نیوزنور newsnoor

نیوزنور بین الاقوامی تحلیلی اردو خبررساں ادارہ

نیوزنور newsnoor

نیوزنور بین الاقوامی تحلیلی اردو خبررساں ادارہ

نیوزنور newsnoor
موضوعات
تازہ ترین تبصرے
  • ۱۷ اکتبر ۱۸، ۲۲:۱۵ - امیرحسین
    ((:


اعلٰی برطانوی سفارتکار

 ایران پر  امریکی پابندیوں کی تجدید سے صورتحال اور بھی  پیچیدہ ہوجائے گی

نیوزنور ۱۰ نومبر/برطانیہ کے نائب وزیر خارجہ برائے امور مشرق وسطی نے کہا ہے کہ برطانیہ امریکہ کی جانب سے ایران کے خلاف پابندیوں کی تجدید کا نہ صرف مخالف ہے بلکہ ہم ایسے اقدامات کو غیرمؤثر سمجھتے ہیں۔

عالمی اردوخبررساں ادارے’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق برطانیہ کے نائب وزیر خارجہ برائے امور مشرق وسطی ’’الیسٹر برٹ‘‘نے اس بات کا انکشاف کرتے ہوئے کہ ایران سے متعلق برطانیہ اور امریکہ کے درمیان اختلافات پائے جاتے ہیں کہا کہ ایران کے خلاف پابندیوں کا استعمال مؤثر طریقہ نہیں جبکہ جوہری معاہدے سے یہ بات ہمیں ظاہر ہوئی کہ جب مشترکہ مفادات کی بات سامنے ہو تو اختلافات کے باوجود اتفاق رائے ممکن ہے۔

الیسٹر برٹ نے کہا کہ ہم امریکی مؤقف کو سمجھتے ہیں اور اس کی ایران جوہری معاہدے سے علحٰیدگی کی وجوہات سے بھی واقف ہیں مگر ہماری نظر میں امریکہ کی جانب سے ایسے تحفظات کو دور کرنے کے طریقے کو تعمیری نہیں سمجھتے اور اس حوالے سے ہمارے اتحادی ممالک نے امریکہ سے مذاکرات بھی کئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ نے ایران پر از سرنو پابندیاں لگا کر صرف اپنا مقصد پورا کیا ہے جبکہ دوسری جانب جوہری معاہدے کے فریقین بھی ایران کو اس کے معاشی مفادات کے حصول کے لئے اپنا کام کررہے ہیں۔

اعلٰی برطانوی سفارتکار نے کہا کہ جوہری معاہدے کے فریقین بشمول یورپی ممالک ایران کے ساتھ مالیاتی لین دین کو جاری رکھنے کے لئے مخصوص اقدامات کررہے ہیں جس سے امریکہ اچھی طرح واقف ہے۔

نائب برطانوی وزیر خارجہ نے ایران اور برطانیہ کے درمیان تعلقات کو تعمیری قرار دیتے ہوئےکہا کہ برطانیہ ایران کے ساتھ باہمی مفادات سے متعلق بات چیت کا خواہاں ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایران پر پابندیوں کی تجدید سے متعلق امریکی فیصلے سے ایسی صورتحال پیدا ہوئی ہے جس سے ہمارے دوسرے اتحادی اتفاق نہیں کرتےاورہم سمجھتے ہیں جب ایران اور مغربی فریق نے جوہری معاہدے پر دستخط کئے تو ضرورت اس بات کی ہے کہ جوہری معاہدے پر من و عن عمل کیا جائےاور وقت کا تقاضا ہے کہ ایران جوہری معاہدے کو برقرار رکھا جائے۔

انہوں نے کہا کہ ایران کی جانب سے معاہدے پر عمل درآمد کا سلسلہ جاری رہنا چاہئےعالمی جوہری ادارے کی جانب سے 12 مرتبہ ایران کی دیانت داری کی تصدیق ہوچکی ہے اور ہم اسے نہایت اہم سمجھتے ہیں۔

نائب برطانوی وزیر خارجہ نےکہا کہ جب ہم پابندیوں کی منسوخی پر کام کررہے ہیں تو ہمارے لئے بھی اہم ہے کہ دوسرا فریق اپنے وعدوں پر عمل کرے اس سے یورپی اور دوسرے فریقین کو بھی حوصلہ ملے گا تا کہ وہ اپنے وعدوں پر عمل کریں۔

انہوں نے کہا کہ برطانیہ اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ مختلف شعبوں میں تعاون کو بڑھانے کا خواہاں ہے اور اس ضمن میں ہم دونوں ملکوں کے درمیان ثقافتی تعلقات کی توسیع بھی چاہتے ہیں۔

الیسٹر برٹ نے مزید اس اطمینان کا اظہار کیا کہ برطانوی وزیر خارجہ جیریمی ہنٹ ایران کا دورہ کرنے میں دلچسپی رکھتے ہیں۔

قابل ذکر ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے رواں سال 8 مئی کو غیرقانونی طور پر ایران جوہری معاہدے سے علحٰیددگی کے بعد 5 نومبر کو نئے احکامات کے ذریعے ایران کی تیل برآمدات، فضائیہ صنعت، جہاز رانی اور بینکاری شعبوں کے خلاف پابندیاں عائد کردیں اوراس فیصلے کے ردعمل میں برطانوی وزیراعظم کے ترجمان نے امریکی پابندیوں کی تجدید پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ معاشی شعبے میں باہمی تعاون کے فروغ کی بھرپور حمایت کا اعلان کیا۔

نظرات  (۰)

ابھی تک کوئی تبصرہ نہیں لکھا گیا ہے
ارسال نظر آزاد است، اما اگر قبلا در بیان ثبت نام کرده اید می توانید ابتدا وارد شوید.
شما میتوانید از این تگهای html استفاده کنید:
<b> یا <strong>، <em> یا <i>، <u>، <strike> یا <s>، <sup>، <sub>، <blockquote>، <code>، <pre>، <hr>، <br>، <p>، <a href="" title="">، <span style="">، <div align="">
تجدید کد امنیتی