تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور21فروری/شامی ذرایع ابلاغ نے اپنی ایک رپورٹ میں کہاہے کہ شامی فوج کے خلاف مغربی حمایت یافتہ دہشتگرد عناصر نے نئی سازش کا آغاز کیا ہے جس کے تحت کلورین گیس سے بھرے تین ٹرکوں کو ترکی سے شامی علاقے ادلیب میں پہنچا دیا گیا ہے۔

نیوزنور21 فروری/اسرائیلی پارلیمنٹ کینیسٹ کے ایک رکن نے  کہا ہے کہ  اسرائیلی دائیں بازو کےساتھ سعودیہ کا اتحاد شرمناک ہے اورصیہونی وزیر اعظم  کو حزب اللہ اورمقاومت سے خوف ہے۔

نیوزنور21فروری/فلسطینی اتھارٹی کے سربراہ نے کہا ہے کہ آج فلسطین میں قبضے اور اس کے عوام پر جو حالات گزر رہے ہیں اس کا ذمے دار برطانیہ ہے۔

نیوزنور21فروری/اقوام متحدہ میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے مندوب نے جوہری معاہدے کو کامیاب مذاکرات کرنے کے لئے مثالی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ دوسروں پر پابندیاں لگانے کے نشے میں دھت ہے۔

نیوزنور21فروری/اقوام متحدہ کے کوآرڈینیٹر برائے امور مشرق وسطٰی نےناجائز صہیونی ریاست کے غاصب حکمرانوں پر زور دیا ہے کہ وہ فلسطین میں معصوم عوام کے گھروں اور اسکولوں کو تباہ کرنے کا سلسلہ بند کریں۔

  فهرست  
   
     
 
    
جدید ترین رائے گیری کے نتائج کی بنیاد پر ؛
صرف ۲۴ فیصد امریکی یہ سوچتے ہیں کہ ان کا ملک صحیح راستے پر گامزن ہے

نیوزنور:امریکہ میں جدید ترین رائے گیری  کے نتائج سے پتہ چلا ہے کہ اس ملک کے لوگ اپنے ملک کے حالات اور ٹرامپ کے طرز عمل سے راضی نہیں ہیں ۔

استکباری دنیا صارفین۴۴۵ : // تفصیل

جدید ترین رائے گیری کے نتائج کی بنیاد پر ؛

صرف ۲۴ فیصد امریکی یہ سوچتے ہیں کہ ان کا ملک صحیح راستے پر گامزن ہے

نیوزنور:امریکہ میں جدید ترین رائے گیری  کے نتائج سے پتہ چلا ہے کہ اس ملک کے لوگ اپنے ملک کے حالات اور ٹرامپ کے طرز عمل سے راضی نہیں ہیں ۔

عالمی اردو خبررساں ادارے نیوزنور نے ایسوشیٹیڈ پریس کے حوالے سے خبر دی ہے کہ امریکہ میں تازہ ترین نظر سنجی سے  پتہ چلا ہے کہ امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرامپ کے کچھ جنجالی  بیانات اور اقدامات کے بعد  کہ جس میں شمالی کوریا کو جنگ کی دھمکی بھی شامل ہے، طوفان سے متائثرہ افراد کو امداد رسانی کے بارے میں شکایت ، اور ٹرامپ کے نسل پرستی کے بارے میں بے تکے بیان کے بعدصرف ۲۴ فیصد امریکی یہ سوچتے ہیں کہ ان کا ملک صحیح سمت میں قدم آگے بڑھا  رہا ہے ۔

امریکہ کے صدر کے بارے میں خوش فہمی میں اس قدر کمی خاص کر جمہوریخواہوں میں زیادہ دکھائی دیتی ہے ، اس لیے کہ ماہ جون کی نظر سنجی میں سو فیصد جمہوری خواہوں نے کہا تھا کہ ملک صحیح سمت میں آگے بڑھ رہا ہے ، لیکن آج صرف ۴۴ فیصد جمہوریخواہ ایسا سوچتے ہیں ۔

اسی طرح تقریبا ستر فیصد امریکی کہتے ہیں کہ ٹرامپ ایک متوازن انسان اور صحیح فیصلہ کرنے والا شخص نہیں ہے اور اکثریت کا یہ کہنا ہے کہ وہ سچا اور طاقتور نہیں ہے ۔ ساٹھ فیصد سے زیادہ لوگ نسلی موضوعات نیز  خارجی سیاست کے  مسائل اور مہاجرت کے موضوعات میں اس کے طرز عمل کو رد کرتے ہیں ۔

مجموعی طور پر ۶۷ فیصد امریکی کہ جن میں ایک تہائی جمہوری خواہ شامل ہیں وائٹ ہاوس میں ٹرامپ کی ذمہ داریاں نبھانے کی تائیید نہیں کرتے ۔ اس کے علاوہ ۶۸ فیصد امریکی حفظان صحت کے مسائل پر نگرانی کے قانون  بارے میں ٹرامپ کے طرز عمل سے  کہ جس قانون کا نام اوباماکر ہے ناراضگی کا اظہار کر چکے ہیں ۔  

 


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر