تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور:13 دسمبر/ نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے بین الاقوامی امور اور قوانین نے تہران میں مغربی ایشیا کی علاقائی سیکورٹی پر منعقدہ قومی سمینار کے موقع پر صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ ملکی دفاعی اور میزائل پروگرام پر مذاکرات کی ہرگز گنجائش نہیں ہے ۔

 نیوزنور:13 دسمبر/ اقوام متحدہ کے ایک رکن کا کہنا ہے کہ اس وقت یمن میں 8 ملین انسان سنگین قحط کا شکار ہیں

نیوزنور:13 دسمبر/عراقی حزب اللہ نے اعلان کیا ہے کہ فلسطینی علاقوں کوصیہونی قبضے سے آزاد کرانے کیلئے وہ غاصب  اسرائیل کےساتھ جنگ کو مکمل طورپر آمادہ ہے۔

نیوز نور:13 دسمبر/ مصر ی دارالفتویٰ نے اپنے ایک بیان میں خبردار کیا ہے  کہ قدس کے نام پر داعش جوانوں کو بھرتی کے لیے گمراہ کرسکتی ہے۔

نیوز نور:13 دسمبر/ فلسطین میں انسانی حقوق کے لئے سرگرم ذرائع کا کہنا ہے کہ پچھلے پانچ دنوں کے دوران حراست میں لئے جانے والے بیت المقدس کے باسیوں میں سے ایک تہائی حصہ کم عمر بچوں کا ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
مشرق وسطیٰ امور کے روسی ماہر:
شاہ سلمان کے دورہ ماسکو کا اصلی ٹارگٹ ایران تھا

نیوزنور:مشرق وسطیٰ امور کے ایک روسی ماہر نے سعودی فرماں رواں شاہ سلمان کے حالیہ ماسکو دورے کےدوران تاکید کی ہے  کہ شاہ سلمان کے اس دورے کا اصل مقصد تہران وماسکو کے درمیان تعلقات کو محدود کرنا ہے۔

استکباری دنیا صارفین۲۶۷ : // تفصیل

مشرق وسطیٰ امور کے روسی ماہر:

شاہ سلمان کے دورہ ماسکو کا اصلی ٹارگٹ ایران تھا

نیوزنور:مشرق وسطیٰ امور کے ایک روسی ماہر نے  سعودی فرماں رواں شاہ سلمان کے حالیہ ماسکو دورے کےدوران تاکید کی  ہےکہ شاہ سلمان کے اس دورے کا اصل مقصد تہران وماسکو کے درمیان تعلقات کو محدود کرنا ہے۔

عالمی اردوخبررساں ادارے’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق روسی روزنامہ آرگیومنٹی فیکٹی کےساتھ انٹرویو میں مشرق وسطیٰ امور کے ماہر گریگوری  کوش‘‘نے سعودی فرماں رواں شاہ سلمان کے حالیہ ماسکو دورے کےدوران تاکید کی  ہےکہ شاہ سلمان کے اس دورے کا اصل مقصد تہران وماسکو کے درمیان تعلقات کو محدود کرنا ہے۔

سلمان بن عبدالعزیز کے حالیہ ماسکو دورے کے پیچھے محرکات کے بارے میں انہوں نے کہاکہ  بلاشبہ سعودی بادشاہ اورروسی حکام کے درمیان  مذاکرات خطے کے طاقتور ملک ایران  کے ارد گرد ہی گھومتے ر ہے۔

انہوں نے کہاکہ آل سعود حکومت اسلامی جمہوریہ ایران اورروس کے درمیان سفارتی تعلقات میں تخفیف کا کھیل کھیل رہی ہے کیونکہ ایران   علاقے میں اسکا ایک   اہم حریف ہے۔

انہوں نے کہاکہ حکومت ریاض نے روس کو قابو میں کرنے کیلئے ایک نئی حکمت عملی کا انتخاب کیا ہے۔

روسی ماہر نے کہاکہ ریاض روس کےساتھ اپنے اقتصادی تعلقات کو وسعت دینے اورایران کےساتھ اس کے سفارتی تعلقات کو کم کرنے کی کوشش کررہی ہے  ۔

انہوں نے کہاکہ اس وقت  سعودی حکام  روس کے ساتھ معاملات کو آگے بڑھانے کیلئے کوششیں کررہے ہیں   اورتیل وگیس کے میدان میں سعودی عرب کی سرمایہ کاری اور ماسکو کےساتھ دفاعی معاہدے سے روس کی معشیت کو فائدہ ہوگا۔

قابل کر ہےکہ سعودی عرب نے روس سے چار سو آئیرڈیفنس سسٹم خریدنے کا معاہدہ کیا ہے جن کی مالیت تین ارب ڈالر سے زائد ہے۔

صیہونی نواز شاہ سلمان نے اپنے روس کے دورے دوران کہاکہ ان معاہدوں سے دونوں ممالک کے درمیان معاشی تعاون مزید مضبوط اورمستحکم ہوگا اورسرمایہ کاری اورکاروبار میں آسانی پیدا ہوگی دونوں ممالک اس مقصد کو پورا کرنے کیلئے اپنی اپنی طاقتوں کا استعمال کریں گے جو سعودی عرب کے نام نہاد ویجن 2030 ء کا حصہ ہے۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر