تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور:یمن کی وزارت صحت نے اعلان کیا ہے کہ  سعودی جارحیت کے سبب ہیضے میں مبتلا افراد کی تعداد آٹھ لاکھ سے زیادہ ہو گئی ہے جس میں اب تک دو ہزار افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔

نیوزنور:اسلامی جمہوریہ ایران کی تشخیص مصلحت نظام کونسل کے سیکریٹری نے کہا ہے کہ ایران میزائلی صلاحیتوں کے بارے میں کوئی مذاکرات نہیں کرے گا۔

نیوزنور:بحرین میں انسانی حقوق اور جمہوریت کے لئے صلح نامی ایک ادارے کے سربراہ نے کہا ہے کہ گذشتہ سات برسوں میں آل خلیفہ حکومت نے پندرہ ہزار بحرینی شہریوں کو گرفتار کر کے جیل میں قید کیا ہے۔

نیوزنور:فرانس کے صدر نے کہا ہے کہ ایٹمی سمجھوتے کو بچانے کے لئے یورپ اپنی تمام تر کوششیں بروئےکار لائے گا۔

نیوزنور: مسجد اقصیٰ کے خطیب نے فلسطینی قوم کے خلاف صہیونی ریاست کے مظالم کی شدید مذمت کرتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ القدس شہر کو صہیونی دشمن کی جانب سے منظم جارحیت کاسامنا ہےاس لئے یکجہتی، اتحاد اور اتفاق فلسطینی قوم کے پاس اپنے سلب شدہ حقوق کے حصول کے لیے ایک موثر ہتھیار ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
حماس کے نائب کے طور پر العاروی کا انتخاب اسرائیل کے لیے تشویش کا باعث

نیوزنور:اسرائیلی ذرائع ابلاغ کی  صالح العاروی کے حماس کے سیاسی دفتر کے نائب کے عنوان سے منتخب  ہونے پر مبنی رپورٹوں سے یہ معلوم ہوتا ہے کہ اسرائیل اس وجہ سے کافی پریشان ہے ۔

اسلامی بیداری صارفین۹۶۸ : // تفصیل

حماس کے نائب کے طور پر العاروی کا انتخاب اسرائیل کے لیے تشویش کا باعث

نیوزنور:اسرائیلی ذرائع ابلاغ کی  صالح العاروی کے حماس کے سیاسی دفتر کے نائب کے عنوان سے منتخب  ہونے پر مبنی رپورٹوں سے یہ معلوم ہوتا ہے کہ اسرائیل اس وجہ سے کافی پریشان ہے ۔

عالمی اردو خبررساں ادارے نیوزنور کی  رپورٹ کے مطابق صالح العاروی کا انتخاب حماس کے سیاسی دفتر کے سربراہ  اسماعیل ھنیئہ کے نائب کے طور پر اسرائیل کی پریشانی کا باعث بنا ہے اور اس حکومت کے ذرائع ابلاغ نے اپنی رپورٹوں میں اس چیز کو لکھا ہے ۔

روزنامہ بدیعوت آحارونوت نے الیئور لوی کے قلم سے ایک رپورٹ میں لکھا ہے : العاروی مغربی کنارے میں مسلحانہ کاروائیوں کا منصوبہ بنانے میں حماس کے دوسرے نمبر کے آدمی میں تبدیل ہو چکا ہے ، اس کا انتخاب ، حماس کی رہبری کے ڈھانچے میں تبدیلی کی تکمیل کے سلسلے میں غزہ میں یحیی السنوار کے حماس کے دفتر کے سربراہ کے طور پر انتخاب کیے جانے کے سلسلے کی کڑی ہے ۔

انہوں نے مزید لکھا ہے کہ العاروی کہ جس کی پیدائش مغربی کنارے میں ہوئی ہے اور وہ ۱۸ سال تک اسرائیل کے زندانوں میں رہ چکا ہے آسانی کے ساتھ عبری زبان میں بولتا ہے اور تیزی کے ساتھ اس نے حماس کی رہبری کی ٹیم میں جگہ بنا لی ہے ، اس کے انتخاب سے اسرائیل کو تشویش ہونی چاہیے ۔

این آر جی ویب سایٹ نے آساف غیبور کے حوالے سے اس بارے میں لکھا ہے : العاروی حماس کا مشہور ترین رکن ہے جس کا اپنا سیاسی طریقہء کار ہے اور اس کی ذمہ داری حماس کے اندر فوجی اور سیاسی تعاون پیدا کرنا ہے ؛ اسرائیل اس کو مغربی کنارے میں حماس  کی فوجی شاخ القسام برگیڈ کے دفتر کی رہبری اور منصوبہ بندی کا مسئول مانتا ہے کہ جس نے مالیت یا صفقۃ الاحرار کے نام سے معروف قیدیوں کے سال ۲۰۱۱ کے تبادلے کے سمجھوتے میں اہم کردار ادا کیا تھا ۔

غیبور نے آگے ان تمام فوجی محافل کے حوالے سے کہ جو قید کے زمانے میں العاروی کے ساتھ رہے ہیں لکھا ہے : العاروی ایک با ہوش انسان ہے  اور تمام معاملات میں اس کے نظریات حساس ہیں وہ ان لوگوں میں سے ہے کہ جو حماس کی فوجی شاخ کو تقویت پہنچانے کی وجہ سے ایران کا نزدیکی مدافع ہے ۔

ایک فوجی ماہر یو آف لیمور نے روز نامہ اسرائیل الیوم میں اعلان کیا ہے : العاروی کے انتخاب کا مطلب یہ ہے کہ حماس اب بھی مغربی کنارے پر غلبہ چاہتا ہے  اس لیے کہ اس کا مقصد پریکٹیکل  ہے ، العاروی با ہوش  اور سر سخت ہے اس کے انتخاب کا مطلب اسرائیل کے لیے درد سر کا جاری رہنا ہے ۔

لیمور نے مزید لکھا ہے :العاروی کے انتخاب کا مطلب یہ ہے کہ حماس کے سیاسی دفتر کے سربراہ اسماعیل ھنیئہ کا ارادہ یہ ہے کہ وہ غزہ کی پٹی میں رہے گا اور نئے نائب کے ساتھ مل کر حماس کے بین الاقوامی امور کی تکمیل  کے لیے کوشش  کرے گا ۔ یہ بعید ہے کہ العاروی اپنے فوجی رویے میں کوئی تبدیلی لائے گا جو کوئی اس سے اسرائیل میں قید کی مدت میں آشنا ہوا ہے وہ جانتا ہے کہ وہ ایک متدین اور انتہا پسند کمانڈر ہے جو اسرائیل کو اچھی طرح جانتا ہے ۔

فلسطین کے امور کے کارشناس حازی  سیمانٹف نے اسرائیل کے چینل نمبر ۱۰ کو بتایا : العاروی کا انتخاب اس مضمون میں ایک واضح پیغام ہے کہ صلح کے قدم اٹھانے کے باوجود ، حماس پہلے کی طرح اعتدال کی سمت نہیں جا رہی ہے ۔ حماس اسرائیل کو یہ پیغام دینا چاہتی ہے کہ خود مختار حکومت کے ساتھ موجودہ صلح کے باوجود اسرائیل کو بحر سے نہر تک فلسطین سے نکال باہر کرنے تک اس کی جنگ جاری رہے گی ۔

العاروی مغربی کنارے میں حماس کی فوجوی کاروائیوں  کی منصوبہ بندی کرتا ہے اور کہا جاتا ہے کہ وہ ایران اور حزب اللہ کے قریب ہے ۔   

 


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر