my title page contents
استکباری دنیا
شماره : 45501
: //
مسجد اقصیٰ کے ڈائریکٹر :
اسرائیل فلسطینیوں کو قبلہ اول میں عبادت سے محروم کرنا چاہتا ہے

نیوز نور : مسجد اقصیٰ کے ڈائریکٹر نے قبلہ اول میں اعتکاف پر بیٹھے روزہ داروں پر صہیونی فوج کے بہیمانہ تشدد کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے مذہبی غنڈہ گردی قرار دیا ہے۔

مسجد اقصیٰ کے ڈائریکٹر :

اسرائیل فلسطینیوں کو قبلہ اول میں عبادت سے محروم کرنا چاہتا ہے

نیوز نور : مسجد اقصیٰ کے ڈائریکٹر نے قبلہ اول میں اعتکاف پر بیٹھے روزہ داروں پر صہیونی فوج کے بہیمانہ تشدد کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے مذہبی غنڈہ گردی قرار دیا ہے۔

عالمی اردو خبر رساں ادارے ’’نیوز نور‘‘ کی رپورٹ کے مطابق مسجد اقصیٰ کے ڈائریکٹر ’’الشیخ عمر الکسوانی‘‘ نے فلسطینی ذرائع ابلاغ کے ساتھ انٹرویو میں کہا کہ صہیونی فوج کی طرف سے مسجد اقصیٰ میں گھس کر نمازیوں اور معتفکین کو تشدد کا نشانہ بنانا مذہبی اشتعال انگیزی اور ناقابل قبول اقدام ہے۔

انہوں نے کہا کہ  صہیونی فوج نے نہ صرف مسجد کے محافظوں کو تشدد کا نشانہ بنایا بلکہ مسجد میں اعتکاف پر بیٹھے روزہ داروں پر بھی چڑھائی کی۔

الکسوانی نے کہا کہ صہیونی فورسز کی طرف سے فلسطینی نمازیوں اور معتکفین کو تشدد کا نشانہ بنا کر مسجد اقصیٰ میں کشیدگی پیدا کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے تاکہ فلسطینی خوف زدہ ہوں اور وہاں پر عبادت کے لیے آنا ترک کر دیں۔

انہوں نے کہا کہ صہیونی ریاست ایک منصوبے کے تحت فلسطینیوں کو مسجد اقصیٰ میں عبادت سے محروم کرنا چاہتی ہے۔

انہوں نے مسجد اقصیٰ میں موجودہ کشیدگی کی ذمہ داری صہیونی انتظامیہ اور قابض ریاست پرعائد کی۔

الشیخ عمر الکسوانی نے مزید کہا کہ گذشتہ روز اسرائیلی پولیس اور فوج کے ہولناک تشدد کے نتیجے میں کم سے کم 30 نمازی اور معتکفین زخمی ہوگئے تھے جسکی تمام ترذمہ داری اسرائیل پرعائد ہوتی ہے۔

©newsnoor.com2012 . all rights reserved
خبریں،مراسلات،مقالات،مکالمے،مسلکی رواداری،اتحاد،تقریب،دینی رواداری،اسلامی بیداری،عالم استکبار،ادھر ادھر