my title page contents
استکباری دنیا
شماره : 45482
: //
سابق امریکی فوجی اہلکار:
آل سعود کوفراہم کئے جانے والے ہتھیار آخر کار داعش کے پاس ہی پہنچتے ہیں

 نیوزنور:ایک سابق امریکی فوجی اہلکارنے کہا ہے کہ امریکہ جو ہتھیار سعودی عرب کو بھیجتا ہے وہ آخر کار دہشت گرد گروہ داعش کے پاس ہی پہنچتے ہیں۔

سابق امریکی فوجی اہلکار:

آل سعود کوفراہم کئے جانے والے ہتھیار آخر کار داعش کے پاس ہی پہنچتے ہیں

 نیوزنور:ایک سابق امریکی فوجی اہلکارنے کہا ہے کہ امریکہ جو ہتھیار سعودی عرب کو بھیجتا ہے وہ آخر کار دہشت گرد گروہ داعش کے پاس ہی پہنچتے ہیں۔

عالمی اردوخبررساں ادارے’’نیوزنور‘‘نےسحر عالمی نیٹ ورک کے حوالے سےنقل کیاکہ امریکی بحریہ کے ایک سابق اہلکار کین او کیف نے کہا ہے کہ امریکہ ، سعودی عرب کو ایک سو دس ارب ڈالر کے جو ہتھیار دےگا وہ بھی آخر کار داعش کے پاس ملیں گے۔

کن اوکیف نے داعش کو صیہونی حکومت اور آل سعود کا پروردہ قراردیتے ہوئے  تاکید کے ساتھ کہا کہ امریکی حکومت کے یہ دعوے کہ ایران مشرق وسطی کے علاقے میں دہشت گردی کی حمایت کرتا ہے کھوکھلے اور مضحکہ خیز ہیں۔

امریکی بحریہ کے سابق میرین نے کہا کہ دنیا میں امریکہ کی پالیسیاں،لاکھوں انسانوں کے مارے جانے اور کروڑوں انسانوں کی ہلاکت کا باعث بن رہی ہیں۔
واضح رہے کہ بیس مئی کو امریکہ کے صدر ٹرمپ کے دورہ سعودی عرب کے دوران، سعودی عرب اور امریکہ نے تین سو اسی ارب ڈالر کی مالیت کے معاہدے پر دستخط کئے ہیں جس میں ایک سو دس ارب ڈالر کے اسلحے کا سودا بھی شامل ہے۔

©newsnoor.com2012 . all rights reserved
خبریں،مراسلات،مقالات،مکالمے،مسلکی رواداری،اتحاد،تقریب،دینی رواداری،اسلامی بیداری،عالم استکبار،ادھر ادھر