تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور21فروری/شامی ذرایع ابلاغ نے اپنی ایک رپورٹ میں کہاہے کہ شامی فوج کے خلاف مغربی حمایت یافتہ دہشتگرد عناصر نے نئی سازش کا آغاز کیا ہے جس کے تحت کلورین گیس سے بھرے تین ٹرکوں کو ترکی سے شامی علاقے ادلیب میں پہنچا دیا گیا ہے۔

نیوزنور21 فروری/اسرائیلی پارلیمنٹ کینیسٹ کے ایک رکن نے  کہا ہے کہ  اسرائیلی دائیں بازو کےساتھ سعودیہ کا اتحاد شرمناک ہے اورصیہونی وزیر اعظم  کو حزب اللہ اورمقاومت سے خوف ہے۔

نیوزنور21فروری/فلسطینی اتھارٹی کے سربراہ نے کہا ہے کہ آج فلسطین میں قبضے اور اس کے عوام پر جو حالات گزر رہے ہیں اس کا ذمے دار برطانیہ ہے۔

نیوزنور21فروری/اقوام متحدہ میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے مندوب نے جوہری معاہدے کو کامیاب مذاکرات کرنے کے لئے مثالی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ دوسروں پر پابندیاں لگانے کے نشے میں دھت ہے۔

نیوزنور21فروری/اقوام متحدہ کے کوآرڈینیٹر برائے امور مشرق وسطٰی نےناجائز صہیونی ریاست کے غاصب حکمرانوں پر زور دیا ہے کہ وہ فلسطین میں معصوم عوام کے گھروں اور اسکولوں کو تباہ کرنے کا سلسلہ بند کریں۔

  فهرست  
   
     
 
    
النشرہ نیوز کی تحلیل :
شامی جنگ کے آخری مرحلے میں امریکہ اس ملک پر اپنا اثر و رسوخ بڑھانے کیلئے روس کے ساتھ مقابلہ کررہا ہے

نیوزنور: لبنانی نیوز ویب سائٹ النشرہ نے  اپنی ایک تحلیلی رپورٹ میں شام کی موجودہ صورتحال کا جائزہ لیتےہوئےلکھا ہےکہ امریکہ شامی جنگ کے آخری مرحلے میں  روس کےساتھ مقابلہ کررہا ہےتاکہ اس جنگ زدہ ملک پر اپنا ثرو رسوخ کو بڑھا سکے۔

استکباری دنیا صارفین۴۸۶ : // تفصیل

النشرہ نیوز کی تحلیل :

شامی جنگ کے آخری مرحلے میں امریکہ اس ملک پر اپنا اثر و رسوخ بڑھانے کیلئے روس کے ساتھ مقابلہ کررہا ہے

نیوزنور: لبنانی نیوز ویب سائٹ النشرہ نے  اپنی ایک تحلیلی رپورٹ میں شام کی موجودہ صورتحال کا جائزہ لیتےہوئےلکھا ہےکہ امریکہ شامی جنگ کے آخری مرحلے میں  روس کےساتھ مقابلہ کررہا ہےتاکہ اس جنگ زدہ ملک پر اپنا ثرو رسوخ کو بڑھا سکے۔

عالمی اردوخبررساں ادارے’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق لبنانی نیوز ویب سائٹ النشرہ نے  اپنی ایک تحلیلی رپورٹ میں شام کی موجودہ صورتحال کا جائزہ لیتےہوئےلکھا کہ امریکہ شامی جنگ کے آخری مرحلے میں  روس کےساتھ مقابلہ کررہا ہےتاکہ اس جنگ زدہ ملک پر اپنا ثرو رسوخ کو بڑھا سکے۔

ویب سائٹ نے لکھاہےکہ امریکہ  شام خاصکر اسکے شمالی اورمشرقی  حصوں میں اپنا اثرورسوخ بڑھا رہا ہے تاکہ اس ملک کے قدرتی وسائل کو لوٹنے کی راہ ہو۔

ویب سائٹ کے مطابق  امریکہ نے نام نہاد سیرین ڈیموکریٹک فورسز کو شمالی اورمشرقی شام میں مزید پیشرفت کیلئے عسکری امداد میں اضافہ کردیا ہے۔

ویب سائٹ نےلکھاہےکہ  امریکیوں کے خیال میں  شام کو محض  روس کے حوالے نہیں کیاجانا چاہئے اورواشنگٹن کو اس جنگ زدہ ملک  کے اقتصادی منصوبوں میں اپنا حصہ وصولنا چاہئے۔

انہوں نے لکھاکہ امریکی فورسز شام کے بہت سے علاقوں میں تعینات ہیں جو الطنف  سرحدی گذرگاہ تک محدود نہیں ہے اوریہ فوجی سیرین ڈیموکریٹک فورسز کو تربیت دیکر زیادہ سےزیادہ شامی علاقوں پر قابض ہونا چاہتے ہیں۔

دریں اثنا روس کی سرکاری نیوز ایجنسی روسیا الیوم کےمطابق اس ملک کے وزیر دفاع نے  ایک بیان میں کہاکہ اردن سے ملحق شامی سرحدوں کے قریب امریکہ کا الطنف فوجی اڈہ داعش دہشتگرد گروہ کے خلاف شامی فوج کی کاروائیوں میں رکاوٹ ہے۔

اپنے بیان میں انہوں نے کہاکہ شامی فوج صوبہ دیرا زور میں داعش کو نابود کرنے کیلئے جتنی پیش قدمی کرتی ہے اتنا ہی اسے الطنف میں موجود امریکی فوجی اڈے کی طرف سے  مسائل  و مشکلات کا سامنا کربا پڑتا ہے۔

انہوں نے کہاکہ الطنف فوجی اڈے کی موجودگی سے پیدا ہونے والی دوسری مشکل اس فوجی اڈے کے نزدیک ہی الرکبان کے علاقے میں واقعہ شامی پناہ گزینوں کے کیمپ کا واقعہ ہوناہے جہاں کم ازکم 60 ہزار  خواتین وبچے پناہ  لئے ہوئے ہیں اورامریکی فورسز الطنف اڈے کو شامی فوج کے حملوں سے بچانے کیلئے ان پناہ گزینوں کو انسانی ڈھال کے طورپر استعمال کررہے ہیں۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر