تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور22فروری/اسلامی تحریک مقاومت حماس کے ترجمان نےکہا ہے کہ سلامتی کونسل کے اجلاس میں نیکی ہیلی کے خطاب سے فلسطینی قوم کے تئیں ان کی دشمنی جھلک رہی تھی۔

نیوزنور22فروری/ایک صیہونی عہدے دار نے کہا ہے کہ امریکہ میں ڈونالڈ ٹرمپ کے صدر بننے کے بعد فلسطین میں اسرائیلی ریاست کے مظالم اور توسیع پسندانہ اقدامات کے ساتھ ساتھ بیرون ملک سے یہودیوں کی آمد میں بھی اضافہ ہوگیا ہے۔

نیوزنور22فروری/اقوام متحدہ میں تعینات روسی مندوب اقوام متحدہ میں ایران مخالف امریکی قرارداد کی کڑی الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اسے جھوٹ کا پلندہ قراردیا ہے ۔

نیوزنور22فروری/تحریک اُمت لبنان کے سیکرٹری جنرل نے کہا ہے کہ عراق کے تمام طبقات کے درمیان وحدت نے اس ملک کی تقسیم کی سازش کو ناکام بنا دیا ہے اور اس وقت جو کچھ بھی عالم اسلام اور عرب دنیا میں ہورہا ہے اسکا اصلی ہدف فلسطین کے مسئلے کو فراموش کروایا جانا ہے۔

نیوزنور22فروری/جماعت اسلامی پاکستان کے مزکزی امیر نے کہا ہے کہ معاشرے میں دین کی دوری کی وجہ سے ماں باپ، اساتذہ اور بڑوں کی عزت نہیں کی جاتی ہے معاشرے میں عدم برداشت کے رویہ کے خاتمے کیلئے علماء کرام، محراب و منبر سے اسلام کی صحیح تعلیمات کو عام کریں کیونکہ اسلام انسانیت کا درس دیتا ہے اور انسانی حرمت کے تقاضے بھی بڑے واضع ہیں اور دین کو صحیح معنوں میں اپنی زندگیوں کا نصب العین بنائے بغیر معاشرتی برائیوں کو کنٹرول نہیں کیا جا سکتا۔

  فهرست  
   
     
 
    
ایرانی سیاسی مبصر:
کردستان ریفرنڈم کے حوالے سے ایران کو ایک آزاد پالیسی اپنانی چاہئے

نیوزنور: اسلامی جمہوریہ ایران کے ایک سیاسی مبصر نے کاکہنا ہےکہ  انقرہ اورتہران کردستان ریفرنڈم کے حوالے سے ایک یکسان پالیسی  کا تعاقب نہیں کرسکتے  اورایران کو  اس حوالے سے  ایک آزاد پالیسی  اپنانے کی ضرورت ہے۔

استکباری دنیا صارفین۷۳۵ : // تفصیل

ایرانی سیاسی مبصر:

کردستان ریفرنڈم کے حوالے سے ایران کو ایک آزاد پالیسی اپنانی چاہئے

نیوزنور: اسلامی جمہوریہ ایران کے ایک سیاسی مبصر نے کاکہنا ہےکہ  انقرہ اورتہران کردستان ریفرنڈم کے حوالے سے ایک یکسان پالیسی  کا تعاقب نہیں کرسکتے  اورایران کو  اس حوالے سے  ایک آزاد پالیسی  اپنانے کی ضرورت ہے۔

عالمی اردوخبررساں ادارے’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق مقامی میڈیا کےساتھ انٹرویو میں ’’محمد مسجد ‘‘نےکہاکہ انقرہ اورتہران کردستان ریفرنڈم کے حوالے سے ایک یکسان پالیسی  کا تعاقب نہیں کرسکتے  اورایران کو  اس حوالے سے  ایک آزاد پالیسی  اپنانے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے  عراقی کردستان میں حالیہ کردستان  ریفرنڈم کے بارے میں کہاکہ اس ریفرنڈم کوایسے وقت میں انجام دیاگیا جب اس کے نتائج کسی بھی صورت میں علاقائی ممالک یورپ اوردنیا کو قبول نہیں ہیں۔

موصوف مبصر نے کہا کہ سویت یونین کے بکھرنے کے بعد بہت سی نئی ریاستوں کا وجود عمل میں آیا اوریوگوسلوایہ ان سے علحٰیدہ ہوگیا لیکن مشرق وسطیٰ کی ابھی کی صورتحال  اس زمانے سے مختلف ہے ۔

انہوں نے کہاکہ سویت بلاک کو بکھرنے کی غرض سے مغربی استعماری طاقتوں نے آزادی پسند  تحریکوں کی حمایت کی تاہم یہ صورتحال یوگوسلوایہ  میں مختلف تھی۔

اس سوال کے جواب میں کہ عراقی کردستان میں حالیہ ریفرنڈم کو کٹا لونیا ریفرنڈم سے موازانہ کیاجاسکتا ہے انہوں نے کہاکہ اس وقت عملی طورپر  یورپ میں کٹا لونیا اوراسکاٹ لینڈ میں آزادی کی تحریکیں فعال ہیں تاہم یورپی یونین کا کہنا ہےکہ  وہ اقلیتوں کے حقوق کے دفاع میں پرعزم ہیں لیکن  کسی بھی ملک کے صوبے کے یکطرفہ فیصلے کی مخالف ہے۔

انہوں نے کہاکہ اس حقیقت کے باوجود کہ یورپی یونین نے کٹولونیا کی آزادی پسند عوام پر  اسپین پولیس کےبدترین تشدد کے مذمت کی تاہم انہوں نے حالیہ ریفرنڈم کو  غیر قانونی قراردیا جو اسپانوی حکومت کی مرضی کے خلاف انجام پایا ۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر