تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور 19جنوری/ہیومن رائٹس واچ کے ایگزیکٹیو ڈائریکٹر نے انسانی حقوق کے حوالے سے امریکی صدر کے کرادار کو تباہ کن قرار دیتے ہوئے کہاہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ ایک ڈکٹیٹر ہیں اور سعودی عرب جیسی غیر جمہوری حکومت کی حمایت کرتے ہیں۔

نیوز نور 19جنوری/لبنانی مسلح افواج کے سربراہ نے کہا ہے کہ ہم اسرائیلی حملوں کا جواب دینے کے لیے تیار ہیں۔

نیوز نور 19جنوری/اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل نے کہا ہے کہ ایران کے جوہری معاہدے کو خطرے میں ڈالنے سے عالمی امن کے لئے مشکل پیدا ہوگی۔

نیوزنور19جنوری/ایک عرب روز نامے نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ سعودی عرب یمن پر مسلط کردہ جنگ کے دلدل میں بری طرح گرفتار ہوگيا ہے اور سعودی عرب کے لئے یمن پر مسلط کردہ جنگ سے نکلنے کا واحد راستہ انصار اللہ سے مذاکرات ہیں۔

نیوزنور19جنوری/اسلامی جمہوریہ ایران کے دارالحکومت تہران میں نماز جمعہ کے خطیب نے مسئلہ فلسطین اور یمن کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ دنیائے اسلام کو فلسطین اور یمن کے مظلوم عوام کی حمایت کے بارے میں اپنی شجاعت کا مظاہرہ کرنا چاہیے اور حق بات کہنے سے گھبرانا نہیں چاہیے۔

  فهرست  
   
     
 
    
سعودی عرب میں آل سعود کے خلاف عوامی تحریک نے اپنی موجودیت کا اعلان اور اپنے مقاصد کو کیا بیان

 نیوزنور: سعودیہ مخالفین  "کرامہ "نامی تحریک کے اعلان کرنے کیلئے تیار ہو رہے ہیں؛ایسی تحریک جو سعودی عرب میں اصلاحات کی حمایت کرے گي ساتھ ہی لبنان اور فلسطین میں مقاومتی تحریک کے بھی حمایتی رہے گي۔

اسلامی بیداری صارفین۱۸۴۸ : // تفصیل

سعودی عرب میں آل سعود کے خلاف عوامی تحریک نے اپنی موجودیت کا اعلان اور اپنے مقاصد کو کیا بیان

 نیوزنور: سعودیہ مخالفین  "کرامہ "نامی تحریک کے اعلان کرنے کیلئے تیار ہو رہے ہیں؛ایسی تحریک جو سعودی عرب میں اصلاحات کی حمایت کرے گي ساتھ ہی لبنان اور فلسطین میں مقاومتی تحریک کے بھی حمایتی رہے گي۔

عالمی اردو خبررساں ادارے نیوزنور کی رپورٹ کے مطابق عربی نیوزپورٹل "العہد" نے  "معن بن علی الدوویش الجربا" کی سربراہی میں سعودیہ مخالف تحریک کے مقاصد کا نسخہ جاری کیا ہے۔

یہ تحریک سعودی عرب میں اصلاحات  اور اس ملک میں حقوق شہروندی کے حصول پر زور دیتی ہے نیز اسرائیل کے خلاف لبنانی اور فلسطینی مقاومتی تحریکوں کی بھر پور حمایت  کیلئے تاکید کرتی ہے۔

تحریک کا تعارف:

کرامہ سعودی عرب میں ملی حقوق حاصل کرنے کیلئے عوامی اصلاحاتی تحریک ہے۔

مقاصد:

٭٭ تمام باشندگان کیلئے بلا تفریق مذہب ، مسلک ،مشرب،نسل  و علاقہ؛انسانی اقدار، انصاف،مساوات  اور حقوق انسانی  یقینی بنانا۔

٭٭    مسالمت آمیز تبدیلی اور جایز حقوق کے حصول کیلئے تمام قانونی طریقہ کار کہ جن کے ذریعہ   اقوام متحدہ  اور آزاد اقوام  اپنے حقوق حاصل کرنے کیلئے بروی کار لاتے ہیں کو بروی کار لانا۔

٭٭تحریک کرامہ کا ماننا ہے کہ مدنی جمہوری نظام بہترین ممکن شکل ہے ۔

٭٭ ہم سیاسی جماعتوں  اور مجلس شورا کی تشکیل کیلئے  اجازت چاہتے ہیں،حکومت براہ راست خود عوام کی طرف تشکیل پانی چاہئے(جمہوری) نہ کہ پادشاہی خاندان سے(پادشاہی)۔

