تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور 19جنوری/ہیومن رائٹس واچ کے ایگزیکٹیو ڈائریکٹر نے انسانی حقوق کے حوالے سے امریکی صدر کے کرادار کو تباہ کن قرار دیتے ہوئے کہاہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ ایک ڈکٹیٹر ہیں اور سعودی عرب جیسی غیر جمہوری حکومت کی حمایت کرتے ہیں۔

نیوز نور 19جنوری/لبنانی مسلح افواج کے سربراہ نے کہا ہے کہ ہم اسرائیلی حملوں کا جواب دینے کے لیے تیار ہیں۔

نیوز نور 19جنوری/اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل نے کہا ہے کہ ایران کے جوہری معاہدے کو خطرے میں ڈالنے سے عالمی امن کے لئے مشکل پیدا ہوگی۔

نیوزنور19جنوری/ایک عرب روز نامے نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ سعودی عرب یمن پر مسلط کردہ جنگ کے دلدل میں بری طرح گرفتار ہوگيا ہے اور سعودی عرب کے لئے یمن پر مسلط کردہ جنگ سے نکلنے کا واحد راستہ انصار اللہ سے مذاکرات ہیں۔

نیوزنور19جنوری/اسلامی جمہوریہ ایران کے دارالحکومت تہران میں نماز جمعہ کے خطیب نے مسئلہ فلسطین اور یمن کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ دنیائے اسلام کو فلسطین اور یمن کے مظلوم عوام کی حمایت کے بارے میں اپنی شجاعت کا مظاہرہ کرنا چاہیے اور حق بات کہنے سے گھبرانا نہیں چاہیے۔

  فهرست  
   
     
 
    
شام کے ایک ماہر تجزیہ نگار کی حوزہ کے ساتھ گفتگو ؛
تکفیریوں کی شکست اسرائیل کی نابودی کا مقدمہ ہے

نیوزنور: ڈاکٹر جواد امین نے جو فوعہ اور کفریا کا ایک ماہر تجزیہ نگار ہے ، کہا : آج ہمارے شہروں فوعہ اور کفریا میں ہمارے حالات نفسیاتی اور معنوی لحاظ سے انتہائی خاص اور حساس ہیں اور ادلب کی آزادی کے لیے جنگ کے وقت کا آغاز ہو چکا ہے ۔ہم تمام تکفیریوں کو نابود کر دیں گے اور ان کامیابیوں کے سلسلے کو جاری رکھیں گے یہاں تک کہ اسرائیل کی نابودی کے مقصد تک پہنچ جائیں ۔

اسلامی بیداری صارفین۳۳۶۸ : // تفصیل

شام کے ایک ماہر تجزیہ نگار کی حوزہ کے ساتھ گفتگو ؛

تکفیریوں کی شکست اسرائیل کی نابودی کا مقدمہ ہے

نیوزنور: ڈاکٹر جواد امین نے جو فوعہ اور کفریا کا ایک ماہر تجزیہ نگار ہے ، کہا : آج ہمارے شہروں فوعہ اور کفریا میں ہمارے حالات نفسیاتی اور معنوی لحاظ سے انتہائی خاص اور حساس ہیں اور ادلب کی آزادی کے لیے جنگ کے وقت کا آغاز ہو چکا ہے ۔ہم تمام تکفیریوں کو نابود کر دیں گے اور ان کامیابیوں کے سلسلے کو جاری رکھیں گے یہاں تک کہ اسرائیل کی نابودی کے مقصد تک پہنچ جائیں ۔

عالمی اردو خبررساں ادارے نیوزنور کی رپورٹ کے مطابق داعش کی شکست اس علاقے میں مقاومتی تحریک کی بہت بڑی کامیابی شمار ہوتی ہے ، یہ کامیابی ایسی ہے کہ جس نے کئی سال سے محاصرے میں گھرے ہوئے فوعہ اور کفریا کے علاقوں پر اثر ڈالا ہے ۔اسی سلسلے میں ہم نے شام کے ایک ماہر تجزیہ نگار ڈاکٹر جواد امین سے جو فوعہ اور کفریا سے تعلق رکھتا ہے گفتگو کی ۔

فوعہ اور کفریا کے رہنے والے ڈاکٹر امین نے جو ماہر تجزیہ نگار ہیں علاقے میں داعش کی شکست ، اور اس بڑی کامیابی کے فوعہ اور کفریا کے رہنے والوں کے حالات پر  اثرات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے حوزہ کی بین الاقوامی سرویس کے ساتھ گفتگو کے دوران بتایا : علاقے کے حالات داعش کی شکست کے بعد مکمل طور پر بہت اچھے ہیں اور اس کا سہرا شام میں مقاومتی تحریک کے افراد ، ایران ، اور لبنانی ،عراقی ، پاکستانی اور افغانستانی مقاومتی گروہوں کے سر جاتا ہے ۔

انہوں نے آگے بتایا : حقیقت میں اس گٹھ بندھن نے اس خبیث ترین  اتحاد کے گروہوں کے خلاف کامیابی کو جو امریکہ ، اسرائیل اور خلیج فارس کے ملکوں کی حمایت سے چلتے ہیں ثابت کیا ہے ۔

شام کے اس ماہر تجزیہ نگار نے تصریح کی : خدا کا شکر ہے کہ ہمارے دشمن احمق ہیں  اور ہر جنگ میں وہ مستضعفین کی طرف حملہ کرتے تھے ، لیکن خدا ہماری مدد کرتا ہے اور ہمارے قدموں کو جما کر رکھتا ہے ۔ اور  ہم خدا وند تبارک و تعالی اور اہل بیت ع اور ہمارے ولی امر بزرگ رہبروں کے وعدے پر ایمان رکھتے ہیں ۔

ڈاکٹر امین نے یاد دلایا : آج شام ،عراق ،لبنان اور یمن میں ہماری کامیابیوں کا سلسلہ مکمل ہونے والا ہے اور کوئی ،ستمگر ، غاصب یا دہشت گرد ہمیں نہیں روک سکتا ، ہم امریکہ اور اسرائیل کو ذلیل کرنے اور شکست دینے  میں اکثر میدانوں میں کامیاب ہوئے ہیں ۔

امریکہ اور اس کے حلیفوں کی بڑے پیمانے پر حمایت کے باوجود داعش کی شکست ،

اس شامی ماہر تجزیہ نگار نے  یہ بیان کرتے ہوئے کہ  داعش نے ہر سطح پر روحانی ،معنوی ، مادی اور فکری نقصان پہنچایا ، مزید کہا : امریکہ اور اس کے ساتھی اس تصور کے ایجاد ہونے کا باعث بنے تھے کہ یہ تنظیمیں ناقابل شکست ہیں اور ان کو نابود نہیں کیا جا سکتا ، اس لیے کہ ان کی دنیا کے تمام ممالک کی طرف سے حمایت ہو رہی تھی ، جب کہ ہم اکیلے تھے لیکن ہم  مقاومت کے محور پر متحد تھے اور عزت دار تھے ،  ہم تمام تکفیریوں کو نابود کر کے رہیں گے اور ہم ان کامیابیوں کے سلسلے کو جاری رکھیں گے یہاں تک کہ اسرائیل کی نابودی تک پہنچ سکیں ، اور ہمارے مولا حضرت مہدی ع کے ظہور کی برکت سے تمام ہستی نورانی ہو جائے گی ، اور شہیدوں اور مجروحین کے خون کی برکت سے مجاہدین کے ہاتھوں تمام مستضعفین اور آزادی کے متوالوں کے لیے ایک نورانی سویرا طلوع ہو گا ۔

اس نے دشمنوں کی نابودی کے لیے مقاومت کے محاذ کی تیاری کے بارے میں کہا : صرف ہماری تیاری مکمل ہونا چاہیے اور کمزوریاں دور ہونی چاہییں ، اس لیے کہ ہمیں اسرائیل کی نابودی کے لیے تیار رہنا چاہیے ، ہمیں نئے کمانڈر یعنی فرزندان شہداء کو اچھی طرح تیار کرنا چاہیے ، اس لیے کہ شہید کا ایک فرزند کمان کرنے اور مدیریت کرنے کی عظیم طاقت رکھتا ہے ۔ اسی طرح ، یہ سال قرآنی سال ہے کہ جس میں ہمارے لیے خدا کے ، حضرت ابراہیم علیہ السلام ، حضرت یوسف علیہ السلام حضرت موسی علیہ السلام حضرت عیسی علیہ السلام اور حضرت محمد بن عبد اللہ صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم کے زمانے کے وعدے پورے ہوئے اور پتہ چلا کہ کیسے ان انبیاء علیہم السلام نے  خدا کی طرف خاص دعوت کا فریضہ انجام دیا ۔

ادلب میں جبہۃ النصرہ کا محاصرہ ،

فوعہ کے اس شہری نے اس امر پر زور دیتے ہوئے کہ یہ کامیابیاں جنگ کی مدیریت کے نتیجے میں بنیادی طور پر عراق اور شام کی طرف منتقل ہوئیں ، اپنی بات جاری رکھی : آج شام میں ہمارے لیے ایک اہم موضوع باقی بچا ہے اور وہ صوبہء ادلب اور کچھ دوسرے علاقوں میں جبہۃ النصرہ کی موجودگی ہے ، لیکن وہ محاصرے میں ہیں ۔      

 اس نے فوعہ اور کفریا کے حالات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا : آج ہمارے شہروں فوعہ اور کفریا میں ہمارے حالات نفسیاتی اور معنوی لحاظ سے انتہائی خاص اور حساس ہیں اور ادلب کی آزادی کے لیے جنگ کے وقت کا آغاز ہو چکا ہے ۔اور ہماری طاقت اور ہمارے افراد غیر معمولی طور زیادہ ہیں ۔ داعش کو شکست ہو چکی ہے اور وہ دم دبا کر بھاگ گئے ہیں ، اب یہ النصرہ والے کس کھیت کی مولی ہیں ، چاہے ان کی طاقت اور ان کے حامی داعش سے زیادہ بھی کیوں نہ ہوں وہ یقینا ہم سے شکست کھائیں گے یہ خدا کا ہم سے وعدہ ہے ۔

اس شامی ماہر تجزیہ نگار نے آخر میں بتایا : ادلب کی جنگ کئی طرف سے پوری طاقت کے ساتھ شروع ہو چکی ہے ، اور فوعہ اور کفریا جو سات سال سے محاصرے میں ہیں کہ جن میں سے چار سال مکمل محاصرے میں تھے آزاد ہو جائیں گے ۔ اور شامی فوج اور ان کے اتحادیوں کے سپاہیوں کے کاروان  فوعہ اور کفریا میں ہم تک پہنچیں گےاور ان بڑے افراد کو کہ جنہوں نے جہاد اور صبر میں استواری اور دلیری کا مظاہرہ کیا ، اپنی آغوش میں لیں گے ۔ 

 


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر