my title page contents
اسلامی بیداری
شماره : 49496
: //
مجمع روحانیون کرگل ولیه :
اتحاد ہی قوم کی تعمیر اور ترقی کیلئے موثرقدم

نیوزنور: کرگل کے علماء ایماندار ، وفادار اور بااستعداد هیں جهاں بھی وه دینی فعالیت کررهے هیں ایک اچھا چهره پیش کیاهے اس بنا پر آپ جوانوں کو بھی اپنے علماء پر اعتماد کرناچاهئے آپ جوانوں میں بھی علماء کے نسبت بی اعتمادی پائی جاتی هے اس کو برطرف کرنے کےلئے آپ سب کوبھی کوشش کرنی چاهئے۔

مجمع روحانیون کرگل ولیه :

اتحاد ہی قوم کی تعمیر اور ترقی کیلئے موثرقدم

نیوزنور: کرگل کے علماء ایماندار ، وفادار اور بااستعداد هیں جهاں بھی وه دینی فعالیت کررهے هیں ایک اچھا چهره پیش کیاهے اس بنا پر آپ جوانوں کو بھی اپنے علماء پر اعتماد کرناچاهئے آپ جوانوں میں بھی علماء کے نسبت بی اعتمادی پائی جاتی هے اس کو برطرف کرنے کےلئے آپ سب کوبھی کوشش کرنی چاهئے۔

عالمی اردو خبررساں ادارے نیوز کی رپورٹ کے مطابق 17فروری 2018 کو مجمع روحانیون کرگل ولیه نے" اتحاد گامی بسوی پیشرفت "(اتحاد ترقی کی طرف بڑھتے قدم)  کے موضوع  کے تحت ایک علمی نشست کا اہتمام کیا کہ جس میں کرگل و لیہ سے حوزه علمیه قم کے برگزیدہ علماء اور طلاب کے ساتھ ساتھ هندوستانن کے مختلف ریاستوں میں موجود اسٹوڈنٹس یونین کےصدور اورسرکردہ اراکین نے شرکت کرکے تبادلہ خیال کیا۔

اس علمی نشست کے بارے میں مجمع روحانیوں کرگل و لیہ نے نیوزنور کے لئے اپنے مراسلے میں کہا ہے کہ ؛ اسلام  مسلمانوں کے مابین  اتحاد اور اتفاق کو ایک  واجب فریضہ جانتاہے  اور عصر حاضر کے مراجع عظام تقلید بالخصوص ولی فقیہ رہبر معظم انقلاب اسلامی حضرت امام خامنہ ای  اور آیت اللہ العظمی سید علی سیستانی نے  تمام مسلمانوں کو بالخصوص  حوزہ  علمیہ  اور یونیورسیٹی میں  موجود  علماء اور طالبعلموں کو اس راہ میں  جدو جہد کرنے کی سفارش کی ہے  اس بناپر اتحاد کی اہمیت کو مدنظر رکھتے ہوئے مجمع روحانیون کرگل اور لیہ نے  ایک شاندار علمی سمینار کا انعقاد کیا ہے ۔اتحاد کے موضوع پر اس سے پہلے  بھی دہلی اسٹیوڈینٹس(AKSAD) اور دھرادون اسٹیوڈینٹس(ALSWAD)اور کرگل کے اسٹیوڈینٹس مومینٹ(SEMOK) کی جانب سے بھی شاندار سمینار کا انعقاد کیا گیاتھاکہ جسکا چوتھا مرحلہ   مجمع روحانیون کرگل ولیہ (MRKLQ) کی سرپرستی  میں  حوزہ علمیہ قم  میں انعقاد کیا گیا۔

یه سمینار 17فروری 2018 کو مجمع روحانیون کرگل ولیه نے اتحاد گامی بسوی پیشرفت  کی موضوع پر رکهاتها جسمیں حوزه علمیه قم کے علماء اور طلاب کے ساتھ ساتھ هندوستان کے مختلف ریاستوں میں موجود اسٹیوڈینٹس یونین کےصدورحضرات اور اکٹیو ممبرز موجود تھے جسمیں علماء کے شانه به شانه اسٹیوڈینٹس کے صدور حضرات نے بهی اتحاد اور اتفاق پر زور دیا جسمیں مختلف مسائل کی جانب خطباء نے اشاره کیا .

کرگل کے جامعه میں موجود اختلافات ،فسادات، پارٹی بازی ،رشوت خواری قوم پرستی نسل گرائی اور اسکے مانند تمام اجتماعی مشکلات و اخلاقی فسادات کی جانب اشاره کرتے هوئے بعض خطباء نے بعض اداروں کے سرپرست اور سیاسی لیڑوں کا نام لیتے هوئے تنقیدی کلمات استعمال کئے جسکی وجه سے شاید بهت سے لوگ ان جوانوں کو اعتراض کا نشانه بنایے لیکن جوانوں نے جو کچھ بیان کیا هے اس کو پروف اور دلیل کے ساتھ بیان کیا هے  درصورت ضرورت اس کو عام لوگوں تک پهچانے کی کوشش بهی کرینگے.

آخر میں مجمع روحانیون کرگل ولیه کے صدر محترم حجۃالاسلام والمسلمین آقای سید اعجاز موسوی نے تقریرکی انهوں جوانوں کی حوصله افزائی کرتے هوئے فرمایا که یه جو کچھ باتیں اسٹیوڈینٹس کے معزز ممبران نے بیان کی هیں یه شکایت نهیں بلکه درد دل هے اور درد دل کو بیان کرنےوالوں  کودشمن نهیں سمجھناچاهئے۔

 انهوں نے مزید کها که کرگل کے علماء ایماندار ، وفادار اور بااستعداد هیں جهاں بھی وه دینی فعالیت کررهے هیں ایک اچھا چهره پیش کیاهے اس بنا پر آپ جوانوں کو بھی اپنے علماء پر اعتماد کرناچاهئے آپ جوانوں میں بھی علماء کے نسبت بی اعتمادی پائی جاتی هے اس کو برطرف کرنے کےلئے آپ سب کوبھی کوشش کرنی چاهئے.

 مجمع روحانیون کرگل ولیه کو منطقه میں اتحاد اور اتفاق قایم کرنے کے لیے وجود میں لایاگیا هے همیں یه جاننا چاهئے که جامعه میں اختلاف کی وجه صرف ایک صنف کے لوگ نهیں هے بلکه جامعه کےسارے افراد شامل هیں اس لئے هم سب کو چاهئے که ان مشکلات سےمقابله کریں اور ساتھ ساتھ میں اس کے راه حل کے لئےبھی پیش قدم رهیں. تاکه کل کاهمارامعاشره ایک بهترین معاشره هو.

اس سمینار میں  شیخ علی راجائی نے نظامت کی اور حجۃ الاسلام والمسلمین شیخ ذاکر ناصری نے خطبه استقبالیه بیان فرمایا اسکے بعدحسینی یوته فنڈریشن کشمیرHYFS کے صدر سیدعلی رضوی نے خطاب فرمایا اس کے بعد جموں اسٹیوڈینٹس یونین کے نمایندهALSWAjمحمدصادق اور مدثرعارف نے خطاب فرمایا. اس کے بعد AKSAD کے نماینده خادم حسین نے خطاب فرمایا. انکے بعد چندھی گڈھ  اسٹیوڈینٹس AKSWACکے نماینده محمد ریاض نے خطاب فرمایا اسکے بعدSEMOKکرگل کے سرپرست اعلی محمدحسن نے خطاب فرمایا. انکےبعد  دهرادون اسٹیوڈینٹس AKSUDکے صدرمحترم سيدصادق جمال نے خطاب فرمايا.

 آخر میں مجمع روحانیون کرگل کے صدر حجۃ الاسلام والمسلمین سیداعجازموسوی نے سارے شرکاء کوخوش آمدید کهتے هوئے سب کی قدردانی کی بالخصوص مهمانوں کا شکریه ادا کیا انکے بعد حجه الاسلام والمسلمین ڈاکٹر  شیخ باقر ناصرالدین نے دعای کلمات کے ساتھ سمینار کاخاتمه کیا. /منجانب ؛

هیئت علمی فرهنگی مجمع روحانیون کرگل ولیه./

©newsnoor.com2012 . all rights reserved
خبریں،مراسلات،مقالات،مکالمے،مسلکی رواداری،اتحاد،تقریب،دینی رواداری،اسلامی بیداری،عالم استکبار،ادھر ادھر