تحریک کرامہ کے اسلامی اور قومی مقاصد؛

٭٭ خطے میں عربی اور اسلامی مقاومتی منصوبوں کی حمایت ، اسلامی اور عربی وحدت کی حمایت اور عربی وطن میں اجتماعی انصاف اور فکری آزادی اور انسانی حقوق کی ضمانت۔

٭٭ عالمی صہیونیت کا مقابلہ اور مقابلہ کرنے والوں کی حمایت۔

٭٭ اسلامی ، عیسائی اور دیگر ادیان کی اعتدالی فکر کی تشہیر کیلئے کام کرنا۔

   ٭٭ مذھبی نسل پرستی اور فرقہ پرستی کا مقابلہ کرنے کیلئے رواداری اور مشترک زندگی گزارنے کی ثقافت کو فروغ دینا۔

تحریک کی ماہیت :

٭٭ کرامہ تحریک عوامی اور عربی تحریک اور سیاسی نہیں ہے۔

٭٭ یہ تحریک جمہوری تفکر پر قائم ہوئی ہے ۔

٭٭ کرامہ ثقافتی ، اجتماعی اور مدنی تحریک ہے عسکری نہیں۔

تحریک کی کارکردگی:

٭٭٭ کرامہ مسئلہ فلسطین اور قدس شریف کو اپنا بنیادی اور پہلا مسئلہ سمجھتی ہے۔

٭٭٭ جغرافیایی وحدت کی حفاظت اور عربی ممالک کی اقتصادی اور اجتماعی سلامتی پر تاکید۔

٭٭٭ سماج میں خواتین کے کردار پر تاکید نیز بچوں کے حقوق اور ان کی تربیت۔

٭٭٭ الازہر، الزیتونیہ اور قیروان جیسے سنی اعتدالی دارالعلوم مدارس کی بازگشت ۔ بڑے سنی دارالعلوم کا  نجف اشرف اور قم المقدس میں دائر  شیعوں کے بڑے حوزہ علمیہ کے ساتھ تعاون و اتحاد۔

٭٭٭ کرامہ تحریک ترکی کو اپنا برادر ملک اور عرب دنیا کے لئے  یورپ کا دروازہ سمجھتی ہے  اور اس ملک کے ساتھ تعاون کا استقبال کرتی ہے۔

٭٭٭ کرامہ تحریک جمہوری اسلامی ایران کو اپنا برادر ملک اور عرب دنیا کے لئے  مشرق زمین کا دروازہ  اور غاصب صہیونی حکومت کے خلاف مقاومت کا حقیقی حامی سمجھتی ہے اور اس ملک کے ساتھ تعاون کا استقبال کرتی ہے۔

٭٭٭ کرامہ تحریک اسی طرح مصر، عراق، یمن ، شام، مغرب، روس ، چین اور برکس ممالک کے ساتھ تعاون کا استقبال کرتی ہے اور انہیں بڑے اہم سمجھتی ہے۔

٭٭٭ تحریک کرامہ کا ماننا ہے کہ مقاومت کے فکری، ثقافتی ، اجتماعی، سیاسی، عسکری جیسے کئی قسمیں  ہیں اور ان سب کا استقبال کرتی ہے ۔ ہمارا ماننا ہے کہ لبنان اور فلسطین میں مقاومت تحریک  شریف وطنی تحریکیں ہیں کہ  جو امت کی مدد کررہی ہیں اور  صہیونیت کی ہژمنی کو توڑتی ہے۔

٭٭٭ تحریک کرامہ حاشیہ خلیج فارس ممالک اور جزیرہ العرب کو امت کا میراث سمجھتی ہے  اور انہیں مقاومتی محور میں ضم ہو کر امریکہ سے تعاون ختم کرنے کی دعوت دیتی ہے ۔ ہمارا ماننا ہے کہ ان ممالک میں امریکی فوجی ٹھکانے عربی امت اور ہمسایہ اسلامی ممالک کو  نا امن بنانے کا منبع ہیں۔

٭٭٭ تحریک کرامہ کا ماننا ہے کہ غاصب صہیونی حکومت کے خلاف بڑی جنگ لڑنے کیلئے اردن، سرزمین موعود ہے اور اس  ملک کو امریکہ کے ساتھ تعاون ختم کرنے کی دعوت دیتی ہے۔

"معن بن علی الدوویش الجربا" تحریک کرامہ کے بانی سکریٹری جنرل ہیں۔

۔۔


نظرات داده شده
محمد حسین
آل سعود ہی اسلام کا اندرونی دشمن ہے اس لے جلد از جلد اس خبیث کو جڑسے اکھاڑِرینا بے حد ضروری اورواجب ہے
آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر