تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور 23 اپریل/ بحرین کے ایک ممتاز شیعہ عالم دین نے اس بات کےساتھ کہ آل خلیفہ  رژیم کےسامنے فلسطینی کاز کی کوئی اہمیت نہیں ہے کہا ہے کہ بحرینی عوام  اپنے تمام جائز مطالبات پورے ہونے تک اپنی تحریک جاری رکھیں گے۔

نیوزنور23اپریل/روسی وزارت خارجہ کی ترجمان نے کہا ہے کہ مغربی ممالک شام کے شہر دوما میں کیمیائی حملے سے متعلق حقائق میں تحریف کر رہے ہیں۔

نیوزنور23اپریل/ٹوئٹر پرسعودی عرب کے  سرگرم  اور شاہی خاندان کے قریبی کارکن نےسعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں شاہی محل میں کل رات ہونے والی فائرنگ کی اصل حقیقت سامنے لاتے ہوئے کہا ہے کہ فائرنگ کے واقعہ میں آل سعود کے بعض اعلٰی شہزادے ملوث ہیں ڈرون کو گرانے کا واقعہ سعودی حکومت کا ڈرامہ ہے فائرنگ کے واقعہ کے بعد سعودی بادشاہ اور ولیعہد شاہی محل سے فرار ہوگئے تھے۔

نیوزنور23اپریل/اسلامی مقاومتی محورحزب اللہ لبنان کے سربراہ نے کہا ہےکہ اسرائيل کو لبنانیوں کے خلاف جارحیت سے روکنا ہمارا سب سے بڑا ہدف ہے ۔

نیوزنور23اپریل/مجلس وحدت مسلمین پاکستان سندھ کے سیکرٹری جنرل نے کہا  ہے کہ امام حسینؑ نے ۱۴ سو سال قبل ان دہشتگردوں کو شکست دی جو دین اسلام کا لبادہ اوڑھ کر دین کو اپنی پسند نا پسند میں ڈھال رہے تھے۔

  فهرست  
   
     
 
    
چینی صدر:
ایشیا کے مستقبل کا فیصلہ ایشیائی ممالک کو خود کرنا ہو گا

نیوزنور10اپریل/چین کے صدر نے کہا ہے کہ ایشیا کے مستقبل کا فیصلہ ایشیائی ممالک کو خود کرنا ہو گا جس کے لیے انہیں غالب اور قابض ہونے کی ذہنیت کو ترک ہونا ہوگا۔

دینی و مذھبی رواداری صارفین۲۲۹ : // تفصیل

چینی صدر:

ایشیا کے مستقبل کا فیصلہ ایشیائی ممالک کو خود کرنا ہو گا

نیوزنور10اپریل/چین کے صدر نے کہا ہے کہ ایشیا کے مستقبل کا فیصلہ ایشیائی ممالک کو خود کرنا ہو گا جس کے لیے انہیں غالب اور قابض ہونے کی ذہنیت کو ترک ہونا ہوگا۔

عالمی اردو خبررساں ادارے’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق چین کے صدر’’ شی جن پنگ‘‘ نے باؤ فورم اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے  کہا  کہ ایشیا کے مستقبل کا فیصلہ ایشیائی ممالک کو خود کرنا ہو گا جس کے لیے انہیں غالب اور قابض ہونے کی ذہنیت کو ترک ہونا ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ ایشیائی ممالک کو اپنے معاملات خود اپنے ہاتھ میں لینا ہوں گےکیونکہ ایشیا کے مستقبل کا اثر سب سے زیادہ ایشیائی ممالک پر ہی پڑے گا اس لیے ایشیائی ممالک کو سرد جنگ کی ذہنیت کو ختم کر کے زمینی حقائق کے تحت فیصلے خود کرنا ہوں گے۔

موصوف صدر نے کہا کہ ہم دنیا سے کٹ کر نہیں رہ سکتے تاہم غلبہ کی ذہنیت کو ترک کرنا ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ ایشیا کے بہت سے ممالک میں غربت، بھوک اور امراض نے ڈیرے ڈال رکھے ہیں اسی طرح دنیا کے بہت سے خطوں میں انسانیت کو غیر یقینی صورتحال کا سامنا ہے جس پر چین نے ایشیا میں معاشی بحران کے خاتمے اور دنیا  سے بھوک و افلاس کے خاتمے کے لیے گراں قدر کام کیا ہے تاہم ہمارے سامنے اب بھی بے شمار مسائل اور بہت سی رکاوٹیں ہیں۔

چینی صدر نے کہا کہ یہ دور امن، خوشحالی اور بیداری کا دور ہے جس میں آپ سرد جنگ کی ذہنیت کے ساتھ زندہ نہیں رہ سکتے۔

شی جن پنگ نے مزید کہا کہ  زمانے کے ساتھ قدم سے قدم ملاتے ہوئے معیشت کی بحالی اور اپنے اپنے ملک کے عوام کی خوشحالی کے لیے بہت سا کام کرنا ہو گا اسی ایجنڈے پر کام کرتے ہوئے چین دنیا کی دوسری بڑی معیشت بن چکا ہے جس نے محض 40 برس میں غیرمعمولی ترقی کی ہے۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر