تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور20فروری/اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی برائے فلسطین نے فلسطینی علاقوں میں صہیونی ریاست کے اقدامات کو بین الاقوامی قوانین کی صریح خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے  کہا ہے کہ فلسطینی علاقوں پر اسرائیلی قبضہ غاصبانہ ہے۔

نیوزنور20فروری/اقوام متحدہ تعئنات اٹلی کے مندوب نے ایران جوہری معاہدے کے تحفظ پر زور دیتے ہوئے اسے عالم امن و سلامتی کے لئے مضبوط پلر قرار دیا ہے۔

نیوزنور20فروری/روس کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ شام میں اسلامی جمہوریہ ایران کی موجودگی قانون اور شامی حکومت کی باضابطہ درخواست کے مطابق ہے۔

نیوزنور20فروری/فلسطینی عسکری تنظیم اسلامی جہاد کے مرکزی رہنمانے امریکہ کی مشرق وسطیٰ کے حوالے سے سازشوں کو کڑی تنقید کا نشانہ بنا تے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ فلسطین سمیت پورے خطے کو ٹکڑوں میں تقسیم کرنا چاہتا ہے۔

نیوزنور20فروری/ایک فلسطینی تجزیہ نگار نےکہا ہے کہ حال ہی میں مسجد اقصیٰ پر دھاوا بولنے والے یہودی آباد کاروں نے ایک نہتے فلسطینی نوجوان پرمصطفیٰ المغربی کو قاتلانہ حملہ کرکے اسے شدید زخمی کردیا۔

  فهرست  
   
     
 
    
سید حسین موسویان:
ایران پر دباؤ بڑھانے کی ٹرمپ کی حکمت عملی ناکام ہوگی

نیوزنور10فروری/ایران کے سابق جوہری مذاکرات کار نے کہا ہے کہ ڈونالڈ ٹرمپ کی جانب سے ایران پر دباؤ بڑھانے کی حکمت عملی سے کوئی نتیجہ نہیں نکلے گا بلکہ اس سے خطرناک کشیدگی میں مزید اضافہ ہوگا۔

استکباری دنیا صارفین۱۰۱ : // تفصیل

سید حسین موسویان:

ایران پر دباؤ بڑھانے کی ٹرمپ کی حکمت عملی ناکام ہوگی

نیوزنور10فروری/ایران کے سابق جوہری مذاکرات کار نے کہا ہے کہ ڈونالڈ ٹرمپ کی جانب سے ایران پر دباؤ بڑھانے کی حکمت عملی سے کوئی نتیجہ نہیں نکلے گا بلکہ اس سے خطرناک کشیدگی میں مزید اضافہ ہوگا۔

عالمی اردو خبررساں ادارے’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے معروف تجزیہ کار اورسابق جوہری مذاکرات کار ’’حسین موسویان‘‘نےامریکی جریدے نیشنل انٹرسٹ میں شائع ہونے والے اپنے مضمون میں کہاہے کہ ہ ڈونالڈ ٹرمپ کی جانب سے ایران پر دباؤ بڑھانے کی حکمت عملی سے کوئی نتیجہ نہیں نکلے گا بلکہ اس سے خطرناک کشیدگی میں مزید اضافہ ہوگا۔۔

مضمون میں کہا گیا ہے کہ در حقیقت ڈونالڈ ٹرمپ کی حالیہ پالیسیوں سے ایران کے بین الاقوامی اقتصادی شعبوں کے ساتھ تعاون متاثر ہوا ہے لہذا اگر یورپی ممالک جوہری معاہدے کو برقرار رکھنا چاہتے ہیں تو ان کو چاہئے کہ امریکہ کو ایران کے خلاف مشتعل کرنے کے بجائے ایران کے لئے مثبت فضا  فراہم کریں۔

ایرانی پروفیسر کےمجمون کے مطابق ایران اپنے وعدوں پر قائم ہے مگر اسے اقتصادی ثمرات سے محروم کرنا موت کے مترادف ہے اور یہ وہی منصوبہ بندی جسے ڈونالڈ ٹرمپ شروع سے ہی کام کرتے آرہے ہیں ۔

انہوں نےلکھا  کہ ایران کے خلاف دباؤ بڑھانے کی پالیسی کے خطرناک نتائج کو سمجھنے کے لئے ایران کے ساتھ جوہری مذاکرات کی تاریخ کو ایک بار پھر پڑھنا مفید ہوگا کیونکہ  جوہری مذاکرات سے مثبت سابق حاصل ہوتے ہیں جس سے یہ بات ظاہر ہوتی ہے کہ ایران کے ساتھ تعلقات کی بحالی سے فائدہ ملے گا۔

انہوں نے لکھاکہ ڈونالڈ ٹرمپ سمجھتا ہے کہ امریکہ دباؤ بڑھانے کی پالیسی کے ذریعے اپنے طویل مدت مقاصد کو حاصل کرنے کے علاوہ جوہری معاہدے میں تبدیلی لاسکتا ہے جبکہ ایسے لائحہ عمل سے خطرناک کشیدگی میں اضافے کے سوا کچھ نہیں ملے گا۔

موصوف پروفیسر نے اپنے مضمون میں لکھا ہے کہ سابق امریکی صدور جارج بش اور باراک اوباما کے دور میں ایران کے خلاف دباؤ اور پابندیوں کی پالیسی کا استعمال کیا گیا مگر پابندیوں کے باوجود ایران نے اپنے جوہری پروگرام کو فروغ دیا لہذا ماضی سے سبق لینا چاہئے اور ٹرمپ کی جانب سے ایران کے میزائل پروگرام اور علاقائی امور پر دباؤ ڈالنے کا برعکس نتیجہ نکلے گا۔

انہوں نےلکھا کہ ایران مخالف دباو سے بحران شدید ہوگا کیونکہ ایران اپنے قومی مفادات کے حصول کے لئے ہاتھ پر ہاتھ دھر کے نہیں بیٹھے گا۔

حسین موسویان کے مضمون کے مطابق اگر ایران مخالف پابندیوں میں اضافہ ہوا تو ایران کے عسکری کمانڈروں کے مطابق ایران اپنی میزائل صلاحیت میں اضافہ کرے گا اور اس کے ساتھ مغربی دباؤکے جواب میں خطے میں مغرب مخالف اتحادی فورسز کو مزید مضبوط کیا جائے گا۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر