تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور:یمن کی وزارت صحت نے اعلان کیا ہے کہ  سعودی جارحیت کے سبب ہیضے میں مبتلا افراد کی تعداد آٹھ لاکھ سے زیادہ ہو گئی ہے جس میں اب تک دو ہزار افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔

نیوزنور:اسلامی جمہوریہ ایران کی تشخیص مصلحت نظام کونسل کے سیکریٹری نے کہا ہے کہ ایران میزائلی صلاحیتوں کے بارے میں کوئی مذاکرات نہیں کرے گا۔

نیوزنور:بحرین میں انسانی حقوق اور جمہوریت کے لئے صلح نامی ایک ادارے کے سربراہ نے کہا ہے کہ گذشتہ سات برسوں میں آل خلیفہ حکومت نے پندرہ ہزار بحرینی شہریوں کو گرفتار کر کے جیل میں قید کیا ہے۔

نیوزنور:فرانس کے صدر نے کہا ہے کہ ایٹمی سمجھوتے کو بچانے کے لئے یورپ اپنی تمام تر کوششیں بروئےکار لائے گا۔

نیوزنور: مسجد اقصیٰ کے خطیب نے فلسطینی قوم کے خلاف صہیونی ریاست کے مظالم کی شدید مذمت کرتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ القدس شہر کو صہیونی دشمن کی جانب سے منظم جارحیت کاسامنا ہےاس لئے یکجہتی، اتحاد اور اتفاق فلسطینی قوم کے پاس اپنے سلب شدہ حقوق کے حصول کے لیے ایک موثر ہتھیار ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
یمن میں اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے :
جنگ کی وجہ سے یمن وبا جیسی مہلک بیماریوں کا شکارہے

نیوز نور : یمن میں اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے نے کہا ہے کہ جنگ کی وجہ سے یمن میں وبا سمیت مختلف قسم کی بیماریاں تیزی کے ساتھ پھیل رہی ہیں۔

استکباری دنیا صارفین۷۹۵ : // تفصیل

یمن میں اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے :

جنگ کی وجہ سے یمن وبا جیسی مہلک بیماریوں کا شکارہے

نیوز نور : یمن میں اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے نے کہا ہے کہ جنگ کی وجہ سے یمن میں وبا سمیت مختلف قسم کی بیماریاں تیزی کے ساتھ پھیل رہی ہیں۔

عالمی اردو خبر رساں ادارے ’’نیوز نور‘‘ کی رپورٹ کے مطابق یمن کے لئے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے خصوصی نمائندے ’’اسماعیل ولد الشیخ احمد‘‘ نے کہا کہ جنگ کی وجہ سے پورا ملک مختلف مہلک بیماریوں کا شکار ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ یمن میں انسانی بحران پیدا ہو رہا ہے اوریہاں پر فوری طور پر جنگ بندی کرکے انسانیت کے لئے کام کرنے کی ضرورت ہے۔

اسماعیل ولد الشیخ  نے کہا کہ میں سلامتی کونسل سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ  یمن میں جنگ بندی کے لئے اپنے اثر و رسوخ کا استعمال کرے۔

انہوں نے کہا کہ جنگ کی وجہ سے یمن میں دہشتگرد گروہ داعش کے منظم ہونے کے خطرات میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔

انہوں نے کہا  کہ 17 ملین سے زائد یمنی عوام کو خوراک کی قلت کا سامنا ہے۔

یاد رہے کہ آل سعود نے مارچ 2015ء میں اپنے اتحادی منصورہادی کی حکومت کو بحال کرنے اور یمن کی انقلابی تحریک انصاراللہ کو کچلنے کی غرض سے یمن پر اپنی جارحیت کا آغاز کیا تھا جو اب تک جاری ہے اوریمن پر سعودی بمباری میں ہر روز بڑی تعداد میں یمنی شہری مارے جا رہے ہیں جبکہ دوسری جانب قحط نے اس ملک کو اپنے لپیٹ میں لے رکھا ہے۔

واضح رہے کہ یمن پر سعودی عرب کے وحشیانہ جرائم کی عالمی سطح پر شدید مذمت کی جا رہی ہے لیکن حکومت  آل سعود عالمی برادری کے احتجاج کی پرواہ کئے بغیر اپنے حملے جاری رکھے ہوئے ہے اور سعودی اتحادی افواج  کے فضائی حملوں میں اس ملک کا بنیاد ڈھانچہ خاصکر اہم بندرگاہیں، اہم پل، طبعی مراکز، نجی و غیر نجی فیکٹریاں مکمل طور پر تباہ ہوگئی ہیں۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر