نیوزنور newsnoor

نیوزنور بین الاقوامی تحلیلی اردو خبررساں ادارہ

نیوزنور newsnoor

نیوزنور بین الاقوامی تحلیلی اردو خبررساں ادارہ

نیوزنور newsnoor
موضوعات
تازہ ترین تبصرے


حشد الشعبی کےمغربی علاقے کے کمانڈر:

 نیوزنور25ستمبر/عراقی عوامی فورس  حشد الشعبی کےمغربی علاقے کے کمانڈرنے کہا ہے کہ عراق میں گذشتہ چند ماہ کے دوران عوامی رضاکار فورس الحشدالشعبی کا ہیڈکوارٹر دوسری بار امریکہ کی سرکردگی میں قائم داعش مخالف نام نہاد اتحاد کی بمباری کا نشانہ بنا ہے۔

عالمی اردو خبررساں ادارے’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق عراقی عوامی فورس  حشد الشعبی کےمغربی علاقے کے کمانڈر’’قاسم مصلح ‘‘نےکہا کہ عراق میں گذشتہ چند ماہ کے دوران عوامی رضاکار فورس الحشدالشعبی کا ہیڈکوارٹر دوسری بار امریکہ کی سرکردگی میں قائم داعش مخالف نام نہاد اتحاد کی بمباری کا نشانہ بنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ صوبے الانبار کے مغربی صحرا میں واقع الفوسفات کے علاقے میں نام نہاد داعش مخالف اتحاد کے فوجیوں نے القائم کے علاقے سعدہ میں عوامی رضاکار فورس الحشدالشعبی کے ایک ہیڈکوارٹر پر گولہ باری کی ہے۔

عراق کی عوامی رضاکار فورس کے مغربی علاقے کے کمانڈر نے اس حملے کو امریکی اتحاد کا دانستہ اقدام قرار دیتے ہوئے کہا کہ الحشدالشعبی کا ہیڈکوارٹر نام نہاد اس اتحاد کے ہتھیاروں کی آزمائش کا مقام نہیں ہے۔

الحشدالشعبی کی مغربی کمان نے سترہ جون کو بھی اعلان کیا تھا کہ شام سے ملنے والے سرحدی علاقے میں عراق کی عوامی رضاکار فورس الحشدالشعبی کے ایک ہیڈکوارٹر پر بمباری کے نتیجے میں بائیس افراد شہید اور بارہ دیگر زخمی ہو گئے تھے۔

موصوف کمانڈر نے کہا کہ امریکہ کی سرکردگی میں قائم داعش مخالف نام نہاد یہ اتحاد ماضی کی مانند داعشی دہشتگردوں کی خفیہ طور پر مدد کرتے ہوئے انہیں عراق و شام میں سرگرم عمل رکھنے کی کوشش کر رہا ہے اور اسی دائرہ کار میں امریکی حکام اورعراق میں دفاعی قوتوں کو کمزور کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

الحشدالشعبی کے حملے سے قبل عراق کی عوامی رضاکار فورس کی شمالی کمان نے بھی شام کے صوبے ادلب سے دہشتگردوں کو عراق فرار کرانے میں امریکی کوشش پر سخت خبردار کیا تھا۔

انہوں نےمزید کہا کہ مشترکہ سرحدوں میں مزید حفاظتی اقدامات عمل میں لائے جانے چاہئے اور ان علاقوں میں ایسی رکاوٹیں اور باڑ لگائے جانے کی ضرورت ہے کہ جس سے داعشی دہشتگردوں کو شام سے عراق میں داخل ہونے سے روکا جا سکے۔

نظرات  (۰)

ابھی تک کوئی تبصرہ نہیں لکھا گیا ہے
ارسال نظر آزاد است، اما اگر قبلا در بیان ثبت نام کرده اید می توانید ابتدا وارد شوید.
شما میتوانید از این تگهای html استفاده کنید:
<b> یا <strong>، <em> یا <i>، <u>، <strike> یا <s>، <sup>، <sub>، <blockquote>، <code>، <pre>، <hr>، <br>، <p>، <a href="" title="">، <span style="">، <div align="">
تجدید کد امنیتی