تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور 19جنوری/ہیومن رائٹس واچ کے ایگزیکٹیو ڈائریکٹر نے انسانی حقوق کے حوالے سے امریکی صدر کے کرادار کو تباہ کن قرار دیتے ہوئے کہاہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ ایک ڈکٹیٹر ہیں اور سعودی عرب جیسی غیر جمہوری حکومت کی حمایت کرتے ہیں۔

نیوز نور 19جنوری/لبنانی مسلح افواج کے سربراہ نے کہا ہے کہ ہم اسرائیلی حملوں کا جواب دینے کے لیے تیار ہیں۔

نیوز نور 19جنوری/اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل نے کہا ہے کہ ایران کے جوہری معاہدے کو خطرے میں ڈالنے سے عالمی امن کے لئے مشکل پیدا ہوگی۔

نیوزنور19جنوری/ایک عرب روز نامے نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ سعودی عرب یمن پر مسلط کردہ جنگ کے دلدل میں بری طرح گرفتار ہوگيا ہے اور سعودی عرب کے لئے یمن پر مسلط کردہ جنگ سے نکلنے کا واحد راستہ انصار اللہ سے مذاکرات ہیں۔

نیوزنور19جنوری/اسلامی جمہوریہ ایران کے دارالحکومت تہران میں نماز جمعہ کے خطیب نے مسئلہ فلسطین اور یمن کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ دنیائے اسلام کو فلسطین اور یمن کے مظلوم عوام کی حمایت کے بارے میں اپنی شجاعت کا مظاہرہ کرنا چاہیے اور حق بات کہنے سے گھبرانا نہیں چاہیے۔

  فهرست  
   
     
 
    
پاتریک یوکانان امریکہ کے سابق عہدے داران منجملہ ریچارد نیکسون،جرالد فورد اور رونالد ریگان کے مشاور کا بیان؛
امریکہ کس کی حمایت کے سہارے ایران سے لڑنا چاہتا ہے؟

نیوزنور:اس سے پہلے کہ ڈونلڈ ٹرمپ  ایران کے خلاف کوئی اقدام کرتا ہے اسے   ریاست ہائے متحدہ ، مشرق وسطیٰ  اور اپنی حکومت کے بارے میں ممکنہ  نتائج  کے متعلق سوچ لینا چاہئے۔  خلیج فارس میں ایران کے ساتھ کسی بھی طرح کی جنگ تیل کی قیمت  میں اضافے کا سبب بنے گی  اسٹاک مارکٹ  کی قیمتوں میں گراوٹ آ جائے گی اور امریکہ اور اس کے یورپی اور ایشیائی اتحادیوں کے درمیان شدید اختلافات پیدا ہوں گے  اس کے علاوہ ایران کے ساتھ 300 ائیر بسوں اور بوئینگ کی فروخت کا معاہدہ بھی منسوخ ہو جائے گا۔

استکباری دنیا صارفین۳۵۰۹ : // تفصیل

  پاتریک یوکانان  امریکہ کے سابق عہدے داران منجملہ ریچارد نیکسون ، جرالد فورد اور رونالد ریگان کے مشاور کا بیان؛

امریکہ کس کی حمایت کے سہارے ایران سے لڑنا چاہتا ہے؟

نیوزنور:اس سے پہلے کہ ڈونلڈ ٹرمپ  ایران کے خلاف کوئی اقدام کرتا ہے اسے   ریاست ہائے متحدہ ، مشرق وسطیٰ  اور اپنی حکومت کے بارے میں ممکنہ  نتائج  کے متعلق سوچ لینا چاہئے۔  خلیج فارس میں ایران کے ساتھ کسی بھی طرح کی جنگ تیل کی قیمت  میں اضافے کا سبب بنے گی  اسٹاک مارکٹ  کی قیمتوں میں گراوٹ آ جائے گی اور امریکہ اور اس کے یورپی اور ایشیائی اتحادیوں کے درمیان شدید اختلافات پیدا ہوں گے  اس کے علاوہ ایران کے ساتھ 300 ائیر بسوں اور بوئینگ کی فروخت کا معاہدہ بھی منسوخ ہو جائے گا۔

ایران کے خلاف  حکومت ٹرمپ کی تہاجمی سیاست  اور  اس میں سعودی عرب کی پشتیبانی  تحلیلات اور تفسیرات کی ایک  طویل داستان پیش کرتی ہے۔ جیسا کہ   اکثر تحلیل گر اس بات پر متفق ہیں کہ  امریکہ اور سعودی عرب   ایران پر پابندیوں کی گرفت مضبوط تر کرنے  اور اس کے خلاف فوجی کاروائی کرنے کے در پے ہیں ۔

عالمی اردو خبررساں ادارے نیوزنور کی رپورٹ کے مطابق :  اس کے متعلق  ایک امریکی  قدامت پسند  سیاسی صاحب نظر ، کالم نگار اور سیاستدان  پاتریک یوکانان ( امریکہ کے سابق عہدے داران منجملہ ریچارد نیکسون ، جرالد فورد اور رونالد ریگان کے مشاور) نے   وبگاہ کریتور میں  کون اور کیوں ایران سے لڑنا چاہتا ہے؟ کے عنوان سے  ایران  اور مشرق وسطیٰ کے متعلق  امریکہ کی سیاست  پر تنقید کی۔

اس رپورٹ میں آیا ہے: کیا گذشتہ ہفتے واشنگٹن ڈی سی میں اقوام متحدہ  میں امریکی سفیر   نیکی ہیلی کی تقریر ایران کے خلاف جنگ کا مقدمہ تھی؟ ہیلی نے دعویٰ کیا ،  یمن کی جانب سے ریاض پر داغے جانے والے میزائیل ایرانی تھے،  تاہم اگر چہ یہ ایرانی میزائیل ہو سکتا ہے لیکن یہ ایران سے ترسیل نہیں ہوا ۔

دو سال سے  سعودی عرب کی جانب سے امریکی ساخت کے  میزائیلوں اور ہوائی جہازوں سے  حوثیوں پر کی جانے والی بمباری  کے جواب میں حوثیوں  نے ریاض کی جانب میزائیل داغا۔

اس بنا پر یہ ایک جائز جنگی اقدام تھا ۔ جیسا کہ اس بارے میں کوئی شواہد نہیں ملے کہ  حوثیوں نے  یہ میزائیل کہاں سے حاصل کئے  ہیں یہ سوال پیدا ہوتا ہے  کہ ایران کو مورد الزام ٹھہرانے میں ہیلی کا مقصد کیا ہے؟   کیا یہ ایک نئی جنگ عظیم کے آغاز کے لئے  امریکہ کی  تبلیغاتی مہم ہے؟ ایسا لگتا ہے کہ اس سوال کے بارے میں سوچنے کی کوئی خاص وجہ نہیں ہے۔

ھیلی نے دعویٰ کیا : مشرق وسطیٰ میں جہاں بھی دہشتگردی کے اثرات موجود ہیں اس میں ایران دخیل ہے۔  ھیلی کے دعوے کے بر خلاف  11 ستمبر کے دہشتگردانہ حملے کے اصلی عوامل سعودی سنی شہری تھے۔ داعش ،  نیجیریہ میں بوکو حرام اور سومالی میں الشباب سب سنی ہیں ۔ : اس بنا پر ایران ایک شیعہ اکثریت والا ملک ہے  لیکن  مشرق وسطیٰ کے اکثر دہشت گرد گروہ سنی ہیں نا کہ شیعہ۔

دوسرا سوال یہ  ہے کہ  مشرق وسطیٰ میں کون سی جنگ ایران نے شروع کی ہے؟

ہم نے عراق اور افغانستان میں جنگ کا آغاز کیا۔  نیٹو نے لیبیا میں جنگ کا آغاز کیا ۔   ریاست ہائے متحدہ  شام میں  دہشتگردوں کو مسلح کر کے  ایک وحشتناک داخلی جنگ کا باعث بنا۔  ان حالات میں دیکھنے میں آیا ہے کہ جس وقت   صدر بشار الاسد خاموش ہے  ایران اور روس کی مداخلت نے اسے بچا لیا۔

 تہران سے بغداد اور دمشق اور بیروت تک شیعوں کے اثر و رسوخ کے بارے میں سوال ہونا چاہئے کہ کون اس اثر و رسوخ کا باعث بنا؟

عراق ایک سنی العقیدہ  شخص صدام کی حاکمیت میں تھا؛   لیکن یہ امریکی تھے کہ جنہوں نے  اس ملک پر حملہ کر کے  اس ملک کی حکومت شیعوں کے حوالے کر دی۔

شام میں بھی  ریاست ہائے متحدہ اور اس کے اتحادیوں  کہ جن کا القاعدہ کے ساتھ بھی الحاق تھا نے بشار الاسد کو سرنگون کرنے کی کوشش کی اور اسی وجہ سے ایران نے بھی مداخلت کی اور ابھی تک کامیاب رہا۔

دوسری جانب ،  یہ اسرائیلی تھے کہ  1982 میں جنوب لبنان میں جن کے  غاصبانہ اقدامات  نے  حزب اللہ لبنان  کے وجود میں آنے کے  لئے زمینہ فراہم کیا۔

اس سے پہلے کہ ڈونلڈ ٹرمپ  ایران کے خلاف کوئی اقدام کرتا ہے اسے   ریاست ہائے متحدہ ، مشرق وسطیٰ  اور اپنی حکومت کے بارے میں ممکنہ  نتائج  کے متعلق سوچ لینا چاہئے۔  خلیج فارس میں ایران کے ساتھ کسی بھی طرح کی جنگ تیل کی قیمت  میں اضافے کا سبب بنے گی  اسٹاک مارکٹ  کی قیمتوں میں گراوٹ آ جائے گی اور امریکہ اور اس کے یورپی اور ایشیائی اتحادیوں کے درمیان شدید اختلافات پیدا ہوں گے  اس کے علاوہ ایران کے ساتھ 300 ائیر بسوں اور بوئینگ کی فروخت کا معاہدہ بھی منسوخ ہو جائے گا۔

اسی طرح  سونے پر سہاگا یہ ہے کہ،   حزب اللہ لبنان میں امریکہ کے اہداف کو ٹھیس پہنچا سکتی ہے۔   عراق میں حشد الشعبی امریکہ کو بھاری ٹھیس پہنچا ئے گی اور بحرین اور سعودی عرب کے شیعہ بھی امریکہ کے لئے خطرہ بنے ہوئے ہیں ۔

  اب ایران سے لڑنے کے لئے ہمارا سب سے بڑا عربی اتحادی کون ہو گا؟

  ایسا لگتا ہے کہ  ٹرمپ کے داماد جرارد کوشنر کے نئے دوست محمد بن سلمان  کہ جس نے فرانس کے ایک محل کو خریدنے کے لئے 500 میلیون ڈالر خرچ کر دئے   ایران سے لڑنے کے لئے تیار ہے۔ 

 


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر