تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور 23 اپریل/ بحرین کے ایک ممتاز شیعہ عالم دین نے اس بات کےساتھ کہ آل خلیفہ  رژیم کےسامنے فلسطینی کاز کی کوئی اہمیت نہیں ہے کہا ہے کہ بحرینی عوام  اپنے تمام جائز مطالبات پورے ہونے تک اپنی تحریک جاری رکھیں گے۔

نیوزنور23اپریل/روسی وزارت خارجہ کی ترجمان نے کہا ہے کہ مغربی ممالک شام کے شہر دوما میں کیمیائی حملے سے متعلق حقائق میں تحریف کر رہے ہیں۔

نیوزنور23اپریل/ٹوئٹر پرسعودی عرب کے  سرگرم  اور شاہی خاندان کے قریبی کارکن نےسعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں شاہی محل میں کل رات ہونے والی فائرنگ کی اصل حقیقت سامنے لاتے ہوئے کہا ہے کہ فائرنگ کے واقعہ میں آل سعود کے بعض اعلٰی شہزادے ملوث ہیں ڈرون کو گرانے کا واقعہ سعودی حکومت کا ڈرامہ ہے فائرنگ کے واقعہ کے بعد سعودی بادشاہ اور ولیعہد شاہی محل سے فرار ہوگئے تھے۔

نیوزنور23اپریل/اسلامی مقاومتی محورحزب اللہ لبنان کے سربراہ نے کہا ہےکہ اسرائيل کو لبنانیوں کے خلاف جارحیت سے روکنا ہمارا سب سے بڑا ہدف ہے ۔

نیوزنور23اپریل/مجلس وحدت مسلمین پاکستان سندھ کے سیکرٹری جنرل نے کہا  ہے کہ امام حسینؑ نے ۱۴ سو سال قبل ان دہشتگردوں کو شکست دی جو دین اسلام کا لبادہ اوڑھ کر دین کو اپنی پسند نا پسند میں ڈھال رہے تھے۔

  فهرست  
   
     
 
    
ھا آرتص: اسرائیل دہشتگرد ہے نہ کہ فلسطینی نوجوان

نیوزنور:11اپریل/ ھا آرتص اخبار  نے فلسطینیوں کے خلاف تل ابیب کی گھناونی سیاستوں کو تنقید کا نشانہ  بناتے ہوئے کہا ہے کہ در اصل  دہشتگرد اسرائیل ہے نہ فلسطینی نوجوان۔

اسلامی بیداری صارفین۳۷۴ : // تفصیل

ھا آرتص: اسرائیل دہشتگرد  ہے نہ کہ فلسطینی نوجوان

نیوزنور:11اپریل/ ھا آرتص اخبار  نے فلسطینیوں کے خلاف تل ابیب کی گھناونی سیاستوں کو تنقید کا نشانہ  بناتے ہوئے کہا ہے کہ در اصل  دہشتگرد اسرائیل ہے نہ فلسطینی نوجوان۔

عالمی اردو خبررساں ادارے نیوزنور کی رپورٹ کے مطابق ،  متنازعہ فلسطین سے چھپنے والے اخبار ہا آرتص نے گزشتہ روز کی اپنی رپورٹ کو "اسرائیل دہشتگرد ہے" کے عنوان سے تحریر کرتے ہوئے لکھا ہے کہ  فلسطینی نوجوان اس فوج کے خلاف اپنی  جانیں دینے کو تیار ہیں کہ جو ان سے کئی گنا زیادہ  طاقت ور  اور مسلح ہے۔

اس رپورٹ کی ابتدا میں  کرانہ باختری/م غزہ پٹی میں  صہیونی آبادی والے  شہروں میں جاری آپریشنز کی طرف اشارہ کرتے ہوئے مزید ذکر ہوا ہے: یہ اقدامات اسرائیل کی دہشتگردانہ سیاست  کا حصہ ہیں  اور یہ سیاست اسرائیلی حکومت کے خلاف غم و غصے میں اضافے کا سبب بن رہی ہے۔

ھا آرتص نے  فلسطینیوں کی سرزمین پر صہیونی آباد کاری کے وسعت پسندانہ منصوبے کو   بھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا: کرانہ باختری میں بننے والے شہروں ، کہ جس زمین کا ایک بالشت بھی اسرائیل کا نہیں ہے  ، نے فلسطینیوں کی زندگی کو جہنم بنا رکھا ہے ۔

اس اخبار نے صہیونی حکومت کو دہشتگردی کی حامی حکومت کا نام دیتے ہوئے کہا کہ فلسطینیوں کی زمین پر نا جائز قبضہ ، ان پر تجارتی پابندیاں ،  ان کے گھروں کی مسماری ، جگہ جگہ کرفیو کا نفاذ  اور   فلسطینی بستیوں میں اسرائیل افواج کی تعیناتی  وغیرہ وغیرہ  اگر یہ  دہشتگردی نہیں ہے تو اور کیا ہے ؟ یا دوسرے الفاظ میں  غیر مسلح اور نہتے شہریوں کے خلاف جنگ ۔ 

ھا آرتص نے آخر میں  صہیونی حکومت کے خلاف فلسطینیوں کے احتجاجی مظاہروں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے لکھا :  ان فلسطینی جوانوں کا کام کیا ہے ؟ دہشتگردی؟  نہیں  یہ فقط ایک ایسا گروہ ہے کہ جو ایسی فوج کے خلاف اپنی جانیں قربان کرنے پر تیار ہے کہ جو  اسلحے اور قوت کی بنیاد پر ان سے ہزر گنا زیادہ طاقتور ہے ۔

اور یہ فوج کس چیز کا دفاع کر رہی ہے ؛ ملک کی امنیت کی ؟  نہیں ،  یہ فوج  صرف  اور صرف  دریائے اردن سے لے کر  بحر میڈیٹیرن   تک ایک یہودی حکومت قائم کرنے کے اسرائیلی دہشتگردانی منصوبے کا  دفاع کر رہی ہے۔ 

 

 


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر