my title page contents
استکباری دنیا
شماره : 50160
: //
الجزیرہ کے سابق تجزیہ کار:
شام واشنگٹن،پیرس اور لندن کی مافیہ گینگ کی جارحیت کا شکار بنا ہے

نیوز نور17 اپریل/الجزیرہ کے ایک صحافی و تجزیہ کار نے شام پر مغرب کے حالیہ حملوں کے بھیانک نتائج کی باپت خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس بار بھی شام مغربی مافیہ کی جارحیت کا شکار ہوا ہے ۔

الجزیرہ کے سابق تجزیہ کار:

شام واشنگٹن،پیرس اور لندن کی مافیہ گینگ کی جارحیت کا شکار بنا ہے

 نیوز نور17 اپریل/الجزیرہ کے ایک صحافی و تجزیہ کار نے شام پر مغرب کے حالیہ حملوں کے بھیانک نتائج کی باپت خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس بار بھی شام مغربی مافیہ کی جارحیت کا شکار ہوا ہے ۔

عالمی اردوخبررساں ادارے’’نیوز نور‘‘ کی رپورٹ کے مطابق روسی ذرایع ابلاغ کے ساتھ انٹریو میں ’’افخام سلیمان‘‘ نے شام پر مغرب کے حالیہ حملوں کے بھیانک نتائج کی باپت خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس بار بھی شام مغربی مافیہ کی جارحیت کا شکار ہوا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ شام جیسے آزاد و خود مختار ملک پر جارحیت کرنے کا مغربی ممالک کو کوئی حق حْصل نہیں ہے ۔

انہوں نے کہا کہ مغربی ممالک نے پہلے ہی اس حملے کی منصوبہ بندی کی تھی جبکہ دوما میں  مبینہ کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال محض ایک بہانہ تھا ۔

موصوف تجزیہ نگار نے کہا کہ عرب جمہوریہ شام پر مغربی حملہ ان کے اخلاقی زوال کی علامت ہے جو کہ انتہائی خطرناک ہے ۔

انہوں نے کہا کہ اگر مغربی سیاستدانوں کا یہی رویہ رہتا ہے تو ممکنہ طور پر وہ دنیا کو تیسری عالمگیر جنگ میں دھکیل دیں گے ۔

انہوں نے کہا کہ اس طرح کی جارحیت نہ صرف شام بلکہ پوری دنیا کیلئے سنگین مسائل پیدا کر سکتی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ شامی عوام کی اکثریت مسلسل بشار الاسد کی زبردست حامی ہے ۔

موصوف تجزیہ نگار نے کہا کہ مغربی ممالک کو شامی عوام کی رائے کی کوئی پرواہ نہیں ہے بلکہ وہ اپنے جیو پولیٹکل مقاصد کے پیچھے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ مجھے اس بات پر گہری تشویش ہے کہ مغربی ممالک نے ایک بار پھر عالمی قوانین کو بالائے طاق رکھ کر ایک خود مختار ملک پر جارحیت کی ہے ۔

واضح رہےکہ شام کو سن 2011 سے امریکہ، سعودی عرب ، ترکی اور قطر کے حمایت یافتہ دہشتگرد گروہوں کی سرگرمیوں کا سامنا ہے جس کے نتیجے میں چار لاکھ ستر ہزار سے زائد شامی شہری مارے جاچکے ہیں اور دہشتگردی کے نتیجے میں کئی لاکھ افراد اپنے ملک میں بے گھر اور لاکھوں دیگر ممالک میں پناہ لینے پر مجبور ہوگئے ہیں۔

©newsnoor.com2012 . all rights reserved
خبریں،مراسلات،مقالات،مکالمے،مسلکی رواداری،اتحاد،تقریب،دینی رواداری،اسلامی بیداری،عالم استکبار،ادھر ادھر