تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور 23 اپریل/ بحرین کے ایک ممتاز شیعہ عالم دین نے اس بات کےساتھ کہ آل خلیفہ  رژیم کےسامنے فلسطینی کاز کی کوئی اہمیت نہیں ہے کہا ہے کہ بحرینی عوام  اپنے تمام جائز مطالبات پورے ہونے تک اپنی تحریک جاری رکھیں گے۔

نیوزنور23اپریل/روسی وزارت خارجہ کی ترجمان نے کہا ہے کہ مغربی ممالک شام کے شہر دوما میں کیمیائی حملے سے متعلق حقائق میں تحریف کر رہے ہیں۔

نیوزنور23اپریل/ٹوئٹر پرسعودی عرب کے  سرگرم  اور شاہی خاندان کے قریبی کارکن نےسعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں شاہی محل میں کل رات ہونے والی فائرنگ کی اصل حقیقت سامنے لاتے ہوئے کہا ہے کہ فائرنگ کے واقعہ میں آل سعود کے بعض اعلٰی شہزادے ملوث ہیں ڈرون کو گرانے کا واقعہ سعودی حکومت کا ڈرامہ ہے فائرنگ کے واقعہ کے بعد سعودی بادشاہ اور ولیعہد شاہی محل سے فرار ہوگئے تھے۔

نیوزنور23اپریل/اسلامی مقاومتی محورحزب اللہ لبنان کے سربراہ نے کہا ہےکہ اسرائيل کو لبنانیوں کے خلاف جارحیت سے روکنا ہمارا سب سے بڑا ہدف ہے ۔

نیوزنور23اپریل/مجلس وحدت مسلمین پاکستان سندھ کے سیکرٹری جنرل نے کہا  ہے کہ امام حسینؑ نے ۱۴ سو سال قبل ان دہشتگردوں کو شکست دی جو دین اسلام کا لبادہ اوڑھ کر دین کو اپنی پسند نا پسند میں ڈھال رہے تھے۔

  فهرست  
   
     
 
    
کیا اردوغان صہیونی حکومت پر حملہ کرنے کے لیے اسلامی فوج بنانے کی تیاری کر رہا ہے ؟

نیوزنور:روزنامہ ایکسپریس کے ای پیپر نے ایک مضمون میں ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان کے  اسلامی فوج کی تشکیل کے سلسلے اور صہیونی حکومت پر حملے کا جائزہ لیا ۔

اسلامی بیداری صارفین۹۱۲ : // تفصیل

کیا اردوغان صہیونی حکومت پر حملہ کرنے کے لیے اسلامی فوج بنانے کی تیاری کر رہا ہے ؟

نیوزنور:روزنامہ ایکسپریس کے ای پیپر نے ایک مضمون میں ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان کے  اسلامی فوج کی تشکیل کے سلسلے اور صہیونی حکومت پر حملے کا جائزہ لیا ۔

عالمی اردو خبررساں ادارے نیوزنور کی رپورٹ کے مطابق جو روزنامہ ایکسپریس کے ای پیپرسے لی گئی ہے ایک مہینے سے کم عرصہ پہلے  ترکی میں چھپنے والےحکومتی روزنامے "ینی شفق "نے اس عنوان کے تحت ایک مقالہ ؛" کیا اسرائیل  کے خلاف اسلامی فوج تشکیل دی جائے ؟" منتشر کیا ۔ اس رپورٹ میں اسلامی تعاون کونسل کے۵۷ ملکوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہ وہ متحد ہو کر اسرائیل کے خلاف ایک فوج تشکیل دیں اور صہیونی حکومت اور اس کے اتحادیوں پر حملہ کریں ، کے امکان کا جائزہ لیا گیا ۔

اس مقالے میں آیا ہے : اگر اسلامی تعاون کونسل کے رکن ملک فوجی اعتبار سے متحد ہو جائیں تو دنیا کی سب سے جامع اور بڑی فوج بنا سکتے ہیں ۔ اس کے سرگرم سپاہیوں کی تعداد ۵۲ لاکھ ۶ہزار افراد ہو گی اور اس کا دفاعی بجٹ ۱۵۷ ہزار ارب ڈالر ہو گا ۔

اس مقالے میں اس منصوبے کی مزید جزئیات کا جائزہ لیا گیا ہے اور لکھا ہے : اسلامی تعاون کونسل کے ملکوں کے زمینی سمندری اور ہوائی ٹھکانے اہم اور حساس نقطوں پر واقع ہیں اور اسرائیل پر حملہ کرنے کے لیے کافی ہیں ۔ دوسری جانب بہت مختصر مدت میں کچھ مشترکہ ٹھکانے بنائے جا سکتے ہیں اور ان میں جو کم سے کم فوجی سازو سامان  ہو گا وہ ، ۵۰۰ ٹینک ، ۱۰۰ لڑاکو طیارے ، ۵۰۰ جنگی ہیلی کاپٹر اور ۵۰ تیز رفتار کشتیوں پر مشتمل ہو گا ۔

اس مقالے کے لکھنے والے نے ڈھائی لاکھ سپاہیوں کو اسرائیل پر پہلے حملے کے لیے کافی قرار دیا ۔

اسی دوران ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے عثمانی سلطنت کے احیاءکے موضوع کی تکرار کرتے ہوئے اس رپورٹ کے سلسلے میں اپنی رضامندی کا اعلان کیا ۔

اس نے حال ہی میں قطر اور سومالیہ میں فوجی ٹھکانے بنانے میں کامیابی حاصل کر لی ہے۔ اسی طرح سوڈانی حکام کے ساتھ ایک سمجھوتے میں دریائے سرخ میں ایک سوڈانی جزیرے کو فوجی ٹھکانے کے طور پر استعمال کرنے کی اجازت لے لی ہے ۔

اس نے اسی طرح کئی بار دھمکی دی ہے کہ وہ بحیرہ روم/ میڈیٹیرین سمندر میں یونان کے جزایر پر حملہ کرے گا ، جیسا کہ اس نے دہشت گردی کے خلاف جنگ کے بہانے شام کے کچھ علاقوں پر حملہ کیا ہے ۔

اس کے باوجود اردوغان کے بلند پروازی پر مبنی مقاصد کی تکمیل کے لیے مالی حمایت کی ضرورت ہے کہ جس کو یورپین  یونین نے فراہم کیا ہے۔

کچھ عرصہ پہلے یورپین یونین نے اعلان کیا کہ وہ مزید ۲ارب اور ۷۰۰ میلین ڈالر  ترکی کو دے گا ۔ یہ رقم ترکی کو اس لیےدی گئی کہ وہ بر اعظم سبز میں پناہ گزینوں کی آمد کے سلسلے کو روکے ،اسی لیے اس نے آنکارا کے مقاصد کو آگے بڑھانے کے لیے لازمی خرچہ اس کو فراہم کیا ہے ۔  


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر