تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور21اپریل/لبنانی پارلیمنٹ کے اسپیکر اور مشہور تجزیہ کار نے اس بات پر زور دیا ہے کہ عربی ممالک کی اپنے پڑوسیوں کے ساتھ بات چیت بالخصوص اسلامی جمہوریہ ایران اور سعودی عرب کے درمیان مذاکرات وقت کی اہم ضرورت ہیں۔

نیوزنور21اپریل/شیخ الازهر مصر نے تاریخ اسلام کا جائزہ لیتے ہوئے کہا ہےکہ قدس اسلامی ـ عربی سرزمین ہے اور ہمیشہ اسلامی سرزمین  کے طور پرباقی رہے گی۔

نیوزنور21اپریل/سرزمین عراق کےایک معروف عالم دین نے کہا ہےکہ عرب لیگ میں فلسطین کے دفاع اور وہاں کے موجودہ حالات کو بدلنے کی توانائی موجود نہیں ہے ۔

نیوزنور21اپریل/حزب الله لبنان کی ایگزیٹو کونسل کے نائب صدر نے عرب ممالک کی فوج کو شام میں داخل ہونے کے حوالہ سے کئے جانے والے ہرقسم کے فیصلہ کے سلسلے میں منتبہ کرتے ہوئے اسے ایک قسم کا تجاوز قرار دیا ہے ۔

نیوزنور21اپریل/بحرین کی سکیورٹی فورسز نے اپنے تازہ ترین اقدام میں بحرین کے روحانی رہنماء کے گھر کے اطراف میں خاردار تاروں کی باڑ لگا دی ہے۔

  فهرست  
   
     
 
    
پاکستانی تھنک ٹینک:
پاکستان داعش کی محفوظ پناہ گا میں تبدیل ہورہاہے

نیوزنور08جنوری/ایک پاکستانی تھنک ٹینک نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ پاکستان میں داعش کی موجودگی کے واضح شواہد موجود ہیں اور داعش  نامی  وحشی گروہ پاکستان میں تیزی سے پھیل رہا ہے۔

استکباری دنیا صارفین۱۳۱ : // تفصیل

پاکستانی تھنک ٹینک:

پاکستان داعش کی محفوظ پناہ گا میں تبدیل ہورہاہے

نیوزنور08جنوری/ایک پاکستانی تھنک ٹینک نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ پاکستان میں داعش کی موجودگی کے واضح شواہد موجود ہیں اور داعش  نامی  وحشی گروہ پاکستان میں تیزی سے پھیل رہا ہے۔

عالمی اردوخبررساں ادارے ’’نیوز نور‘‘کی رپورٹ کے مطابق پاکستانی تھنک ٹینک’’ انسٹیٹیو ٹ آف پیس اسٹڈیز‘‘ نے اپنی ایک تازہ رپورٹ میں کہا کہ پاکستان میں داعش کی موجودگی کے واضح شواہد موجود ہیں اور داعش پاکستان میں تیزی سے پھیل رہی ہےاور اس وجہ سے پاکستان داعش کی محفوظ پناہ گاہ میں تبدیل ہورہا ہے ۔

رپورٹ کے مطابق پاکستان کے مختلف حصوں میں داعش کی طرف سے سال 2017کے دوران چھ مختلف حملوں میں 153افراد ہلاک ہوئے۔

پاکستان انسٹیٹیوٹ آف پیس سٹڈیزنامی تھنک ٹینک کی طرف سے جاری سالانہ سکیورٹی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سال 2017میں پاکستان میں دہشتگردی کے کل 370واقعات رونما ہوئے اور ان واقعات میں 815 بے گناہ افراد لقمہ اجل بنے۔

رپورٹ کے مطابق بلوچستان اور فاٹا و کرم ایجنسی دہشتگردی کے واقعات کے حوالے سے حساس ترین علاقے رہےاگرچہ  سال 2017 میں دہشتگردی کے واقعات 2016کے مقابلے میں 16فیصد کم ہوئے ۔

پیپس کی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ سال  2017میں وہابی دہشتگرد اور  کالعدم تحریک طالبان پاکستان ، جماعت الاحرار اور ان جیسے مقاصدرکھنے والے گروہوں نے دہشتگردی کے 58فیصد حملوں کی ذمہ داری قبول کی جبکہ 37فیصد حملے قوم پرستوں اور 5فیصد فرقہ وارانہ دہشتگردوں نے کیے۔

رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ ملکی سطح پر نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد ابہام کا شکار رہا ہے اور داعش دہشتگرد گروہ پاکستا ن میں تیزی سے پھیل رہا ہے۔

رپورٹ میں مزید کہا گیاہے کہ ملک میں قائم وہابی مدارس دہشتگردی کے فروغ کا اصلی مراکز ہیں اور ملا عبدالعزیز جیسے افراد داعش کی بھر پور حمایت جاری رکھے ہوئے ہیں ۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر