تازہ ترین خبریں  
 
 
  تازہ ترین مقالات  
 
 
  مقالات  
 
 
  پیوندها  
   

نیوز نور 23 اپریل/ بحرین کے ایک ممتاز شیعہ عالم دین نے اس بات کےساتھ کہ آل خلیفہ  رژیم کےسامنے فلسطینی کاز کی کوئی اہمیت نہیں ہے کہا ہے کہ بحرینی عوام  اپنے تمام جائز مطالبات پورے ہونے تک اپنی تحریک جاری رکھیں گے۔

نیوزنور23اپریل/روسی وزارت خارجہ کی ترجمان نے کہا ہے کہ مغربی ممالک شام کے شہر دوما میں کیمیائی حملے سے متعلق حقائق میں تحریف کر رہے ہیں۔

نیوزنور23اپریل/ٹوئٹر پرسعودی عرب کے  سرگرم  اور شاہی خاندان کے قریبی کارکن نےسعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں شاہی محل میں کل رات ہونے والی فائرنگ کی اصل حقیقت سامنے لاتے ہوئے کہا ہے کہ فائرنگ کے واقعہ میں آل سعود کے بعض اعلٰی شہزادے ملوث ہیں ڈرون کو گرانے کا واقعہ سعودی حکومت کا ڈرامہ ہے فائرنگ کے واقعہ کے بعد سعودی بادشاہ اور ولیعہد شاہی محل سے فرار ہوگئے تھے۔

نیوزنور23اپریل/اسلامی مقاومتی محورحزب اللہ لبنان کے سربراہ نے کہا ہےکہ اسرائيل کو لبنانیوں کے خلاف جارحیت سے روکنا ہمارا سب سے بڑا ہدف ہے ۔

نیوزنور23اپریل/مجلس وحدت مسلمین پاکستان سندھ کے سیکرٹری جنرل نے کہا  ہے کہ امام حسینؑ نے ۱۴ سو سال قبل ان دہشتگردوں کو شکست دی جو دین اسلام کا لبادہ اوڑھ کر دین کو اپنی پسند نا پسند میں ڈھال رہے تھے۔

  فهرست  
   
     
 
    
ایرانی تجزیہ نگار:
آل سعود کے پاس ایران کو ایک بڑی علاقائی طاقت کے طور پر تسلیم کرنے کے سوا کوئی چارہ نہیں ہے

نیوز نور11 اپریل/ایران کے ایک ممتاز سیاسی تجزیہ نگار نے کہا ہے کہ سعودی رژیم کو اس وقت داخلی سطح پر وسیع  بحران کا سامنا ہے کیونکہ بن سلمان کو  غیر قانونی طورپر ولی عہدے پر فائض کیاگیا ہے۔

استکباری دنیا صارفین۱۷۵ : // تفصیل

ایرانی تجزیہ نگار:

آل سعود کے پاس ایران کو ایک بڑی علاقائی طاقت کے طور پر تسلیم کرنے کے سوا کوئی چارہ نہیں ہے

نیوز نور11 اپریل/ایران کے ایک ممتاز سیاسی تجزیہ نگار نے کہا ہے کہ سعودی رژیم کو اس وقت داخلی سطح پر وسیع  بحران کا سامنا ہے کیونکہ بن سلمان کو  غیر قانونی طورپر ولی عہدے پر فائض کیاگیا ہے۔

عالمی اردوخبررساں ادارے’’نیونور‘‘ کی رپورٹ کے مطابق ’’کے مہدی‘‘نے مقامی میڈیا کےساتھ انٹرویو میں کہاکہ سعودی رژیم کو اس وقت داخلی سطح پر وسیع  بحران کا سامنا ہے کیونکہ بن سلمان کو  غیر قانونی طورپر ولی عہدے پر فائض کیاگیا ہے۔

انہوں نے کہاکہ   سعودی عرب کو اس وقت  داخلی طور پر سنگین مسائل کا سامنا ہے اوراس کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ  بن سلمان کو ولی عہد بنانے کے فیصلے کےخلاف شاہی خاندان میں پھوٹ پڑی تھی اور چار ہزار سے زائد شہزادوں کو پابند سلاسل کیاگیا ہے۔

انہوں نے کہاکہ محمد بن سلمان  سعودی  تخت تک پہنچنے کیلئے امریکہ کی  حمایت جھٹانے کی کوشش کررہے ہیں۔

انہوں نے کہاکہ محمد بن سلمان وہی شخص ہیں  جنہوں نے  عرب دنیا کے غریب ترین ملک  یمن پر جنگ مسلط کرنے کا چارج لیا ہے۔

انہوں نے کہاکہ  سعودی عرب کو آج اندرونی طورپر جن مسائل کا سامنا ہے اس کی اہم وجہ یمن پر مسلط کردہ جنگ بھی ہے۔

انہوں نے کہاکہ اس جنگ کے باعث ہی آل سعود کو بین الاقوامی بنکوں سے پہلی مرتبہ قرضہ لینے پر مجبور ہونا پڑا ہے۔

موصوف تجزیہ نگار نے کہاکہ  یمن جنگ ہر لحاظ سے سعودی عرب کیلئے نقصان دہ ثابت ہوا ہے حتیٰ اس جنگ سے سعودی حکومت کی کمزوریاں سب پر واضح ہوچکی ہیں۔

انہوں نے کہاکہ اس جنگ  نے یہ ثابت کردیا ہے کہ  جدید ہتھیاروں سے لیس ہونے کے باوجود سعودی عرب کی فوج جنگی آپریشنز کو مؤثرانداز میں انجام دینے سے پوری طرح قاصر ہے۔

کے مہدی نے  کہاکہ  سعودی عرب میں مالی بحران ،غربت ،فرقہ وارانہ اورنسلی  امتیاز کے  خلاف خود سلطنت کے اندر آوازیں اُٹھ رہی ہیں جو سعودی حکومت کیلئے ایک بڑا چلینج بن گیا ہے۔

انہوں نے کہاکہ  العوامیہ جیسے علاقے میں  سعودی عرب کے مظالم وپالیسیوں کے خلاف عوام سراپا احتجاج  ہے جس بنا پر سعودی عرب کے فوجی کارندوں نے مکمل محاصرہ کررکھا ہے۔

انہوں نے کہاکہ  شام کے اندر جہاں آل سعود نے دہشتگردوں کی مالی واسلحہ جاتی حمایت کی  اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف پراکسی جنگ میں شکست کھا چکا ہے ۔

انہوں نے کہاکہ سعودی عرب کی غلط پالیسیوں  کی وجہ سے آج پورے  علاقے میں اس کا اثرورسوخ ختم ہوگیا ہے جبکہ اسلامی جمہوریہ ایران کی منطقی پالیسی اورعلاقائی عوام کی بھرپورحمایت  کے باعث پورے خطے کی عوام ایران کو آج ایک اہم علاقائی طاقت کے طورپر تسلیم کرتی ہے۔

انہوں نے کہاکہ سعودی عرب  ایران کے بڑھتے اثرورسوخ کو  اپنے لئے خطرہ سمجھتا ہے ۔

دریں اثنا ایران کے دارالحکومت تہران سے لبنان کے دارالحکومت بیروت تک مقاومتی محور متحد ہے۔

سعودی عرب کو آج جن داخلی اور علاقائی تنازعات کا سامنا ہے اس وجہ سے اسے علاقے میں اسرائیل اور امریکہ کی کٹھ پتلی کا کردار ادا کرنے پر مجبور ہونا پڑا ہے۔

انہوں نے کہاکہ  امریکہ  ایک ایسے نئے مشرق وسطیٰ کا حامی ہے جہاں اس کے علاوہ اورکوئی فیصلہ ساز نہ ہو ۔

موصوف تجزیہ نگار نے مزیدکہاکہ  سعودی عرب ،بحرین اورمتحدہ عرب امارات جیسی کٹھ  پتلی حکومتیں علاقے میں اہم کردار ادا کرنے کے قابل نہیں ہیں اس لئے انہوں نے علاقےمیں امریکہ کی کٹھ پتلیاں بننے کا فیصلہ کیا ہے۔


آپ کی رائے
نام:  
ایمیل:
پیغام:  500
 
. « »
قدرت گرفته از سایت ساز سحر