے فلسطینی قوم کے خلاف صہیونی ریاست کے مظالم کی شدید مذمت کرتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ القدس شہر کو صہیونی دشمن کی جانب سے منظم جارحیت کاسامنا ہےاس لئے یکجہتی، اتحاد اور اتفاق فلسطینی قوم کے پاس اپنے سلب شدہ حقوق کے حصول کے لیے ایک موثر ہتھیار ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
اسرائیلی تجزیہ نگار:
کردستان عراق اسرائیل اور ایران کے درمیان میں حائل ہو سکتا ہے

نیوزنور:ایک امریکی خبر رساں ایجنسی نے سابقہ صہیونی ماہرین   اور عہدیداروں  کے حوالے سے لکھا ہے: اسرائیل وہ واحد  حکومت ہے کہ جو کردوں کی مستقل حکومت ایجاد کر کے  اس سے فائدہ اٹھانا چاہتی ہے۔

استکباری دنیا صارفین۱۱۳۵ : // تفصیل

اسرائیلی تجزیہ نگار:

کردستان عراق اسرائیل اور ایران کے درمیان میں حائل ہو سکتا ہے

نیوزنور:ایک امریکی خبر رساں ایجنسی نے سابقہ صہیونی ماہرین   اور عہدیداروں  کے حوالے سے لکھا ہے: اسرائیل وہ واحد  حکومت ہے کہ جو کردوں کی مستقل حکومت ایجاد کر کے  اس سے فائدہ اٹھانا چاہتی ہے۔

عالمی اردو خبررساں ادارے نیوزنور کی رپورٹ کے مطابق فرانس کی خبر رساں ایجنسی نے  اپنی  ایک تحلیل میں  کردستان عراق کی ریفرنڈم کے متعلق لکھا ہے:  ماہرین کی نظر میں ، اسرائیل واحد حکومت ہے کہ جو علنی طور پر کردوں کی ایک مستقل حکومت کی  حمایت کرتی ہے اور کردوں اور یہودیوں کے اچھے تعلقات اس بات پر  واضح دلیل ہے اور اسرائیل اس بات کا منتظر ہے کہ کردستان ایران کے مقابلے میں ایک محاذکے طور پر بن کے ابھرے۔

عراق ، ایران ، ترکی اور امریکہ کے اعتراض کے باوجود عراق کے کرد  25 ستمبر کو ریفرنڈم کرانے  کا ارادہ رکھتے ہیں ۔

عراق کی پارلیمنٹ نے دو شنبہ کو  ریفرنڈم کو  معلق کرنے کا حکم صادر کیا لیکن کردستان کے مسئولین اس ریفرنڈم کو منعقد کرنے پر مصر ہیں۔

اسرائیل کے وزیر اعظم بنیامن نیتن یاھو  نے گذشتہ ہفتے بیان دیا ہے:  اسرائیل سب سے پہلی حکومت ہے کہ جو قانونی طور پر کردستان کے لوگوں کے لئے ایک مستقل ملک  کی حمایت کا اعلان کرتی ہے۔

اسرائیلی فوج کے سابق جنرل یعیر گولان نے واشنگٹن میں مشرق نزدیک کے ایک فکری مرکز میں   اس ضمن میں کہا: بنیادی طور پر  ایران حوالے سے مشرقی علاقے کی بے ثباتی کو مد نظر رکھتے ہوئے کردستان کے استقلال کا آئیڈیا برا نہیں ہے۔

اسرائیلی فوج کے سابق وزیر گیدئون سعار نے کہا: کرد اسرائیل کی طرح ہی علاقے میں ایک اقلیتی گروہ ہے اور وہ اسرائیل  کے پرانے اور قابل اعتماد  اتحادی تھے اور رہیں گے ۔

سعار نے کہا:  ہمیں ایسے طبقے کی حمایت کرنی چاہئے کہ جسے سو سال قبل سایکس پیکو کی جانب سے ظلم و ستم کا ناشانہ بنایا گیا اور پھر عراق میں صدام حسین اور شام  میں اسد حکومت کی جانب سے سرکوب کرنے کی کوشش کی گئی۔

اسی طرح اس نے  کردستان کی اس جد و جہد کو علاقے میں اسلامی فوج کی تضعیف قرار دیتے ہوئے کہا: علاقے میں کردوں کی موقعیت کو مد نظر رکھتے ہوئے ہم اس بات کی طرف متوجہ ہوتے ہیں کہ کرد   علاقے میں اسلام افراطی  (جیسے کہ داعش) کو پھیلنے سے روکنے میں ایک بہترین کردار ادا کر سکتے ہیں ۔

تل ابیب یونیورسٹی میں  کردستان کے اطلاعاتی مرکز  کے رئیس افریبا بنگیو نے کہا کہ  1965 سے لے کر 1975 تک کے عرصے میں کردستان کو اسرائیل کی جانب سے حکومتی اور اطلاعاتی کمک حاصل رہی ہے۔

بنگو نے کہا  کہ  کردستان پر ھمہ جانبہ عربی دباو کو مد نظر رکھتے ہوئے میں یہ نہیں جانتا کہ کب تک کرد متحد رہ سکتے ہیں لیکن کبھی بھی اسرائیل کے ساتھ خصومت سے کام نہیں لیں  گے۔

اس نے آگے کہا: قابل اطمینان بات یہ ہے کہ   کردستان نہ صرف  یہ کہ ایرا ن بلکہ تمام افراطی عناصر کی راہ میں حائل ہونے کی طاقت رکھتا ہے۔ ایک ایسا کردستان کہ سیکولیرزم ، ڈیموکریسی میانہ روی  کی بنیادوں پر استوار ہو وہ علاقے میں ایک مثبت طاقت  بن کر ابھرے گا ۔

 


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر