تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور:13 دسمبر/ نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے بین الاقوامی امور اور قوانین نے تہران میں مغربی ایشیا کی علاقائی سیکورٹی پر منعقدہ قومی سمینار کے موقع پر صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ ملکی دفاعی اور میزائل پروگرام پر مذاکرات کی ہرگز گنجائش نہیں ہے ۔

 نیوزنور:13 دسمبر/ اقوام متحدہ کے ایک رکن کا کہنا ہے کہ اس وقت یمن میں 8 ملین انسان سنگین قحط کا شکار ہیں

نیوزنور:13 دسمبر/عراقی حزب اللہ نے اعلان کیا ہے کہ فلسطینی علاقوں کوصیہونی قبضے سے آزاد کرانے کیلئے وہ غاصب  اسرائیل کےساتھ جنگ کو مکمل طورپر آمادہ ہے۔

نیوز نور:13 دسمبر/ مصر ی دارالفتویٰ نے اپنے ایک بیان میں خبردار کیا ہے  کہ قدس کے نام پر داعش جوانوں کو بھرتی کے لیے گمراہ کرسکتی ہے۔

نیوز نور:13 دسمبر/ فلسطین میں انسانی حقوق کے لئے سرگرم ذرائع کا کہنا ہے کہ پچھلے پانچ دنوں کے دوران حراست میں لئے جانے والے بیت المقدس کے باسیوں میں سے ایک تہائی حصہ کم عمر بچوں کا ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
عرب امور کے برطانوی ماہر:
شام میں مغربی نواز حکومت قائم کرنے کاامریکی منصوبہ خاک میں مل گیا ہے

نیوزنور: عرب امور کے ایک برطانوی ماہر نے  امریکہ کو  شامی تنازعے کو طولانے ہونے کا ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے کہاہےکہ واشنگٹن کا حتمی ہدف ومقصد  شام کو غیر مستحکم اوربشارالاسد حکومت کا خاتمہ ہے۔

استکباری دنیا صارفین۵۶۶ : // تفصیل

عرب امور کے برطانوی ماہر:

شام میں مغربی نواز حکومت قائم کرنے کاامریکی  منصوبہ  خاک میں مل گیا ہے

نیوزنور: عرب امور کے ایک برطانوی ماہر نے  امریکہ کو  شامی تنازعے کو طولانے ہونے کا ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے کہاہےکہ واشنگٹن کا حتمی ہدف ومقصد  شام کو غیر مستحکم اوربشارالاسد حکومت کا خاتمہ ہے۔

عالمی اردوخبررساں ادارے’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق پریس ٹی وی کے پروگرام دی ڈبیٹ میں ’’ایڈم گیری ‘‘نے امریکہ کو  شامی تنازعے کو طولانے ہونے کا ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے کہاہےکہ واشنگٹن کا حتمی ہدف ومقصد  شام کو غیر مستحکم اوربشارالاسد حکومت کا خاتمہ ہے۔

انہوں نے کہاکہ امریکی حکام شام کو تباہ اوراس کا وجود مٹانے پر تلے ہوئے ہیں اس لئے شامی تنازعے کے حل میں امریکہ کا کوئی کردار نہیں بنتا ہے۔

انہوں نے کہاکہ عرب دنیا خاصکر شام کی خودمختار حکومت کو خونخوار دہشتگردوں کے ذریعے غیر مستحکم کرنا امریکہ و پنٹا گن کی پالیسی رہی ہے۔

شام کو غیر مستحکم کرنے کے پیچھے امریکی محرکات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ  واشنگٹن  شام میں حزب اللہ اورایران کی فتوحات سے اس لئے سیخ  پا ہے کیونکہ دونوں نے اس اسٹریٹجک عرب ملک کو تقسیم کرنے کے امریکی منصوبے کا ناکام کردیا ہے۔

انہوں نے کہاکہ شام میں ایک کٹھ پتلی حکومت قائم کرنے کا امریکی منصوبہ ناکام ہوا ہے کیونکہ شام نے سعودی عرب ،امریکہ ،اسرائیل اورقطر کے حمایت یافتہ خونخوار دہشتگردوں کے خلاف  استقامت کا مظاہرہ کیا ہے۔

 اس  ڈبیٹ میں شریک امریکی تجزیہ کار برینٹ بوڈوسکائی نے اس خیال کہ امریکہ شام میں تکفیری دہشتگردوں کا مقابلہ نہیں کررہا ہے کو مسترد کرتے ہوئے تاکید کی کہ  صیہونی نواز ٹرمپ ان کے پیش رو باراک اوبامہ اورامریکی فوجی حکام سبھی داعش کو نابود کرنے کی کوشش  کررہے ہیں ۔

واضح رہےکہ شام کو سن 2011 سے امریکہ، سعودی عرب ، ترکی اور قطر کے حمایت یافتہ دہشتگرد گروہوں کی سرگرمیوں کا سامنا ہے جس کے نتیجے میں چار لاکھ ستر ہزار سے زائد شامی شہری مارے جاچکے ہیں اور دہشتگردی کے نتیجے میں کئی لاکھ افراد اپنے ملک میں بے گھر اور لاکھوں دیگر ممالک میں پناہ لینے پر مجبور ہوگئے ہیں۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر