نیوزنور newsnoor

نیوزنور بین الاقوامی تحلیلی اردو خبررساں ادارہ

نیوزنور newsnoor

نیوزنور بین الاقوامی تحلیلی اردو خبررساں ادارہ

نیوزنور newsnoor
موضوعات
آرشیو
تازہ ترین تبصرے
  • ۸ جولای ۱۸، ۱۴:۲۰ - Siamak Bagheri
    :)


پاکستانی سائنسدان :

 نیوزنور13جون/پاکستان کے ایک معروف سائنسدان نےسنگا پور میں امریکی صدر ٹرمپ اور کورائی صدر کم جان انگ کی ملاقات پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان دونوں کی ملاقات ہاتھ ملانے سے زیادہ کچھ نہیں اور صدر ٹرمپ اس خام خیالی میں مبتلا ہے کہ  اوباما کی طرح انہیں  نوبیل امن انعام مل جائے کیو نکہ نہ تو شمالی کوریا اپنی صلاحیت سے ہاتھ دھونے کو تیار ہو گا اورنہ ہی امریکہ کوئی ایسی چیز دے گا جس کی اُمید شمالی کوریا کو ہے۔

عالمی اردو خبررساں ادارے’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق پاکستان کے معروف سائنسدان ’’ڈاکٹر عبدالقدیر خان‘‘ کا کہنا ہے کہ سنگاپور میں امریکی صدر اور شمالی کوریا کے رہنما کی ملاقات ہاتھ ملانے سے زیادہ کچھ نہیں اور صدر ٹرمپ کو لگتا ہے کہ اوباما کی طرح انہیں نوبیل امن انعام مل جائے گا۔

ایک سوال کے جواب میں ڈاکٹر عبدالقدیر نے کہا کہ شمالی کوریا امریکہ کے کسی وعدے پر اعتبار نہیں کرے گاشمالی کوریا کسی بھی امریکی وعدے پر اعتبار نہیں کرے گا دونوں ہاتھ بھی ملائیں گے، مسکرائیں گے بھی اور ہو سکتا ہے کہ بغل گیر بھی ہو جائیں لیکن اعتبار نہیں کرے گا یہ تو بس دکھاوا ہے کہ علاقے میں کشیدگی کم ہو گئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ کوریائی جزیرہ نما میں اگر حالات بہتر ہونے پر پیش رفت ہو گی تو وہ شمالی اور جنوبی کوریا کے درمیان ملاقاتوں کے نتیجے میں ہو گی۔

جب ان سے پوچھا گیا کہ اگر کوریائی جزیرہ نما جوہری ہتھیاروں سے پاک ہوجاتا ہے تو کیا اس کے بعد جنوبی ایشیا میں بھی ایسا ہو سکتا ہے تو ڈاکٹر قدیر نے کہا کہ نہیں ایسا نہیں ہو سکتا کیونکہ کوئی ملک اپنے جوہری صلاحیت سے ہاتھ دھونے کو تیار نہیں ہوگا۔

موصوف سائنسدان نے کہا کہ شمالی کوریا  لیبیا اور عراق کی طرح کبھی بھی جوہری ہتھیاروں سے دستبردار نہیں ہو گ کیونکہ امریکہ تو چاہتا ہی یہ ہے کہ عراق، شام اور افغانستان کی طرح شمالی کوریا بھی اس کے رحم و کرم پر ہو۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ کو معلوم ہے کہ تھوڑی سے گڑ بڑ پر نہ جنوبی کوریا رہے گا اور نہ ہی جاپان کیونکہ چین شمالی کوریا کو ایک ڈراؤنے بھوت کے طور پر استعمال کر رہا ہے کیونکہ وہ خود تو یہ کہہ نہیں سکتا کہ میں جوہری ہتھیار استعمال کروں گا۔

ڈاکٹر عبدالقدیر خان نےمزید کہا  کہ شمالی کوریا کو جو فائدہ پہنچے گا وہ جنوبی کوریا کے ساتھ مذاکرات میں پہنچے گا کیونکہ ہو سکتا ہے جنوبی کوریا شمالی کوریا کو امداد دے۔

نظرات  (۰)

ابھی تک کوئی تبصرہ نہیں لکھا گیا ہے
ارسال نظر آزاد است، اما اگر قبلا در بیان ثبت نام کرده اید می توانید ابتدا وارد شوید.
شما میتوانید از این تگهای html استفاده کنید:
<b> یا <strong>، <em> یا <i>، <u>، <strike> یا <s>، <sup>، <sub>، <blockquote>، <code>، <pre>، <hr>، <br>، <p>، <a href="" title="">، <span style="">، <div align="">
تجدید کد امنیتی