تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوزنور22فروری/اسلامی تحریک مقاومت حماس کے ترجمان نےکہا ہے کہ سلامتی کونسل کے اجلاس میں نیکی ہیلی کے خطاب سے فلسطینی قوم کے تئیں ان کی دشمنی جھلک رہی تھی۔

نیوزنور22فروری/ایک صیہونی عہدے دار نے کہا ہے کہ امریکہ میں ڈونالڈ ٹرمپ کے صدر بننے کے بعد فلسطین میں اسرائیلی ریاست کے مظالم اور توسیع پسندانہ اقدامات کے ساتھ ساتھ بیرون ملک سے یہودیوں کی آمد میں بھی اضافہ ہوگیا ہے۔

نیوزنور22فروری/اقوام متحدہ میں تعینات روسی مندوب اقوام متحدہ میں ایران مخالف امریکی قرارداد کی کڑی الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اسے جھوٹ کا پلندہ قراردیا ہے ۔

نیوزنور22فروری/تحریک اُمت لبنان کے سیکرٹری جنرل نے کہا ہے کہ عراق کے تمام طبقات کے درمیان وحدت نے اس ملک کی تقسیم کی سازش کو ناکام بنا دیا ہے اور اس وقت جو کچھ بھی عالم اسلام اور عرب دنیا میں ہورہا ہے اسکا اصلی ہدف فلسطین کے مسئلے کو فراموش کروایا جانا ہے۔

نیوزنور22فروری/جماعت اسلامی پاکستان کے مزکزی امیر نے کہا ہے کہ معاشرے میں دین کی دوری کی وجہ سے ماں باپ، اساتذہ اور بڑوں کی عزت نہیں کی جاتی ہے معاشرے میں عدم برداشت کے رویہ کے خاتمے کیلئے علماء کرام، محراب و منبر سے اسلام کی صحیح تعلیمات کو عام کریں کیونکہ اسلام انسانیت کا درس دیتا ہے اور انسانی حرمت کے تقاضے بھی بڑے واضع ہیں اور دین کو صحیح معنوں میں اپنی زندگیوں کا نصب العین بنائے بغیر معاشرتی برائیوں کو کنٹرول نہیں کیا جا سکتا۔

  فهرست  
   
     
 
    
ترک وزارت خارجہ:
حماس کو فوجی اور معاشی امداد کا اسرائیلی دعویٰ جھوٹ کا پلندہ ہے

نیوزنور14فروری/ ترک وزارت خارجہ نے اسرائیل کی طرف سے اسلامی تحریک مقاومت حماس کی معاشی اور دفاعی امداد فراہم کرنے کا الزام مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ صہیونی ریاست اپنے جرائم پر پردہ ڈالنے کے لیے ترکی پر الزام تراشی کررہی ہے۔

استکباری دنیا صارفین۸۴ : // تفصیل

ترک وزارت خارجہ:

حماس کو فوجی اور معاشی امداد کا اسرائیلی دعویٰ جھوٹ کا پلندہ ہے

نیوزنور14فروری/ ترک وزارت خارجہ نے اسرائیل کی طرف سے اسلامی تحریک مقاومت حماس کی معاشی اور دفاعی امداد فراہم کرنے کا الزام مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ صہیونی ریاست اپنے جرائم پر پردہ ڈالنے کے لیے ترکی پر الزام تراشی کررہی ہے۔

عالمی اردو خبررساں ادارے’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق ترک وزارت خارجہ کی طرف سے جاری کئے گئے ایک بیان میں واضح کیا گیا ہے کہ ترکی حماس کو فلسطینی قوم کی نمائندہ تنظیم سمجھتا ہے مگرحماس کوفوجی اور معاشی امداد فراہم کرنے کا الزام قطعا بے بنیاد اور جھوٹ کا  پلندہ ہے۔

بیان میں ایک ترک باشندے جمیل تکلی کو 26 دن تک حراست میں رکھنے اور اس کے بعد اس کی بے دخلی کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ صہیونی ریاست اپنے جرائم پر پردہ ڈالنے کے لیے ترکی پر حماس کی پشت پناہی کا الزام عاید کررہی ہے۔

قابل ذکر ہے  کہ اسرائیلی حکومت نے ترکی پر الزام لگایا ہے کہ وہ فلسطین کی جماعت حماس کو فوجی مدد فراہم کرنے کی کوشش کررہی ہے اسرائیل کی جانب سے یہ الزام ایک ترک شہری کی حراست اور بے دخلی کے بعد سامنے آیااسرائیل کی داخلہ سیکورٹی کی ذمہ دار شن بیت انٹیلی جنس ایجنسی کے مطابق ترکی میں حماس کی معاشی اور فوجی سرگرمیوں کے حوالے سے ترک حکام نے نظریں پھیر رکھی ہیں اور کئی مواقع پر ان سرگرمیوں کی سرپرستی بھی کی جاتی ہےشن بیت نے یکم جنوری کو ترک باشندے سیمل تکیلی کو حماس کی مدد کے الزام میں گرفتار کرکے بے دخل کردیا تھا ترک باشندے کے ساتھ عرب نژاد دھرم جبران کو بھی حراست میں لیا گیا تھا جس پر مقدمہ چلایا جائے گا۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر