نیوزنور newsnoor

نیوزنور بین الاقوامی تحلیلی اردو خبررساں ادارہ

نیوزنور newsnoor

نیوزنور بین الاقوامی تحلیلی اردو خبررساں ادارہ

نیوزنور newsnoor
موضوعات
تازہ ترین تبصرے


ایرانی وزیر خارجہ:

 نیوزنور08اگست/اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر‍ خارجہ نے امریکی صدر ٹرمپ، سعودی ولیعہد بن سلمان اور صیہونی حکومت کے وزیراعظم نتن یاہو کو دنیا میں تشدد ، حق کشی ،ظلم اور بے اعتمادی کا مظہر قرار دیا ہے۔

عالمی اردو خبررساں ادارے’’نیوزنور‘‘کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر‍ خارجہ ’’ڈاکٹر محمد جواد ظریف‘‘ نے کہاکہ آج پوری دنیا میں یہ بات سب کی زبان پر ہے کہ ٹرمپ، بن سلمان اور نتن یاہو عالمی سطح پر الگ تھلگ پڑے گئے ہیں۔

 انہوں نے کہا کہ یہ تینوں افراد بین الاقوامی معاہدوں اور قراردادوں کی پابندی نہ کرنے ، فلسطینی عوام کے حقوق کو پامال کرنے اور ایرانو فوبیاکی پالیسی پر عمل کرنے کی وجہ سے عالمی سطح پر الگ تھلگ پڑگئے ہیں۔

وزیرخارجہ جواد ظریف نے ایران کے ساتھ مذاکرات کرنے کی امریکی پیشکش کا ذکرکرتے ہوئے کہا کہ امریکی حکام نے ایٹمی معاہدے کو کہ جس کی توثیق سلامتی کونسل نے کی اور جس کو پوری دنیا مانتی ہے نظر انداز کردیا اور اس سے نکل گئے اور اس کے بعد بھی یہ دعویٰ کررہے ہیں کہ وہ مذاکرات کے خواہاں ہیں۔

ایرانی وزیرخارجہ نے ایران کے عوام کے ساتھ رابطہ برقرار کرنے کی امریکی اور صیہونی حکام کی کوششوں کا ذکرکرتے ہوئے کہاکہ اگر تم ایرانی عوام سے رابطہ برقرار کرنا چاہتے ہو تو ایران پر عائد پابندیا ختم کرنی ہوگی۔

انہوں نے اس بات کا ذکرکرتے ہوئے کہ چھ اگست ایران کے خلاف امریکی پابندیوں کی دوبارہ بحالی کی تاریخ ہے کہاکہ ان پابندیوں کا ایرانی عوام پر کوئی اثر نہیں ہوگا بلکہ یہ پابندیاں زیادہ تر نفسیاتی دباؤ کے لئے ہیں۔

انہوں نے دشمنوں کی ایران مخالف سازشوں کا ذکرکرتے ہوئے کہا کہ صیہونی حکومت اور ایران کے بعض ناپختہ ہمسایہ ممالک اسلامی جمہوریہ ایران کو نابود کرنے کی خام خیالی میں مبتلا ہیں۔

 انہوں نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران طاقتور اور توانا ہے اور صیہونی حکومت اور اس کے علاقائی اتحادی اپنی اس سازش میں کبھی بھی کامیاب نہیں ہوسکیں گے۔

وزیرخارجہ ڈاکٹر جواد ظریف نےمزید ایرانی عوام کو اسلامی جمہوری نظام کا مضبوط سہارا قرار دیتے ہوئے کہا کہ دشمنوں کی اقتصادی اور تشہیراتی دباؤ اسلامی جمہوریہ ایران کی پالیسی کو تبدیل نہیں کرسکتی۔

نظرات  (۰)

ابھی تک کوئی تبصرہ نہیں لکھا گیا ہے
ارسال نظر آزاد است، اما اگر قبلا در بیان ثبت نام کرده اید می توانید ابتدا وارد شوید.
شما میتوانید از این تگهای html استفاده کنید:
<b> یا <strong>، <em> یا <i>، <u>، <strike> یا <s>، <sup>، <sub>، <blockquote>، <code>، <pre>، <hr>، <br>، <p>، <a href="" title="">، <span style="">، <div align="">
تجدید کد امنیتی